تل ابیب میں فدائی حملے کی کامیابی پر انصار اللہ کیجانب سے فلسطینی عوام کو مبارکباد

تل ابیب میں فدائی حملے کی کامیابی پر انصار اللہ کیجانب سے فلسطینی عوام کو مبارکباد

انصار اللہ کا کہنا تھا کہ دشمن حکومت کو یہ جاننے کی ضرورت ہے کہ جب تک فلسطین کی سرزمین پر قبضہ ہے، اس کے لیے سلامتی اور امن حاصل نہیں ہوسکے گا۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ یمن کی مقاومتی تحریک ''انصار اللہ'' نے مقبوضہ فلسطینی علاقوں میں پے در پے فدائی حملے کرنے پر فلسطینی عوام کو مبارکباد دیتے ہوئے تاکید کے ساتھ کہا کہ جب تک اسرائیل کا فلسطین پر قبضہ باقی ہے، اس وقت تک صیہونی حکومت کے لئے اس سرزمین پر امن قائم نہیں ہوسکتا۔ فارس نیوز کے انٹرنیشنل ڈیسک کے مطابق، انصار اللہ یمن کے سیاسی دفتر نے آج (جمعہ) تل ابیب کے قریب فلسطینیوں کی شہادت پسند کارروائی کے حوالے سے ایک بیان جاری کیا ہے۔ انصار اللہ کے سیاسی دفتر کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ہم فلسطینیوں کی جانب سے اسرائیلی دشمن قوتوں کے خلاف حملوں اور دشمن کے اشتعال انگیز اقدامات اور ان کے اسلامی مقدسات میں داخل ہونے کے جواب میں ''العاد'' پر ہونے والے تازہ ترین شجاعانہ حملے پر مبارکباد پیش کرتے ہیں۔ انصار اللہ نے مزید کہا کہ ہم فلسطین کے مجاہد عوام اور ان کے بہادر بیٹوں کی دشمن کی حکومت کو متزلزل کر دینے والی کارروائیوں پر مبارکباد پیش کرتے ہیں۔ ہم فرزندان ملت اسلامیہ سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ اسرائیل کی غنڈہ گردی کے خلاف فلسطینی عوام کی جدوجہد اور القدس و الاقصیٰ کی فتح کی حمایت کریں۔

بیان کے آخر میں انصار اللہ کا کہنا تھا کہ دشمن حکومت کو یہ جاننے کی ضرورت ہے کہ جب تک فلسطین کی سرزمین پر قبضہ ہے، اس کے لیے سلامتی اور امن حاصل نہیں ہوسکے گا اور بعض عرب ممالک کے ساتھ تعلقات کو معمول پر لانے میں سوائے شکست اور مایوسی کے کچھ بھی ہاتھ نہیں آئے گا۔ یاد رہے میڈیا نے گذشتہ رات تل ابیب کے قریبی علاقے ''العاد'' میں ایک ہلاکت خیز کارروائی کی خبر دی تھی۔ ''شہاب'' نیوز ایجنسی نے عبرانی ذرائع سے نقل کرتے ہوئے بتایا کہ یہ کارروائی ایک فلسطینی شہری کی جانب سے چاقو سے کی گئی، جس کے دوران 6 صہیونی زخمی ہوگئے تھے۔ تاہم چند لمحوں بعد صہیونی ریڈیو نے سرکاری طور پر خبر دی تھی کہ اس آپریشن کے دوران تین صیہونی مارے گئے ہیں۔ فلسطینی اتھارٹی کے صدر ''محمود عباس'' نے تل ابیب کے قریب فدائی حملوں کی مذمت کرتے ہوئے دعویٰ کیا ہے کہ دیرپا امن ہی فلسطین اور خطے میں سلامتی اور استحکام کو یقینی بنانے کا صحیح راستہ ہے۔ حماس کے ترجمان ''عبداللطیف القانوع'' نے اپنے ایک جاری بیان میں اس آپریشن کو سراہتے ہوئے کہا کہ ان حملوں سے صیہونی حکومت اور اس کے سکیورٹی نظام کو ایک مہلک دھچکا لگے گا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

242


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*