آیت اللہ رمضانی: خون کا عطیہ انسانوں کی نجات کی راہ میں کار خیر ہے

آیت اللہ رمضانی: خون کا عطیہ انسانوں کی نجات کی راہ میں کار خیر ہے

اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سکریٹری جنرل نے اس بات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہ خون کا عطیہ انسانوں کو بچانے کی راہ میں ایک کار خیر ہے، کہا: میڈیا اور ورچوئل میڈیا کو خون کا عطیہ دینے کے میدان میں ایک ماحول سازی کرنا چاہیے۔

اہل بیت (ع) نیوز ایجنسی -ابنا کے مطابق، آیت اللہ "رضا رمضانی" نے گیلان کے ثقافتی ادارہ برائے خون عطیہ کے ڈائریکٹر اور اراکین کے ساتھ ایک ملاقات میں کہا: ہماری دینی روایات میں آیا ہے کہ جس نے کسی ایک شخص کو موت سے بچایا گویا اس نے تمام لوگوں کو موت سے بچا لیا۔

اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سکریٹری جنرل نے اس بات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہ خون کا عطیہ ایک کار خیر ہے اور باقیات الصالحات میں شامل ہے، واضح کیا: سب کو انسانوں کی نجات اور انسانوں کو خدمات فراہم کرنے کا نظریہ رکھنا چاہیے۔

اس بات پر زور دیتے ہوئے کہ میڈیا اور ورچوئل میڈیا کو خون کے عطیہ کے شعبے میں ماحول سازی کرنی چاہیے، انہوں نے مزید کہا: "خون کے عطیہ کی حوصلہ افزائی کے موضوع پر اینیمیشن اور موشن گرافکس بنانا اس شعبے میں مددگار ثابت ہو سکتا ہے۔"

آیت اللہ رمضانی نے یہ بیان کرتے ہوئے کہ سالانہ ایک جامع اعداد و شمار پر مشتمل رپورٹ تیار کرنا اور اسے مختلف اداروں کو بھیجنا گیلان انسٹی ٹیوٹ برائے صحت و عطیہ خون کی سرگرمیوں کی ترقی کا باعث بن سکتا ہے، کہا: ایک معلوماتی سائٹ اور ورچوئل صفحات پر فوری رپورٹ کا ہونا، عوام کا اعتماد حاصل کرنے اور کار خیر کی طرف انہیں راغب کرنے میں موثر ثابت ہو سکتا ہے۔

مجلس خبرگان رہبری میں گیلان کے عوام کے نمائندے نے حجامت اور عطیہ خون کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا: ہمیں اس طرح کا برتاؤ نہیں کرنا چاہیے کہ حجامت اور خون کا عطیہ ایک دوسرے کے مقابلے میں ہیں۔

انہوں نے اس بات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہ حجامت سے انسانی قوت اور صحت پر بہت سے اثرات مرتب ہوتے ہیں، انہوں نے واضح کیا: یقیناً اس بات پر تاکید کی جانی چاہیے کہ حجامت کرنے اور عطیہ کرنے کی ثقافت آپس میں متصادم نہ ہو۔

آیت اللہ رمضانی نے مناسب تغذیہ کو صحت کا بنیادی عنصر قرار دیا اور کہا: ہمارے معاشرے میں بہت سے مسائل اور بیماریاں غلط خوراک کی وجہ سے ہیں۔

اہل بیت (ع) عالمی اسمبلی کے سکریٹری جنرل نے خون کے عطیہ کو ایک انسانی امر قرار دیتے ہوئے کہا: انسانوں کی نجات بھی فطری طور پر ان چیزوں میں سے ایک چیز ہے جو انسانوں کو خوش کرتی ہے۔

انہوں نے نوجوانوں کو خون کا عطیہ دینے کی نصیحت کرتے ہوئے کہا: لوگ ڈاکٹر کے مشورے سے اپنی اور دوسروں کی سلامتی کے لیے خون عطیہ کر سکتے ہیں۔

آیت اللہ رمضانی نے تاکید کی: دین اسلام لوگوں کو انسانی اور عقلی طرز عمل جیسے خون دے کر دوسروں کی مدد کرنے کی تاکید کرتا ہے ہم سب کو جان لینا چاہیے کہ ہم بعض اوقات تھوڑا سا خون دے کر ایک انسان کی زندگی بچا سکتے ہیں۔

..............

242


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*