• سینچری ڈیل، فلسطین کیلئے اتحاد کا سنہری موقع

    سینچری ڈیل اور منامہ کانفرنس ایسے ایشوز ہیں جن کی مخالفت حماس اور اسلامک جہاد جیسے اسلامی مزاحمتی گروہ بھی کر رہے ہیں اور فلسطین اتھارٹی، فتح اور پی ایل او جیسی اسرائیل سے مذاکرات کی حامی جماعتیں بھی کر رہی ہیں۔ اس بات کا قومی امکان بھی موجود ہے کہ یہ سنہری موقع میسر آنے اور عرب ممالک میں بڑے پیمانے پر سینچری ڈیل اور منامہ کانفرنس کے خلاف عوامی مظاہروں کے آغاز کے نتیجے میں ایک نیا انتفاضہ معرض وجود میں آ جائے گا۔

    مزید ...
  • سینچری ڈیل سے متعلق کشنر پلان کی تفصیلات شائع/ فلسطینیوں کے سیاسی حقوق کی طرف کوئی اشارہ نہیں

    قضیہ فلسطین جس کا جوہری اور بنیادی پہلو سیاسی ہے مگر کشنر کے پیش کردہ طویل وعریض پروگرام میں کہیں بھی فلسطینیوں کے سیاسی حقوق کی طرف براہ راست یا بالواسطہ اشارہ نہیں‌ کیا گیا۔ یوں یہ پروگرام ہر اعتبار سے صرف ‘معاشی منصوبہ’ ہے۔ اس پروگرام میں کہیں بھی فلسطینیوں کے مسائل کے حتمی حل کی طرف کوئی اشارہ نہیں‌ کیا گیا بلکہ غزہ کی پٹی اور مغربی کنارے کا الگ الگ ذکر کیا گیا ہے۔

    مزید ...
  • کشنر: مسئلہ فلسطین کا ایسا حل چاہیے جس سے اسرائیل کی سلامتی کی ضمانت دی جا سکے

    اس منصوبے کے تحت فلسطینیوں کو امداد میں ۲۷ ارب ڈالر کی پیش کش کی گئی ہے، جس کا زیادہ تر حصہ سعودی عرب کی قیادت میں امیر عرب ممالک دیں گے۔ ۲۳ ارب ڈالر اسرائیل کی سرحد کے ساتھ والے نسبتاً غریب عرب ملک برداشت کریں گے، جیسا کہ لبنان، اردن اور مصر۔

    مزید ...
  • بحرین کانفرنس میں شرکت اسلام و فلسطین کے حق میں خیانت/ سینچری ڈیل منصوبے کی شکست کے لیے پانچ عملی اقدامات

    ہم اتحاد اور یکجہتی کے ذریعے صہیونی سازشوں کے مقابلے میں کھڑے ہو سکتے ہیں۔ دشمن فلسطینیوں کے اتحاد اور ان کی متحدانہ کاروائیوں سے خوف کھا گیا اور یہ وحدت دشمن سے مقابلے کے لیے بہت ضروری ہے۔ مارا شعار صہیونی دشمن کا مقابلہ ہونا چاہیے۔ اس لیے کہ لاتوں کے بھوت باتوں سے نہیں مانتے۔

    مزید ...
  • بحرین میں فلسطین کے غداروں کی نشست کا آغاز

    بحرین کانفرنس ناکام بنانے کے لیے سرگرم فلسطینی سماجی کار کن معروف الرفاعی نے کہا کہ مشکوک کانفرنسوں میں کوئی فلسطینی لیڈر شریک نہیں ہو رہا ہے۔ جن لوگوں کے نام سامنے آئے ہیں اور وہ فلسطینی ہونے کا دم بھرتے ہیں وہ دشمن کے ایجنٹ ہیں اور ان کے فیصلے فلسطینی قوم پر مسلط نہیں کیے جاسکتے۔

