حزب اللہ کے پاس 700 کلومیٹر تک مار کرنے والے میزائل موجود؛ اسرائیل کا اعتراف

حزب اللہ کے پاس 700 کلومیٹر تک مار کرنے والے میزائل موجود؛ اسرائیل کا اعتراف

حزب اللہ کے پاس 700 کلومیٹر کی دوری تک مار کرنے والے میزائيل موجود ہیں، یہ اعتراف صہیونی میڈیا نے کیا ہے۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ صیہونی حکومت کے ذرائع ابلاغ نے حزب اللہ کی میزائیلی طاقت میں اضافے سے متعلق اپنی ایک رپورٹ میں بتایا ہے کہ حزب کے پاس 700 کلومیٹر کی دوری تک مار کرنے والے ڈیڑھ لاکھ میزائیل موجود ہیں اور آئندہ ہونے والی ممکنہ جنگ میں روزآنہ 1000 ہزار سے 3000 ہزار تک میزائیل خود ساختہ اسرائیلی ریاست کے زيرکنٹرول علاقوں پر فائرکئے جائيں گے۔

صیہونی حکومت کی فوج کے اندازوں کے مطابق حزب اللہ کے میزائیلی ڈپوز میں انواع اقسام کے میزآئيل موجود ہیں اور ایک اور جنگ شروع ہونے کی صورت میں مقبوضہ علاقوں پر روزانہ کی بیناد پر 3000 راکٹ فائر کئے جانے کا امکان موجود ہے۔

صہیونی حکومت سے وابستہ نیوز ایجنسی کے مطابق 2006 میں ہونے والی 33 روزہ جنگ کے بعد حزب اللہ نے گزشتہ 15 برسوں کے دوران کافی پیشرفت کی ہے اور ایک اندازے کے مطبق حزب اللہ کے پاس 15 کلومیٹر سے لے کر 700 کلو میٹر تک مارکرنے والے میزائیل موجود ہیں جن میں 200 کلومیٹرتک مار کرنے والے گائیڈ میزائیل اور 400 کلومیٹر کے فاصلے تک پرواز کرنے والے ڈرونز بھی شامل ہیں۔

صیہونی حکومت کی فوج سے وابستہ حساس اداروں کے سینئر افسران کا کہنا ہے لبنان کے ساتھ جنگ کا امکان بہت ہی کم ہے۔

صیہونی حکومت کے ایک سابق فوجی جنرل نے حزب اللہ کی ميزائیلی طاقت کی تشریح کرتے ہوئے بتایا ہے کہ حزب کے ٹھیک نشانے پر لگلنے والے میزائیل پورے مقبوضہ فلسطین کی بجلی کی سپلائی کو ایک سال تک منقطع کرنے کے لئے کافی ہیں۔

دوسری جانب اطلاعات ہیں کہ صیہونی حکومت نے حزب اللہ کی میزائيل طاقت سے نمٹنے کے لئے جنگی مشقیں انجام دی ہیں۔

بتایا جاتا ہے کہ صیہونی فضائیہ کے جنگی طیاروں پر حزب اللہ کے فرضی میزائیل لگنے اور شمالی محاذ پر ممکنہ جنگ سے متعلق مشقیں انجام دی گئی ہيں۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۲۴۲


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*