امام صادقؑ کے یوم شہادت کی مناسبت سے گریند کلان بڈگام میں سالانہ مجلس حسینیؑ

امام صادقؑ کے یوم شہادت کی مناسبت سے گریند کلان بڈگام میں سالانہ مجلس حسینیؑ

تنظیم کے مرکزی ذاکرین نے مرثیہ خوانی کی اور احیائے دین و شریعت کے حوالے سے امام صادق ؑ کی گرانقدر خدمات اور لامثال قربانیوں کو یاد کیا گیا۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ سلسلہ امامت کی چھٹی کڑی حضرت امام جعفر صادقؑ کے یوم شہادت کی مناسبت سے انجمن شرعی شیعیان جموں و کشمیر کے اہتمام سے گریند کلان بڈگام میں سالانہ مجلس حسینیؑ کا انعقاد کیا گیا جس میں ہزاروں کی تعداد میں عقیدت مندوں نے شرکت کی۔ تنظیم کے مرکزی ذاکرین نے مرثیہ خوانی کی اور احیائے دین و شریعت کے حوالے سے امام صادق ؑ کی گرانقدر خدمات اور لامثال قربانیوں کو یاد کیا گیا۔ مجلس عزا سے خطاب کرتے ہوئے انجمن شرعی شیعیان کے صدر حجۃ الاسلام والمسلمین آغا سید حسن الموسوی الصفوی نے حضرت امام جعفر صادقؑ کے سیرت و کردار اور علمی کمالات کے کئی گوشوں کی وضاحت کی۔ آغا صاحب نے کہا کہ امام عالیمقام ؑ کے سایہ سرپرستی میں مسلمانوں نے علوم اسلامی اور عرفان الٰہی کی وہ منزلیں طے کیں جن سے امت مسلمہ رہتی دنیا تک فیضیاب ہوتی رہے گی۔انہوں نے کہا کہ امام صادقؑ کا دور امامت علم وآگہی کے ایک درخشندہ دور کی حیثیت سے تاریخ اسلام میں مرقوم ہے۔ آپکے علمی کمالات اور روحانی کرامات کے آگے وقت کے تمام علماء و فضلاء زانو ےتہہ کرتے رہے ادببت ہوتےرہے ۔آپؑ نے ہی تاریخ اسلام میں اولین اسلامی دانشگاہ قائم کی جہاں بیک وقت ہزاروں طالب علم آپؑ سے شرف تلمز حاصل کیا کرتے تھے۔ امام عالیمقامؑ حکومت وقت کی پالیسیوں پر گہری نظر رکھے ہوئے تھے تاکہ شریعت اسلامی کو حکومتی سطح پر زک نہ پہنچائی جاسکے۔ امام عالیمقامؑ کی یہ روش وقت کے حکمرانوں کو انتہائی ناگوار گزری اور یہی روش امام عالیمقامؑ کی شہادت کا باعث بن گئی۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

242


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*