?>

بغداد کے خودکش حملوں میں اسرائیلی، سعودی عرب اور امریکہ کا ہاتھ: حزب اللہ عراق

بغداد کے خودکش حملوں میں اسرائیلی، سعودی عرب اور امریکہ کا ہاتھ: حزب اللہ عراق

حزب اللہ عراق کا کہنا ہے کہ امریکی فوجیوں کو عراق میں باقی رکھنے کے مقصد سے بغداد میں خودکش حملے کروائے گئے ہیں۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ حزب اللہ عراق کے ترجمان محمد محی نے جمعے کو المسیرہ ٹی وی سے گفتگو میں کہا کہ سیکورٹی کے بہانے عراق میں امریکی فوجیوں کو باقی رکھنے کے لئے جمعرات کو بغداد میں دہشت گردانہ حملے کروائے گئے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ بغداد حملوں میں صیہونی حکومت، سعودی عرب اور امریکا کے شیطانی مثلث کا ہاتھ ہے جن کا ہدف عراق میں داعش کو زندہ کرنا ہے۔

انہوں نے کہا کہ عراق میں تشدد پھیلانے کا کام سعودی عرب کا ہے جس کے تحت وہ عراق کو سینچری ڈیل کی طرف لے جانا چاہتا ہے۔

حزب اللہ عراق کے ترجمان کا کہنا تھا کہ ہم اس سازش کا مقابلہ کریں گے۔ ہم اس سازش کو وہيں پہنچا دیں گے جہاں سے یہ آئی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ تکفیری دہشت گرد گروہ داعش کو شام میں امریکی چھاونیوں میں، عراق کے سرحدی علاقوں میں اور اردن سے ملنے والی عراقی سرحد پر ٹریننگ دی جاتی ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۲۴۲


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

مغربی ممالک میں پیغمبر اکرم (ص) کی توہین کی مذمّت
ویژه‌نامه ارتحال آیت‌الله تسخیری
پیام رهبر انقلاب به مسلمانان جهان به مناسبت حج 1441 / 2020
حضـرت ابــوطالب (ع) حامی پیغمبر اعظـم (ص) بین الاقوامی کانفرنس
ہم سب زکزاکی ہیں / نائیجیریا کے‌مظلوم‌شیعوں کے‌ساتھ اظہار ہمدردی