یتیمی کے 23برس: ٥اگست یوم شہادت قائد ملت جعفریہ شہید حسینی (رح)

آج ٥ اگست کو قائد شہید علامہ عارف حسین الحسینی (رح)کی شہادت کو تئیس برس مکمل ہو چکے ۔

ابنا:

جانے سے تیرے دل کی دنیا اجڑ گئی ہے ٹوٹا کہ جیسے دھاگہ تسبیح بکھر گئی ہے بچھڑا نہ ہم سے ہوتا، صدمہ نہ دل کو ہوتا ہے آزرو ہماری تو آج ہم میں ہوتاتم دیکھتے کہ کس طرح ہم کام کر رہے ہیں تمھارے عظیم مشن کو ہم عام کر رہے ہیں

آج ٥ اگست کو قائد شہید علامہ عارف حسین الحسینی (رح)کی شہادت کو تئیس برس مکمل ہو چکے اور ملت جعفریہ پاکستان آج یتیمی اور قائد کے فراق میں غمزد ہے ۔قائد ملت جعفریہ پاکستان شہید قائد علامہ عارف حسین الحسینی (رح) کو ٥ اگست 1988ء کو امریکی سامراج اور صہیونی نایجنٹوں نے پشاور میں شہید کر دیا تھا ،کیونکہ عالمی استعمار امریکا و اسرائیل نہیں چاہتے تھے کہ سر زمین پاکستان پر فرزند امام خمینی (رح) کی قیادت میں تمام مکاتب فکر و مسالک سمیت لسانی اکائیاں ایک پلیٹ فارم پر جمع ہوں جس کی واضح ترین مثال عالمی استعمار امریکا و اسرائیل نے جولائی 1987ء میں 'قرآن سنت کانفرنس' جو کہ مینار پاکستان لاہور میں منعقد ہوئی تھی،میں دیکھ لی تھی کہ قائد شہید علامہ عارف حسین الحسینی (رح) نے ملک بھر سے تمام مکاتب فکر اور لسانی اکائیوں کو ایک پلٹ فارم پر جمع کر دیا ہے اور یہ عمل یقینا امریکی و صہیونی استعمار و استکبار کے لئے ہر گز مفید نہ تھا کیونکہ شہید قائد ہی وہ شخصیت تھے جنہوںنے سر زمین پاکستان پر طاغوتی طاقتوں کا سر نگوں کرنے کے لئے عملی خدمات انجام دیں اور عالمی استعمار کو یہ بات واضح طور پر نظر آ رہی تھی کہ آنے والے دور میں سر زمین پاکستان پر تمام اکائیوں کو متحد کرنے والی شخصیت شہید قائد علامہ عارف حسین الحسینی (رح) ایک اسلامی انقلاب کی نوید بن کر ابھر سکتے ہیں تاہم استعماری قوتوں نے شہید قائد فرزند امام خمینی (رح) علامہ عارف حسین الحسینی (رح) کو راستے سے ہٹانے کے لئے سازشیں شروع کر دیں اور بالآخر زر خرید غلام اور امریکی ایجنٹ ملعون ضیال الحق کی سر پرستی میں سازش مکمل ہوئی اور شہید قائد کو شہادت نصیب ہوئی اور آپ نے سید الشہداء حضرت امام حسین علیہ السلام سے کئے ہوئے وعدے کو نبھاتے ہوئے لبیک کہا اور دار فانی سے کوچ کر گئے ۔اے شہید قائد! آپ کو ہم سے بچھڑے آج 23برس ہونے کو ہیں اور آج بھی ہم آپ کے فراق میں غمزدہ ہیں ،آج بھی ملت جعفریہ پاکستان یتیم ہے اور منتظر ہے کہ کوئی حسینی پھر سے آئے اور ملت کو وحدت میں پرو دے اور سر زمین پاکستان پر امام زمانہ عج فرجہ اور نائب امام زمانہ عج فرجہ کے مشن کی تکمیل میں اپنا کردار ادا کرے۔اے فرزند امام خمینی (رح) ! آپ نے ہمیشہ ہمیں طاغوتی قوتوں کے سامنے ڈٹ جانے کا درس دیا ے ،اے محبوب قائد! ہم نے حریت کا درس آپ سے سیکھا ہے ،اے میرے عظیم قائد!آپ نے ہی ہمیں سید الشہدا ء امام حسین علیہ السلام کے راستے پر گامزن کر دیا تھا ،اے قائد عظیم الشان ! آپ کی شہادت نہ صرف ملت جعفریہ پاکستان کے لئے عظیم سانحہ ہے بلکہ دنیا بھر کے حریت پسندوں کے لئے ایک عظم صدمہ ثابت ہوئی ہے۔اے قائد شہید ! آپ کی زندگی سے ہمیں ایک ہی درس ملا ہے کہ اسلام پر جان کو قربان کر دو لیکن کسی بھی چیز کے لئے اسلام کو قربان نہ کرو ،اے فرزند امام زمانہ عج !آپ نے ملت کو سر فخر سے بلند کر کے جینا سکھایا ،یہ ملت آج بھی آپ کی احسان مند ہے اور اللہ سے دعا کرتی ہے کہ خدایا ہمیں ایک مرتبہ پھر اپنے محبوب او ر عظیم الشان قائد جیسا رہبر عطا فرما ،اے قائد ملت ،اے فرزند علی (ع) و زہرا(س)،،ہم آپ کے فراق میں تڑپ رہے ہیں آج ٥ اگست ہے ہماری آنکھیں نم ہیں اور ہم آپ کی یاد میں تڑپتے ہیں ،خدا کرے کے میرے چمن وہ بہار پھر آئے۔۔۔ اے ہمارے عظیم قائد ہم آج امام زمانہ عج سے توسل کئے ہوئے ہیں کہ آپ کا نعم البدل عطا ہو اور آپ جیسی قیادت عطا ہو ۔۔۔

اے قائد کاروان عظمت،اے قائد دین و ملک و ملت،اے قائد غیرت و حمیت،شہید قائد سلام تم پر،سلام تم پر

.............

/169


دنیا بھر میں میلاد پیغمبر رحمت(ص) کی محفلوں کی خبریں
سینچری ڈیل، نہیں
حضـرت ابــوطالب (ع) حامی پیغمبر اعظـم (ص) بین الاقوامی کانفرنس میں
ہم سب زکزاکی ہیں / نائیجیریا کے‌مظلوم‌شیعوں کے‌ساتھ اظہار ہمدردی