?>

آسٹریا کی مسلم کمیونٹی کے لیے بڑی کامیابی/ حجاب پر پابندی منسوخ کر دی گئی

آسٹریا کی مسلم کمیونٹی کے لیے بڑی کامیابی/ حجاب پر پابندی منسوخ کر دی گئی

عدالت کے جج نے اعلان کیا کہ اسکارف پہننے پر پابندی عائد کرنے والا قانون مذہبی غیرجانبداری کے منافی اور شہریوں کے مساوات کی خلاف ورزی تھا۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ آسٹریا کی آئینی عدالت (VfGH)  نے اس ملک میں حجاب پر عائد پابندی کے قانون کو کالعدم قرار دے دیا۔
آج بروز جمعہ ۱۲ دسمبر ۲۰۲۰ کو آسٹریا کے پرائمری اسکولوں میں اسکارف پر لگائی گئی پابندی جو گزشتہ سال (۲۰۱۹) قانونی شکل اختیار کر گئی تھی کو منسوخ کرتے ہوئے عدالت نے فیصلہ دیا کہ یہ اقدام ملک کے بنیادی قانون کے خلاف تھا جسے عدالت منسوخ کرتی ہے۔
ویانا سے ابنا کے نمائندے کی رپورٹ کے مطابق، عدالت کے جج نے اعلان کیا کہ اسکارف پہننے پر پابندی عائد کرنے والا قانون مذہبی غیرجانبداری کے منافی اور شہریوں کے مساوات کی خلاف ورزی تھا۔
آئینی عدالت کے حکم سے آسٹریا کے چانسلر کو فوری طور پر سابقہ قانون کی منسوخی اور اس حکم کے نفاذ کا اعلان کرنا ہو گا۔
واضح رہے کہ پرائمری اسکولوں میں حجاب پر پابندی کا متنازعہ قانون گزشتہ حکومت کے ذریعے منظور اور نافذ کیا گیا تھا اور اسلام دشمن عناصر نے پرائمری اسکولوں کے بعد ہائراسکینڈری اسکولوں، کالجوں اور یونیورسٹیوں میں بھی اسے نافذ کرنے کی کوشش کی تھی۔
گزشتہ سال حجاب کی ممنوعیت کے قانون کی منظوری کے بعد آسٹریا کے مسلمانوں خصوصا شیعوں نے عدالت میں شکایت درج کروائی اور خوش قسمتی سے عدالت نے ان کے حق میں فیصلہ دے دیا۔
یہ عظیم کامیابی آسٹریا کے مسلمانوں کی جد و جہد خصوصا ویانا کے امام علی (ع) اسلامی مرکز کے سربراہ اور امام جماعت حجۃ الاسلام و المسلمین منتظری مقدم کی کاوشوں کا نتیجہ ہے۔


...........

242


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

مغربی ممالک میں پیغمبر اکرم (ص) کی توہین کی مذمّت
ویژه‌نامه ارتحال آیت‌الله تسخیری
پیام رهبر انقلاب به مسلمانان جهان به مناسبت حج 1441 / 2020
حضـرت ابــوطالب (ع) حامی پیغمبر اعظـم (ص) بین الاقوامی کانفرنس
ہم سب زکزاکی ہیں / نائیجیریا کے‌مظلوم‌شیعوں کے‌ساتھ اظہار ہمدردی