کتاب "الخطاب الحسینی" ترکی استنبولی زبان میں منظرعام پر آ گئی

کتاب

کتاب الخطاب الحسینی کو اہل بیت (ع) عالمی اسمبلی کے تعاون سے ترکی کے شہر استنبول میں منظر عام پر لایا گیا ہے۔

اہل بیت (ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ کے مطابق، کتاب الخطاب الحسینی کو اہل بیت (ع) عالمی اسمبلی کی کوششوں سے ترکی کے شہر استنبول میں شائع کیا گیا۔

یہ کاوش تحریک امام حسین (ع) کی اہمیت اور اس کے اہداف کے تحفظ و ترویج میں دئیے گئے خطبات کی تفسیر پر مبنی ہے۔
مصنف کے مطابق سید شہداء(ع) کے انقلاب کے تین مراحل ہیں: شہادت، تبیین اور انتقام۔ مصنف نے شہادت کے مرحلے کو مکمل گردانا ہے جبکہ انتقام کا مرحلہ امام زمانہ کے ظہور کے بعد محقق ہو گا۔
اس کتاب میں مصنف کی کوشش یہ رہی ہے کہ انقلاب کے دوسرے مرحلے یعنی اہداف امام حسین(ع) کی تشریح اور تفسیر کو پایہ تکمیل تک پہنچایا جائے۔ ان کے مطابق امام کے مقاصد کے لیے تقریر و تبلیغ کا مرحلہ اسی لمحے سے شروع ہو گیا جب کربلا کے قیدیوں کا قافلہ کوفہ پہنچا اور حضرت زینب سلام اللہ علیہا نے خطبات دینا شروع کئے۔

مصنف نے اسی مقصد کے لیے کوفہ کے لوگوں کے درمیان حضرت زینب، حضرت فاطمہ بنت حسین(ع)، ام کلثوم اور امام سجاد (ع) کے خطبات کے ساتھ ساتھ ابن زیاد کے محل میں پیش آئے واقعات کو پہلے حصے میں پیش کیا ہے۔ دوسرے حصے میں امام حسین علیہ السلام کے قتل میں دخیل عناصر کے بارے میں بیان کیا ہے اور تیسرے مرحلے میں مدینے کے واقعات اور امام حسین علیہ السلام کے خطبات کو بیان کیا ہے۔

قابل ذکر ہے کہ مذکورہ کتاب کا ترجمہ - اسمبلی کے ادارہ ترجمہ کی پیشکش سے- جناب امین اباجی نے استنبول ترکی میں انجام دیا اور اہل بیت (ع) عالمی اسمبلی کے شعبہ نشر و اشاعت نے ترکی کے تسنیم انسٹی ٹیوٹ کے تعاون سے اس کتاب کو ایک ہزار نسخے میں شائع کیا ہے۔

...........

242


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*