آیت اللہ العظمی خامنہ ای سے کئے گئے جدید سوالات اور ان کے جوابات

اہلبیت (ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ رہبر معظم انقلاب اسلامی آیت اللہ العظمیٰ سید علی خامنہ ای سے کئے گئے جدید سوالات اور ان کے جوابات درج ذیل ہیں۔

سوال: ہم ۴ طالبعلم ہیں حصول علم کے دوران رہنے کے لیے ایک اپارٹمنٹ ہم نے کرایے پر لے رکھا ہے کیا ہم شرعی طور پر ایک شخص کو اضافہ کر سکتے ہیں تاکہ کرایہ میں تھوڑی کمی ہو جائے۔جواب: صاحب خانہ کی اجازت کے بغیر جائز نہیں ہے۔سوال: کیا کوئی عورت ایسی نذر اور عہد کرے جن سے شوہر کے حقوق کو کوئی نقصان نہیں پہنچتا مثال کے طور پر صلوات کی نذر کرے کیا ایسی نذر اور عہد شوہر کی اجازت کے بغیر صحیح ہے؟جواب: شوہر موجود ہونے کی صورت میں احتیاط واجب یہ ہے کہ کسی بھی طرح کی نذر کو شوہر کی اجازت کے بغیر نہ کرے لیکن عہد میں اجازت ضروری نہیں ہے۔سوال: اگر میں کسی شخص کی طرف سے کچھ سامان بیچنے کی دلالی کروں یا خود اسے بیچ دوں اور حاصل شدہ رقم سےکچھ فیصد پیسہ لوں یا ایک معین شدہ مزدوری لوں تو کیا اس چیز کی کیفیت کا بھی میں ذمہ دار ہوں گا مثال کے طور پر کسی کی طرف سے کچھ سافٹ ویئر بیچوں اور وہ سافٹ ویئر خریدار کے کمپیوٹر کو کوئی ضرر پہنچائیں یا ان میں وائرس ہو جو اس کے ڈاٹا کو خراب کر دے تو اس کی شرعی ذمہ داری مجھ پر عائد ہو گی؟جواب: صرف دلالی یا فروخت، ضمان کا سبب نہیں بنتا۔ ( یعنی اس کا نقصان آپ کے ذمہ نہیں ہے)سوال: اگر کسی کے ذمہ کوئی عہد ہو جس کی مدت طولانی ہو مثلا ایک سال، (جیسے نماز اور روزہ کا عہد) اس کو بجا نہ لانے یا ادھورا بجا لانے کی صورت میں مرنے کے بعد کیا کوئی دوسرا اسے بجا لائے یا وہ بالکل ساقط ہو جائے گا۔جواب: اگر اس کا وقت ہو چکا ہو اور اس کی انجام دہی پر قادر ہونے کی صورت میں اسے انجام نہ دیا ہو تو اس کی قضا بڑے بیٹے پر واجب ہے اور اگر اس کے یہاں بڑا بیٹا نہ ہو تو وصیت کی صورت میں اس کے ایک تہائی مال سے اس کی انجام دہی کے لیے دیا جائے گا اور اگر وصیت بھی نہیں کی ہو تو ورّاث کی کوئی ذمہ داری نہیں ہے۔سوال: اگر رکوع کی حالت میں ہاتھ گھٹنے سے اٹھ جائے یا سجدہ کی حالت میں ہاتھ یا پیر زمین سے الگ ہو جائے تو کیا اس کی نماز صحیح ہے؟جواب: اگر سہوا ایسا ہو اور ہاتھ کو گھٹنے پر رکھ کر یا ہاتھ یا پیر زمین پر رکھ کر دوبارہ ذکر کی تکرار کرے تو اس کی نماز صحیح ہے۔سوال: کیا میت کے ایک تہائی مال کو کہ جسے اس نے امور خیریہ میں مصرف کرنے کی وصیت کی ہو لمبی مدت کے لیے کسی بینک کو وقف کیا جا سکتا ہے تا کہ مادام العمر اس کے ماہانہ سود کو امور خیریہ میں صرف کیا جا سکے؟جواب: ایسا وقف صحیح ہے۔سوال: ایک شخص کی وصیت ہے کہ اس کے ایک تہائی مال کو دھیرے دھیرے نیک کاموں میں استعمال کیا جائے تاکہ دیر تک اسے ثواب ملتا رہے۔ لیکن اگر وصی کی عمر ساتھ نہ دے اور وہ سارے مال کو استعمال نہ کر سکا ہو تو وصی کا وظیفہ کیا ہے؟ اس احتمال کے ساتھ کہ آیا وصی میت کی وصیت پر عمل کر پایا ہے کہ نہیں؟جواب: وصی کو چاہیے کہ آخر عمر تک وصیت کے مطابق عمل کرے مرنے کے بعد اس کی کوئی ذمہ داری نہیں رہتی ہے۔ مگر یہ ہے کہ میت نے وصیت کی ہو وصی اپنے بعد کسی کو اس کام کے لیے معین کرے اور وصی نے بھی قبول کیا ہو۔سوال: میں اپنے امام جماعت کو عادل نہیں سمجھتا لیکن شرعی ذمہ داری کو سمجھتے ہوئے مسجد میں جاتا ہوں اور جماعت میں کھڑا ہوتا ہوں۔ اس بات کو پیش نظر رکھتے ہوئے کہ اگر میں سورہ حمد اور سورہ کو آواز کے ساتھ پڑھوں گا تو امام کی ہتک حرمت ہو گی اور اطراف میں موجود نمازیوں کی توجہ بھی نماز سے ہٹ جائے گی تو ایسی صورت میں کیا میں حمد اور سورہ کو آہستہ پڑھ سکتا ہوں یا یہ کہ جماعت میں شرکت نہ کروں؟جواب: مذکورہ فرض کی صورت میں جہری نمازوں میں حمد و سورہ کا آہستہ پڑھنا جائز نہیں ہے لہذا آپ ثواب کی خاطر امام کی اقتدا کر لیں اور بعد میں اپنی نمازوں کا اعادہ کر لیں۔سوال: کیا نماز کے مستحبی اذکار میں بدن کا ساکن ہونا احتیاط واجب ہے یا احتیاط مستحب؟جواب: احتیاط واجب کی بنا پر بدن کو ساکن ہونا چاہیے۔سوال: اگر رکوع کی حالت میں ہاتھوں یا پیروں کی انگلیاں حرکت کریں یا تھوڑی سے اوپر نیچے ہو جائیں تو کیا نماز صحیح ہے؟جواب: مختصر حرکات جو نماز کی صورت کو بگاڑتی نہیں، مبطل نماز نہیں ہیں۔سوال: اگر کوئی شخص نماز میں اضافی تشہد پڑھ دیتا ہے یا مثلا تیسری یا چوتھی رکعت میں حمد پڑھ دیتا ہے اور بعد میں دوبارہ تسبیحات اربعہ پڑھتا ہے اس کی نماز کا کیا حکم ہے؟ کیا وہ اضافی تشہد کے لیے سجدہ سہو بجا لائے؟جواب : اس کی نماز صحیح ہے سجدہ سہو واجب نہیں ہے اگر چہ احتیاط مستحب یہ ہے کہ سجدہ سہو بجا لائے۔( تیسری اور چوتھی رکعت میں تسبیحات اربعہ کی جگہ سورہ حمد کو پڑھا جا سکتا ہے لہذا حمد کے بعد دوبارہ تسبیحات پڑھنے کی ضرورت نہیں )سوال: اگر کوئی شخص دوسری، تیسری یا چوتھی رکعت میں شک کرے اور جب دو رکعت نماز احتیاط پڑھ رہا ہو تو دوسری رکعت کے رکوع کے بعد اسے یاد آئے کہ اس نے تین رکعتیں پڑھ ڈالیں تھیں تو ایسی صورت میں اسے کتنی رکعت نماز احتیاط پڑھنا ہو گی یا اس پر نماز کا اعادہ کرنا واجب ہو گا؟جواب: احتیاط واجب کی بنا پر نماز احتیاط کر ترک کر دے اور باقیماندہ ایک رکعت پڑھ لے اس کے بعد نماز کا اعادہ بھی کرے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۲۴۲


دنیا بھر میں میلاد پیغمبر رحمت(ص) کی محفلوں کی خبریں
سینچری ڈیل، نہیں
حضـرت ابــوطالب (ع) حامی پیغمبر اعظـم (ص) بین الاقوامی کانفرنس میں
ہم سب زکزاکی ہیں / نائیجیریا کے‌مظلوم‌شیعوں کے‌ساتھ اظہار ہمدردی