آسٹریلیا کی سینیٹ میں جگہ پانے والی نوجوان خاتون

آسٹریلیا کی سینیٹ میں جگہ پانے والی نوجوان خاتون

آسٹریلیا کی سینیٹ میں ایک باپردہ نوجوان خاتون نے اپنی جگہ بنا کر ایک تاریخ رقم کر دی ہے۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ عالمی یوم مہاجرین کے موقع پر آسٹریلیا میں لیبر پارٹی سے سینیٹ کے لیے منتخب ہونے والی فاطمہ پیمان پہلی باحجاب رکن بن گئیں۔

افغان نژاد مسلم خاتون 27 سالہ فاطمہ پیمان مغربی آسٹریلیا سے سینیٹ کی رکن منتخب ہو گئیں۔ وہ آسٹریلوی پارلیمنٹ میں پہنچنے والی پہلی باحجاب خاتون ہیں۔

فاطمہ پیمان 1999 میں 8 سال کی عمر میں والدہ اور 3 بہن بھائیوں کے ساتھ بحیثیت تارکین وطن آسٹریلیا پہنچی تھیں اور پھر وہیں تعلیم حاصل کی۔ بعد میں سیاسی جماعت لیبر پارٹی کا حصہ بنیں۔ ان کے والد کا کینسر کی وجہ سے 2018 میں انتقال ہوگیا تھا۔

فاطمہ پیمان نے کہا کہ میں اس نئی ذمہ داری کے لیے منتخب ہونے پر فخر محسوس کر رہی ہوں انہوں نے تارکین وطن اور اقلیتوں کے ساتھ ناروا سلوک اور شدت پسندی کے خلاف اپنی جدوجہد جاری رکھنے کا بھی عزم ظاہر کیا۔

آسٹریلیا کے وزیر اعظم انتھونی البینس اور نائب وزیر اعظم پیٹرک گورمین نے بھی باحجاب فاطمہ پیمان کے سینیٹ کا رکن بننے پر خوشی کا اظہار کیا ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

242


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*