شہید محسن فخری زادہ کی شہادت عالمی استعمارکی طرف سے توحیدی طاقتوں کا راستہ روکنے کی گھناؤنی سازش ہے: علامہ امین شہیدی

شہید محسن فخری زادہ کی شہادت عالمی استعمارکی طرف سے توحیدی طاقتوں کا راستہ روکنے کی گھناؤنی سازش ہے: علامہ امین شہیدی

علامہ امین شہیدی نے کہاہےکہ شہید ڈاکٹرمحسن فخری زادہ کی المناک شہادت تمام امتِ مسلمہ کےلئےگراں ہےکیونکہ وہ ایک ممتاز جوہری سائنسدان ہونےکےساتھ ساتھ عالمِ اسلام کا سرمایہ بھی تھے۔اُن کی عظیم شہادت کومحض ایک فردکی شہادت قرار نہیں دیاجاسکتا؛دراصل یہ عالمی استعمارکی طرف سےاسلام اورتوحیدی طاقتوں کا راستہ روکنےکی ایک اور گھناؤنی سازش تھی۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ اُمتِ واحدہ پاکستان کےسربراہ علامہ محمدامین شہیدی نے ایرانی سائنسدان ڈاکٹر محسن فخری زادہ کی شہادت پر گہرے دکھ اور رنج کا اظہار کیاہے۔اُمتِ واحدہ پاکستان کی طرف سےجاری کردہ اعلامیہ میں علامہ امین شہیدی نے کہاہےکہ شہید ڈاکٹرمحسن فخری زادہ کی المناک شہادت  تمام امتِ مسلمہ کےلئےگراں ہےکیونکہ وہ ایک ممتاز جوہری سائنسدان ہونےکےساتھ ساتھ عالمِ اسلام کا سرمایہ بھی تھے۔اُن کی عظیم  شہادت کومحض ایک فردکی شہادت قرار نہیں دیاجاسکتا؛دراصل یہ عالمی استعمارکی طرف سےاسلام اورتوحیدی طاقتوں کا راستہ روکنےکی ایک اور گھناؤنی سازش تھی۔شہیدفخری زادہ کی شہادت ہمارےلئےفخر کا باعث ہےجوہمیں کربلا کےشہداءکی طرف سےبطورمیراث عطاہواہے۔اگرکربلانہ ہوتی توہم ہمیشہ اپنےپیاروں کی شہادت پربےچین ہوتے،لیکن کربلامیں حُسین ابنِ علیؑ کی شہادت نےہمیں بتایاکہ اسلام وہ گرانقدرسرمایہ ہےکہ جس کی خاطرحُسین ابنِ علیؑ جیسی عظیم شخصیت بھی شہیدہونےکےلئے بیتاب نظرآتی ہے۔جب علی ابن ابی طالبؑ اورحُسین ابنِ علیؑ نےحق کابول بالا کرنےکےلئےشہادت کوچُناتوپھرہمیں بھی دین کی سربلندی کےلئے جامِ شہادت نوش کرنےکےلئےتیاررہناچاہیے۔

چونکہ ڈاکٹرمحسن فخری زادہ میں ایک شہیدمیں پائی جانےوالی تمام خصوصیات موجود تھیں اوروہ شہادت جیسے عظیم رُتبہ کوپانےکےلئےہمہ وقت تیارتھے،اسی لئےانہوں نےاِس دیرینہ آرزوکوپالیا۔وہ اِس پاکیزہ خواہش کا اظہاروقتًافوقتًاکرتےرہتےتھےاوریقینًاوہ اس اعلی مقام کےمستحق تھے۔ہم  جیسےحیات لوگوں کوفکرمندہوناچاہیےکہ اتنےمعززلوگ  اعلی اہداف کےحصول کےلئےجامِ شہادت نوش کرچکے،لیکن ہم اِس عظیم رتبہ  سےابھی تک محروم ہیں۔پس ہمیں بھی دین کی خاطراپنی ہستی قربان کرنےکےلئےہمہ وقت تیاررہناچاہیے۔ اس بات کا مطلب یہ نہیں ہےکہ خداکی راہ میں قتل ہوجانےکےبعداستعماری وجابرطاقتوں کےلئےراستہ کھلاچھوڑدیاجائے۔شہیدڈاکٹرمحسن فخری زادہ کی المناک شہادت کاانداز یہ بتاتا ہےکہ اسرائیل کےساتھ امریکی اوریورپی طاقتوں نےبھی اپنےتمام وسائل کو بروئےکارلاتے ہوئےاس عظیم انسان کو شہید کرنے کی گھناؤنی سازش کی۔اگرچہ یہ طاقتیں اپنےمذموم مقصدمیں بظاہرکامیاب نظرآتی ہیں لیکن تاریخ گواہ ہے اورہم بھی یہ نظریہ رکھتےہیں کہ ایسی شہادتیں ظلم کے خاتمہ کی نویدہُواکرتی ہیں ؛حق کوتقویت اورنیاعزم بخشنےکےساتھ   باطل کو نابودکرنے میں بھی بنیادی کرداراداکرتی ہیں۔ہمیں یقین ہےکہ شہید فخری زادہ کی شہادت اور خونِ ناحق سے بھی یہی نتیجہ نکلے گا۔ان شاءاللہ!جس مذاکراتی دلدل کی آڑمیں ایران کے جوہری پروگرام کولپیٹنےکےلئےپورایورپ اورامریکہ پریشان ہےاور تمام عالمی دشمن طاقتوں نے اپنی توانائی اس ہدف کے حصول میں لگارکھی ہے؛اللہ نےچاہاتواس کا اختتام بھی شہیدکےخون کےذریعہ ہوگا۔ایران اپنےپُرامن جوہری پروگرام کو لےکر آگےبڑھےگااوردشمن کی نگاہوں کےسامنےعلمی،صنعتی  اور سائنسی ترقی کی اُس معراج تک پہنچےگاجودشمنوں کےلئےناقابلِ برداشت ہوگااوروہ خودہی اپنےغیض وغضب کاشکارہوجائیں گے۔میں شہیدڈاکٹرمحسن فخری زادہ کی المناک شہادت کے موقع پرامامِ زمانہ عجل اللہ تعالی ،اُن کےنائبِ برحق آیت اللہ العظمی سیدعلی خامنہ ای ، ملتِ ایران اوربالخصوص شہید کے خانوادہ کی بارگاہ میں تسلیت عرض کرتا ہوں اوردعاگوہوں کہ اللہ تعالی ہمیں بھی اِس شہیدکےراستہ پر ثبات ِقدم کےساتھ چلنےاورعالمی استعمارکاراستہ روکنےکےلئےاپناکرداراداکرنےکی توفیق اورسعادت عطافرمائے۔الہی آمین۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۲۴۲


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

All Content by AhlulBayt (a.s.) News Agency - ABNA is licensed under a Creative Commons Attribution 4.0 International License