    مزید ...
  • بحرین کانفرنس کے خلاف فلسطین بھر میں احتجاجی مظاہرے

    امریکا اور اس کے حواریوں کی دعوت پر منعقد کی جانے والی نام نہاد اقتصادی کانفرنس کے خلاف فلسطین کے علاقوں غزہ، غرب اردن، بیت المقدس، شمالی اور جنوبی فلسطینی علاقوں میں‌ شٹرڈائون اور پہیہ جام ہڑتال کی جا رہی ہے۔

    مزید ...
  • بحرین کانفرنس اور ارض مقدس کی نیلامی

    صدی کی ڈیل کی سازش کو اگر ایک عمارت سے تشبیہ دی جائے تو بحرین کانفرنس اس کا دروازہ قرار دی جا سکتی ہے۔ اس سازش کے ذریعے وطن عزیز فلسطین کو فلسطینی قوم سے چھین کرغاصب صہیونیوں کے حوالے کرنا ہے۔

    مزید ...
  • جیرڈ کوشنر نے ’منامہ کانفرنس‘ کے بعض اہداف سے پردہ ہٹا دیا

    وائٹ ہائوس میں ایک بیان میں جیرڈ کوشنر نے ‘اقتصادی ویژن’ کے بعض حقائق اور پہلوئوں سے پردہ اٹھایا۔ انہوں‌ نے کہا کہ توقع ہے کہ ۲۵ اور ۲۶ جون کو منامہ میں ہونے والی اقتصادی کانفرنس میں ان کی پیش کردہ تجاویز کو غیر معمولی حمایت حاصل ہوگی۔

    مزید ...
  • صدی کی ڈیل ناکام ہوگی

    صدی کی ڈیل کے معاملہ پر فلسطینی عوام اور سیاسی دھڑوں سمیت مزاحمتی دھڑے سب کے سب متحد ہو کر ایک آواز ہیں کہ اس ڈیل کو مسترد کرتے ہیں اور فلسطینی عوام کی یہ آواز اس بات کا باعث بن رہی ہے کہ اب بالآخر صدی کی ڈیل کو ناکامی کا سامنا ہے، جس کا اعتراف خود اس ڈیل کو بنانے والے امریکی عہدیدار کرتے نظر آرہے ہیں۔

    مزید ...
  • صابر ابومریم کا سینچری ڈیل کے حوالے سے انٹرویو

    ’سینچری ڈیل‘ صدی کا سب سے بڑا جھوٹ و فراڈ: صابر ابومریم

    صدی کی ڈیل فلسطین اور اس کے عوام یعنی فلسطینی عربوں کے لئے ایک بہت بڑا دھوکہ اور خطر ناک سازش کے مترادف ہے ۔ سینچری ڈیل بالکل اسی طرح فلسطین کا سودا کرنے کے لئے تیار کی گئی ہے جس طرح آج سے ایک سو سال پہلے برطانوی استعمار کے جیمز بالفور نے اعلامیہ بالفور کے ذریعہ فلسطین پر صہیونیوں کی جعلی ریاست بنانے کا اعلان کیا تھا۔

    مزید ...
  • صدی کی ڈیل کی عالمی صہیونی سازش کے خلاف پوری قوم متحد ہے:العاروری

    اسلامی تحریک مزاحمت'حماس' کے سیاسی شعبے کے نائب صدر صالح العاروری نے کہا ہے کہ صدی کی ڈیل کے امریکی منصوبے کا مقصد قضیہ فلسطین کا تصفیہ کرنا ہے مگر فلسطینی قوم کی صفوں میں اتحاد اس منصوبے کو ناکام بنانے کے لیے کافی ہے۔

    مزید ...
  • صدی کی حقیقت “مزاحمت” ہے نہ کہ ڈیل

    سینچری ڈیل کی ابتدا ایک بہت بڑے جھوٹ سے ہو رہی ہے یعنی “فلسطینیوں کی اقتصادی مشکلات کا حل”۔ انہوں نے اس نعرے سے اس ڈیل کا آغاز اس لئے کیا ہے کیونکہ وہ جانتے ہیں کہ سینچری ڈیل کا سب سے بڑا مخالف خود فلسطینی ہیں۔ لہذا گذشتہ کئی سالوں بلکہ کئی عشروں سے حتی معمولی حد تک فلاح و بہبود والی زندگی سے محروم فلسطینیوں کو ایک “مطلوبہ اقتصادی صورتحال” دکھا کر اس ڈیل کی راہ سے اہم ترین رکاوٹ برطرف کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

