ماہ مبارک رمضان؛ 30 دن، تیس دعائیں، تیس پیغامات - 1

ماہ مبارک رمضان؛ 30 دن، تیس دعائیں، تیس پیغامات - 1

کتنے ہیں وہ روزہ دار جنہیں روزہ داری سے صرف بھوک اور پیاس ملتی ہے اور کتنے زیادہ ہیں قیام [باللیل] کرنے والے جنہیں ان کے قیام سے صرف تھکاوٹ ملتی ہے

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔
رمضان کا پہلا نکتہ: روزہ داری
روزہ داری کا ثواب
خدائے متعال نے رسول اللہ (صلی اللہ علیہ و آلہ) کی امت کے روزہ داروں کے لئے متعدد پاداشوں کو مد نظر رکھا ہے۔ آپ نے فرمایا:
"أُعْطِيَتْ أُمَّتِي فِي شَهْرِ رَمَضَانَ خَمْساً لَمْ يُعْطَهُنَّ أُمَّةُ نَبِيٍّ قَبْلِي أَمَّا وَاحِدَةٌ فَإِذَا كَانَ أَوَّلُ لَيْلَةٍ مِنْ شَهْرِ رَمَضَانَ نَظَرَ اَللَّهُ عَزَّ وَجَلَّ إِلَيْهِمْ وَمَنْ نَظَرَ اَللَّهُ إِلَيْهِ لَمْ يُعَذِّبْهُ أَبَداً وَأَمَّا اَلثَّانِيَةُ فَإِنَّ خَلُوفَ أَفْوَاهِهِمْ حِينَ يُمْسُونَ عِنْدَ اَللَّهِ عَزَّ وَجَلَّ أَطْيَبُ مِنْ رِيحِ اَلْمِسْكِ وَأَمَّا اَلثَّالِثَةُ فَإِنَّ اَلْمَلاَئِكَةَ يَسْتَغْفِرُونَ لَهُمْ فِي لَيْلِهِمْ وَنَهَارِهِمْ وَأَمَّا اَلرَّابِعَةُ فَإِنَّ اَللَّهَ عَزَّ وَجَلَّ يَأْمُرُ جَنَّتَهُ أَنِ اِسْتَغْفِرِي وَتَزَيَّنِي لِعِبَادِي فَيُوشِكُ أَنْ يَذْهَبَ عَنْهُمْ نَصَبُ اَلدُّنْيَا وَأَذَاهَا وَيَصِيرُوا إِلَى جَنَّتِي وَكَرَامَتِي وَأَمَّا اَلْخَامِسَةُ فَإِذَا كَانَ آخِرُ لَيْلَةٍ غَفَرَ لَهُمْ جَمِيعاً فَقَالَ رَجُلٌ فِي لَيْلَةِ اَلْقَدْرِ يَا رَسُولَ اَللَّهِ فَقَالَ أَ لَمْ تَرَ إِلَى اَلْعُمَّالِ إِذَا فَرَغُوا مِنْ أَعْمَالِهِمْ وُفُّوا؛ (1)
میری امت کو ماہ مبارک رمضان میں پانچ چیزیں عطا ہوئی ہیں جو مجھ سے پہلے کسی پیغمبر کی امت کو عطا نہیں ہوئیں:
1۔ ہرگاہ یکم رمضان کی شب آن پہنچے، خدائے متعال ان کی طرف نظر کرتا ہے اور خدا جس پر نظر کرے، وہ کبھی بھی عذاب میں مبتلا نہیں ہوگا؛
2۔ [روزے کے دوران] ان کے منہ سے آنے والی بدبو، غروب آفتاب کے وقت مشک (یا کستوری) سے بھی زیادہ معطر ہوجاتی ہے۔
3۔ ملائکہ دن اور رات کے اوقات میں ان کے لئے استغفار (طلب مغفرت) کرتے ہیں۔
4۔ یقیناَ خدائے بلند مرتبہ، اپنی جنت کو حکم دیتا ہے کہ "میرے بندوں کے لئے استغفار کرو اور اپنے آپ کو ان کے لئے مزیّن کرو، تو قریب ہے کہ دنیا کی دشواریاں اور اذیتیں ان سے دور ہوجائیں؛ اور وہ میری جنت اور کرامت کی طرف چلے جائیں۔
5۔ ہرگاہ ماہ رمضان کی آخری رات آن پہنچے، خدائے عزّ وجلّ ان سب کو بخش دیتا ہے۔
