تیونس کی الزیتونیہ یونیورسٹی کے استاد: ہم اہل سنت جناب ابوطالب کے ایمان کے قائل ہیں

تیونس کی الزیتونیہ یونیورسٹی کے استاد: ہم اہل سنت جناب ابوطالب کے ایمان کے قائل ہیں

تیونس کے الزیتونیہ یونیورسٹی کے استاد ڈاکٹر بدر المدانی نے رسول اکرم (ص) کے مقام کی طرف اشارہ کیا اور کہا: نبی اکرم کے آباؤ و اجداد سب قابل احترام ہیں ان کے وجود میں نور نبوت رہا ہے اور اس نور نبوت کی وجہ سے یہ نسل پاک اور شریف تھی لہذا ان کا احترام ضروری ہے۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ جناب ابوطالب (ع) حامی پیغمبر اعظم (ص) بین الاقوامی سیمینار کے تیسرے روز ۱۱ مارچ ۲۰۲۱ کو قم کے مدرسہ امام خمینی (رہ) میں "جناب ابوطالب (ع) بین الاقوامی مفکرین کی نگاہ میں" کے زیر عنوان ایک نشست کا انعقاد کیا گیا۔
تیونس کے الزیتونیہ یونیورسٹی کے استاد ڈاکٹر بدر المدانی نے رسول اکرم (ص) کے مقام کی طرف اشارہ کیا اور کہا: نبی اکرم کے آباؤ و اجداد سب قابل احترام ہیں ان کے وجود میں نور نبوت رہا ہے اور اس نور نبوت کی وجہ سے یہ نسل پاک اور شریف تھی لہذا ان کا احترام ضروری ہے۔
انہوں نے مزید کہا: اہل بیت پیغمبر (ع) کو خداوند عالم نے قرآن مجید میں پاک و پاکیزہ قرار دیا ہے، اہل سنت کے نزدیک اہل بیت(ع) کے فراواں فضائل موجود ہیں اور ہم اہل بیت(ع) کی نسبت مودت رکھتے ہیں عقائد، تفسیر اور فقہ کی ہماری کتابیں ہمارے دعوے پر گواہ ہیں۔
الزیتونیہ یونیورسٹی کے استاد نے مزید کہا: ہم اہل بیت(ع) کے مقام اور فضائل سے آگاہ ہیں خداوند عالم نے قرآن کریم کی متعدد آیتوں میں اہل بیت(ع) کے فضائل کی طرف اشارہ کیا ہے رسول خدا کے اجداد مومن تھے۔ رحمت الہی کے حامل کبھی مشرک نہیں ہو سکتے اور اہل بیت آسمان نبوت کے ستارے ہیں اور ہم اہل سنت جناب ابوطالب کے ایمان پر عقیدہ رکھتے ہیں اور اس مسئلے کے اثبات کے لیے ہمارے پاس دلائل بھی ہیں نہ صرف یہ خشک دعویٰ کر رہےہیں۔
ڈاکٹر بدر المدانی نے جناب ابوطالب کے ایمان کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا: خداوند عالم نے قرآن کی مختلف آیتوں میں جناب ابوطالب کے ایمان کی طرف اشارہ کیا ہے، ابوطالب حضرت علی (ع) کے والد اور امام حسن اور امام حسین علیہم السلام کے دادا ہیں۔
انہوں نے مزید کہا: جناب ابوطالب نے اس دور میں رسول اکرم کی سرپرستی کی جب وہ یتیم ہو چکے تھے اور انہوں نے پیغمبر اکرم کی خدمت اور حمایت کا افتخار حاصل کیا لہذا ہمیں اہل بیت(ع) اور جناب ابوطالب سے محبت رکھنا چاہیے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۲۴۲


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*