عرب امارات نے 7 ہزار اسرائیلیوں کو شہریت دے دی

عرب امارات نے 7 ہزار اسرائیلیوں کو شہریت دے دی

تحریک الفتح نے متحدہ عرب امارات کی عرب ليگ میں رکنیت ختم کئے جانے کا مطالبہ کیا ہے۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ فارس نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق تحریک الفتح کے سینئر رکن عباس زکی نے اپنے ایک وڈیو پیغام میں متحدہ عرب امارات کے ولی عہد محمد بن زايد کو غدار قرار دیتے ہوئے عرب لیگ میں متحدہ عرب امارات کی رکنیت کی منسوخی کا مطالبہ کیا۔

تل ابیب میں متحدہ عرب امارات کے سفارتخانے کے افتتاح کے موقع پر جاری ہونے والے اپنے ویڈیو پیغام میں عباس زکی نے انکشاف کیا کہ متحدہ عرب امارات نے سینچری ڈيل کے تحت 7 ہزار اسرائیلیوں کو شہریت دی ہے جو ان کے بقول متحدہ عرب امارات میں صیہونزم کی تحریک کے اثر و رسوخ کا باعث بنے گا۔

تحریک الفتح کے اس سینئر رکن نے مزید کہا کہ متحدہ عرب امارات کے عوام کا حکومتی اقدامات سے کوئی تعلق نہیں ہے، یہ صرف محمد بن زايد ہیں جو غدار ہے اور خیانت کے مرتکب ہو رہے ہیں۔

سینچیری ڈیل کے تحت خیانت کے ارتکاب کرنے والے عرب حکام کے خلاف الفتح تحریک کی جانب سے اتنا سخت اور صریح بیان اس سے پہلے کھبی سامنے نہیں آیا۔

واضح رہے کہ سنچیری ڈيل ایک ایسا ناپاک اور خطرناک منصوبہ ہے کہ جس کے تحت خیانات کار عرب حکام نے قبلۂ اول بیت المقدس سے دستبرداری کو تسلیم کرنے کے ساتھ ہی اسکی غاصب صیہونی حکومت کو بے پناہ مراعات دینے کا عہد کر لیا ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۲۴۲


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*