پابندیوں کے باوجود ایرانی ڈٹرجنٹ کی امریکہ اور کینیڈا برآمدات

پابندیوں کے باوجود ایرانی ڈٹرجنٹ کی امریکہ اور کینیڈا برآمدات

کورونا کی وبائی بیماری کی وجہ سے گزشتہ سال کے دوران، صحت کی مصنوعات اور ڈس انفیکٹینٹس کے استعمال میں اضافہ ہوا۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ ایرانی ڈٹرجنٹ، صحت اور کاسمیٹکس ایسوسی ایشن کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کے چیئرمین نے کہا کہ کورونا اور پابندیوں کی وجہ سے تمام تر مشکلات کے باوجود ان مصنوعات کی  ملک میں کافی تیاری کی گئی ہے اور کچھ کمپنیوں نے اپنی مصنوعات کو امریکہ، کینیڈا اور یورپی منڈیوں میں برآمدات کی ہیں۔

"بختیار علم بیگی" نے کہا کہ کورونا پھیلاؤ کی وجہ سے ان مصنوعات کے استعمال میں اضافے کے باوجود پھر بھی ان کو کافی مقدار تک ایرانی فیکٹریز میں تیار کیا جاتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ گزشتہ سال کے دوران اور پابندیوں کے تسلسل کے باوجود، ان مصنوعات کی تیاری میں 10 فیصد کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔

کورونا کی وبائی بیماری کی وجہ سے گزشتہ سال کے دوران، صحت کی مصنوعات اور ڈس انفیکٹینٹس کے استعمال میں اضافہ ہوا۔

انہوں نے کہا کہ گزشتہ سال کے دوران، ملک میں صحت اور کاسمیٹکس مصنوعات کی برآمد کی شرح 117 ملین ڈالر تک پہنچ گئی۔

علم بیگی نے کہا کہ گزشتہ سالوں کے دوران، صحت، ڈٹرجنٹ اور کاسمیٹکس مصنوعات کی برامدات تقریبا ایک ارب ڈالر تک پہنچ چکی تھی تا ہم پابندیوں کی وجہ سے اس میں کمی نظر آئی ۔

اگرچہ ایرانی کمپنیوں نے ہمسایہ ممالک اور سی آئی ایس علاقے سمیت امریکہ، کینیڈا اور یورپی یونین میں برآمدات میں کامیابی حاصل کیا ہے لیکن پابندیوں کی وجہ سے برآمدات کو مشکلات کا سامنا کیا ہے اور ہمیں اپنے رقوم کے حصول کیلئے مسائل کا شکار ہیں۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۲۴۲


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*