    مزید ...
  • مکہ اجلاس اور فلسطین کے تقاضے

    اس وقت عالم اسلام کی تین بڑی تنظیموں کے اجتماعات مکہ معظمہ میں ہو رہے ہیں، اس لیے جہاں دنیا بھر سے آئے معتمرین سے کعبہ کی رونقوں میں اضافہ ہوچکا ہے، وہیں سیاسی قیادت بھی مکہ معظمہ میں موجود ہے۔ عالم اسلام کے حکمرانوں کی تنظیم جو مسلمانوں کے مسائل حل کرنے کے لیے بنائی گئی تھی، اب اس سے مسلمانوں کو سلانے کا کام لیا جاتا ہے۔

    مزید ...
  • کیا اسرائیل سچ میں صفحہ ہستی سے مٹ جائے گا؟

    حقیقت یہ ہے کہ جس دن ایران میں اسلامی انقلاب برپا ہوا اور حضرت امام خمینی کی رہبری میں علماء کی قیادت میں ایک اسلامی نظام قائم ہوگیا، اسی دن سے اسرائیل کے دن گھٹنے شروع ہوگئے تھے، سب سے پہلے اسرائیل کی سفارت جو تہران میں قائم تھی، اس کو بند کر دیا گیا اور اسے پی ایل او کو دے دیا گیا، جس کی سربراہی یاسر عرفات کے پاس تھی۔

    مزید ...
  • عالمی صہیونیت، مسئلہ فلسطین اور سابق علماء کی سرگرمیاں

    سرزمین فلسطین پر عالمی صہیونیت کے قابض ہو جانے کے بعد یہ دینی علماء ہی تھے جو اس عظیم خطرے کے مقابلے میں کھڑے ہوئے اور امت مسلمہ کے اندر اسلامی بیداری کی لہر پیدا کی۔ لیکن یہاں پرجو چیز حائز اہمیت ہے وہ یہ ہے کہ اس مسئلے میں زیادہ تر ایران اور عراق کے علماء ہی پیش قدم رہے ہیں۔

    مزید ...
  • مسئلہ فلسطین! صدی کی ڈیل کے خدوخال

    فلسطین کے عوام کے ساتھ اور بالخصوص مسم امہ کے ساتھ ایک بہت بڑی خیانت کا ارتکاب کیا جا رہا ہے۔ صدی کی ڈیل کے خدوخال بتا رہے ہیں کہ عالمی سامراجی قوتیں فلسطینیوں کے حقوق کو ماننے سے انکاری ہیں۔ پس ثابت ہوتا ہے کہ امریکہ سمیت دنیا کی تمام عالمی طاقتوں کی جانب سے لگائے جانے والے دفاع انسانی حقوق کے نعرے کھوکھلے اور بے بنیاد ہیں۔

    مزید ...
  • اقتصاد کی آڑ میں سینچری ڈیل کا پرچار

    امریکہ نے جب یہ دیکھا کہ سیاسی حلقوں میں سینچری ڈیل کی شدید مخالفت ہو رہی ہے تو اس نے اس کے اقتصادی پہلووں کو پہلے منظرعام پر لانے کا فیصلہ کر لیا۔ جولائی میں بحرین کے دارالحکومت منامہ میں مقبوضہ فلسطین میں سرمایہ کاری کے عنوان سے طے پانے والی کانفرنس کا بھی یہی مقصد ہے۔

    مزید ...
  • صدی کی ڈیل، سازش کیا ہے؟

    ڈیل کے حوالے سے اب تک منظر عام پر آنے والی رپورٹوں سے پتہ چلتا ہے کہ اس بدنام زمانہ معاہدے کے اہم کرداروں میں عرب ممالک خصوصاً سعودی عرب اور بحرین کو مرکزی کردار حاصل ہے۔

