مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی کاروائی میں 3 افراد کا قتل

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی کاروائی میں 3 افراد کا قتل

بھارتی فورسز نے مقبوضہ جموں و کشمیر میں کارروائی کے دوران 3 افراد کو قتل کردیا، جس کے نتیجے میں بھارت مخالف احتجاج شروع ہوا جبکہ فورسز اور شہریوں کے درمیان جھڑپیں ہوئیں۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ خبرایجنسی اے پی کی رپورٹ کے مطابق بھارتی فوج کا کہنا تھا کہ پلواما میں جنگجووں کی موجودگی کی اطلاع پر کارروائی کی گئی جہاں فوجی اور پولیس اہلکاروں پر فائرنگ ہوئی۔

بھارتی فوج نے اپنے بیان میں کہا کہ اہلکاروں نے جوابی فائرنگ کی اور جنگجووں کو ایک گھر میں محصور کر لیا اور اسی دوران 3 افراد کو مارا گیا اور ان کے قبضے سے اسلحہ بھی برآمد کرلیا گیا۔

دوسری جانب عینی شاہدین کا کہنا تھا کہ بھارتی فوجیوں نے ایک گھر کو آگ لگا دی اور دوسری کو دھماکے سے اڑا دیا، یہ بھارتی قابض فوج کی خطے میں استعمال ہونے والی غیرپیشہ ورانہ تیکنیک ہے۔

بھارتی فوج کی کارروائی کے بعد ہونے والے احتجاج کے پیش نظر انتظامیہ نے پلوامہ میں کرفیو نافذ کردیا اور موبائل سروس میں انٹرنیٹ بھی کاٹ دیا، جس کا مقصد بھارت مخالف احتجاج کو روکنا اور احتجاج کی ویڈیوز کو پھیلنے سے روکنا ہے۔

پلواما میں بھارتی فوج کی کارروائی کے فوری بعد شدید احتجاج کا سلسلہ شروع ہوا اور بھارت مخالف نعرے لگائے گئے، مطالبہ کیا گیا کہ خطے میں بھارت اپنا تسلط ختم کرے۔

بھارتی فورسز نے مظاہرین پر آنسو گیس کے فائر کیے تاہم کسی کے زخمی ہونے کی اطلاع نہیں ملی۔

مقامی افراد کا کہنا تھا کہ بھارتی فورسز نے کئی افراد کو حراست میں لے لیا اور انہیں جبری طور پر اپنے سامنے بٹھادیا تاکہ انہیں جھڑپ کے دوران شیلڈ کے طور پر استعمال کریں۔

مقبوضہ کشمیر میں تازہ واقعہ خطے میں جاری کشیدگی کا تسلسل ہے۔

خیال رہے کہ گزشہ ہفتے انتظامیہ نے 11 کشمیریوں کو ان کی سرکاری نوکری سے برخاست کردیا تھا اور الزام عائد کیا تھا ان کا رابطہ مبینہ طور پر جنگجووں سے تھا۔

بھارتی فورسز کا کہنا تھا کہ نوکری سے برخاست کیے گئے افراد میں دو کشمیری ایک اعلیٰ سطح کے کمانڈر کے بیٹے اور دو پولیس اہلکار شامل تھے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۲۴۲


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*