ایک شخص نے کہا: یا رسول اللہ! کیا شب قدر کے بارے میں ایسا ہوتا ہے؟ فرمایا: [نہیں] کیا تم نے نہیں دیکھا ہے کہ مزدوروں کا کام جب ختم ہوجاتا ہے، انہیں اجرت دی جاتی ہے؟"۔  
صحیح روزہ داری کی شرط
امام جعفر صادق علیہ السلام نے فرمایا:
"إِذَا صُمْتَ فَلْيَصُمْ سَمْعُكَ وَبَصَرُكَ وَشَعْرُكَ وَجِلْدُكَ وَعَدَّدَ أَشْيَاءً غَيْرَ هَذَا وَقَالَ لَا يَكُونُ يَوْمُ صَوْمِكَ كَيَوْمِ فِطْرِكَ؛ (2)
جب روزہ رکھو تو تیرےکانوں، آنکھوں اور بالوں کا بھی روزہ ہونا چاہئے ۔۔۔ اور امام نے ان کے علاوہ بھی کئی چیزوں کو گنوایا ۔۔۔ اور فرمایا: جس دن روزہ رکھتے ہو، اس دن کو اس دن کی طرح نہیں ہونا چاہئے، جب تم روزہ نہیں رکھتے ہو"۔
رسول اللہ صلی اللہ علیہ و آلہ نے فرمایا:
"رُبَّ صَائِمٍ حَظُّهُ مِنْ صِيَامِهِ الْجُوعُ وَالْعَطَشُ وَرُبَّ قَائِمٍ حَظُّهُ مِنْ قِيَامِهِ السَّهَرُ؛ (3)
کتنے ہیں وہ روزہ دار جنہیں روزہ داری سے صرف بھوک اور پیاس ملتی ہے اور کتنے زیادہ ہیں قیام [باللیل] کرنے والے جنہیں ان کے قیام سے صرف تھکاوٹ ملتی ہے"۔
رمضان مقابلے کا میدان
ایک دفعہ کا ذکر ہے کہ امام حسن مجتبی علیہ السلام ماہ مبارک رمضان کے آخری ایام میں لوگوں کی ایک جماعت سے گذرے، جو ہنسی مزاح میں مصروف تھے۔ آپ نے رنجیدگی سے ان سے مخاطب ہو کر فرمایا" "اللہ نے ماہ رمضان کو بندوں کے لئے مقابلے کا میدان قرار دیا ہے، کچھ لوگ اس مقابلے میں آگے نکلتے ہیں اور جیت جاتے ہیں اور کچھ لوگ پیچھے رہتے ہیں اور ان کا سر شرم سے جھک جاتا ہے۔ عجیب ہے کہ جس دن آگے نکلنے والے کامیاب ہوچکے اور پیچھے رہنے والے گھاٹا اٹھائے ہوئے ہیں، کچھ لوگ مذاق اور ہنسی میں مصروف ہیں۔ خدا کی قسم اگر پردے اٹھ جائے، تو آج [اس دنیا میں] نیکوکار لوگ اپنے اجر و ثواب میں کمانے میں مصروف ہیں اور پیچھے رہنے والے اور ہارنے والے اپنی بدیوں میں ہاتھ پیر مار رہے ہیں؛ چنانچہ کسی کے پاس بھی ہنسی مذاق کی فرصت و مہلت نہیں ہے۔ (4)
...................
1۔ شیخ صدوق، خصال، ص317-318؛ علامہ مجلسی، بحار الانوار، ج96، ص367۔
2۔ علامہ کلینی، اصول کافی، ج4، ص87؛ شیخ طوسی، التهذیب، ج4، ص194۔
3۔ شیخ طوسی، الأمالى ، ص166 و 277۔  
4۔ شیخ صدوق، من لایحضره الفقیه، ج2، ص174.
...................
تحریر: ابوالفضل ہادی مَنِش
ترجمہ: فرحت حسین مہدودی

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۲۴۲


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*