    مزید ...
  • سینچری ڈیل کا کیا ہو گا انجام؟

    اس نام نہاد منصوبے کے اعلان کے بعد فلسطینی پناہ گزینوں کی مشکل ہمیشہ کے لیے حل ہو جائے گی۔ اس مشکل کا راہ حل یہ ہے کہ ان کے لیے ایک دوسری سرزمین متعین کر دی جائے گی اور اس کا نتیجہ یہ ہو گا کہ وہ کبھی بھی اپنے وطن واپسی کا حق نہیں رکھیں گے۔

    مزید ...
  • صدی کی ڈیل! فلسطین کو لاحق خطرات

    اس ڈیل کے نتیجہ میں امریکہ چاہتا ہے کہ پورے خطے پر صہیونی بالادستی قائم ہو جائے اور مسئلہ فلسطین ہمیشہ ہمیشہ کے لئے امریکی خواہشات اور صہیونی من مانی کے مطابق ختم کر دیا جائے۔ عالمی ذرائع ابلاغ پر ’’صدی کی ڈیل‘‘ کا چرچہ گذشتہ ایک برس سے جاری ہے، لیکن اس معاہدے کے تفصیلی خدوخال مکمل طور پر سامنے نہیں آئے ہیں،

    مزید ...
  • اسرائیلی اخبار میں شائع ہونیوالے سینچری ڈیل کے نکات

    ڈیل آف سینچری وہ واحد دستاویز نہیں ہے، جو منظر عام پر آنی ہے بلکہ یہ اصل خفیہ ڈیل آف سینچری کا وہ حصہ ہے، جسے منظر عام پر لایا جانا ہے۔ حقیقی ڈیل آف سینچری اس خطے میں ایک ریاست یعنی اسرائیل کا قیام نیز قضیہ فلسطین کا ہمیشہ ہمیشہ کے لیے خاتمہ ہے۔ پہلے مرحلے میں اتحادیوں کے تعاون سے اس ڈیل کے زیادہ سے زیادہ اہداف کو حاصل کیا جائے گا اور پھر مرحلہ وار ایک طے شدہ منصوبے کے تحت اس خطے میں ایک ریاست کو وجود بخشا جائے گا۔

    مزید ...
  • انٹریو/ سینچری ڈیل علاقے میں نئے تنازعات کا باعث: پروفیسر زکریا کورشون

    ترکی کی سلطان محمد فاتح یونیورسٹی کے پروفیسر زکریا کورشون کہتے ہیں کہ صدی کی ڈیل نہ صرف خطے میں امن کے قیام میں موثر ثابت نہیں ہو گی بلکہ اس سے مشرق وسطی میں جنگ کی نئی چنگاریاں جنم لیں گی۔

    مزید ...
  • مٹھی بھر ڈالرز کے عوض میں زمین کا سودا

    امریکی حکومت کی جانب سے سینچری ڈیل جیسے منحوس اور ظالمانہ منصوبہ سامنے آنے میں بہت سے عوامل کارفرما ہیں۔ پہلا سبب اسرائیل کے معروف ترین تھنک ٹینکس جیسے ڈونلڈ ٹرمپ کے داماد اور قومی سلامتی کے مشیر جیرڈ کشنر اور جیسن گرنبلیٹ ہیں۔ دوسرا سبب خلیجی عرب ریاستوں میں نئی نسل کے حکمران جیسے سعودی عرب کے ولیعہد محمد بن سلمان اور ابوظہبی کے ولیعہد محمد بن زائد کا برسراقتدار آنا ہے۔ تیسرا سبب مصر کی نئی حکومت اور اس کی جانب سے صدی کی ڈیل قبول کرنے کا رجحان ہے۔

    مزید ...
پیام رهبر انقلاب به مسلمانان جهان به مناسبت حج 1440 / 2019
سینچری ڈیل، نہیں
حضـرت ابــوطالب (ع) حامی پیغمبر اعظـم (ص) بین الاقوامی کانفرنس میں
ہم سب زکزاکی ہیں / نائیجیریا کے‌مظلوم‌شیعوں کے‌ساتھ اظہار ہمدردی