قبلۂ اول کی سرزمین میں؛

مسجد صحوہ کی شہادت پر فلسطینیوں کا رد عمل

صہیونی ریاست کے ہاتھوں ، مقبوضہ فلسطین میں واقع صحرائے نقب کی مسجد صحوہ کی شہادت پرفلسطینیوں نے شدید ردعمل ظاہر کیا ہے / صہیونی کالونیوں کی تعمیر جاری ہے۔

اطلاعات سے معلوم ہوتا ہے کہ مسجد صحوہ کی شہادت کے نتیجے میں صہیونی فوجیوں اورفلسطینیوں کے درمیان شدیدجھڑپیں ہوئی ہيں۔ صہیونیوں کااقدام، فلسطینیوں کی ناراضگی اورغم و غصہ بھڑک اٹھنے کاباعث ہوا ہے۔ صہیونی ریاست نے صحرائے نقب کے فلسطینیوں کے احتجاج کو دبا نے کے لئے ان پرتشدد میں اضافہ کردیاہے ۔ تحریک حماس نے تاکید کے ساتھ کہاہے کہ مسجد صحوہ سمیت دوسری مسجدوں کو شہید کرنے کا صہیونیوں کاجرم ، ادیان الہی اور بندگان خدا کی آزادی عبادت پر پابندی لگانے کی نسل پرستانہ پالیسی کاعکاس ہے ۔صہیونی ریاست جوایک جعلی حکومت ہے ، تباہی ، ویرانی توسیع پسندی اور ادیان الہی کی توہین پراستوارہے ۔اس بنیاد پرجب سے صہیونی ریاست قائم ہوئی ہے اس وقت سے ہی فلسطینیوں کے رہائشی مکانات، عوامی مقامات اوراسلامی عمارتوں کو ڈھانا اورتباہ کرناصہیونیوں کے ایجنڈے میں ہے ۔اس بنیادپرصہیونی ریاست اب تک سیکڑوں مسجدیں شہیدکرچکی ہے جبکہ سیکڑوں کوبھرپور یاجزئی نقصان پہنچاچکی ہے ۔صہیونی ریاست مختلف طریقوں سے ،فلسطینی علاقوں کو صہیونی رنگ دینے کی کوشش کررہی ہے  اور اس تناظرمیں وہ فلسطینیوں کی تاریخی عمارتوں ، گھروں اوراسلامی عمارتوں کوتباہ و برباد کررہی ہے اور یہ کام اس کے ایجنڈے میں شامل ہے ۔صہیونی ریاست ، فلسطینی عوام کی اسلامی استقامت اوران کے اسلامی عقائد کو جو ظلم کے سامنے گھٹنے ٹیکنے کی نفی کرتے ہيں، فلسطین میں اپنی تسلط پسندانہ اورتوسیع پسندانہ پالیسیوں کی راہ میں سب سے بڑی رکاوٹ سمجھتی ہے ۔اس بناپروہ مختلف طریقوں سے  فلسطینی عوام کے  اسلامی عقائد کونقصان پہنچانے کی کوشش کررہی ہے ۔ مسجدیں جواسلامی عقائدکی تعلیم دینے  اورصہیونی ریاست کی قلعی کھولنے کی جگہ ہیں،اس غاصب حکومت کے دشمنانہ اقدامات کانشانہ ہیں۔ اس بنا پر صہیونی ریاست مسجدوں کوشہید کرکے اور اسلامی عقائد کی توہین کرکے ، بہ زعم خود فلسطینی عوام کی استقامت کوروکنے کی کوشش کرہی ہے ۔لیکن فلسطین کے عوام نے ثابت کردیاہے کہ اسلامی مقدسات کے خلاف صہیونی ریاست کے اقدامات لاحاصل ہیں۔ سن دوہزارکی تحریک انتفاضہ جومسجدالاقصی میں صہیونی ریاست کے سابق وزیراعظم ایریل شرون کے اشتعال انگیزداخلے کے بعد شروع ہوئی ، اس حقیقت کاثبوت ہے ۔ان حالات میں عالمی برادری بالخصوص اسلامی کانفرنس تنظیم کی ذمہ داری ہے کہ ٹھوس اقدامات کے ذریعے  فلسطینی علاقوں میں صہیونی ریاست کے تباہ کن اقدامات کاسلسلہ روکے ۔دوسری جانب سے صہیونی کالونیوں کی تعمیر جاری ہےصہیونی ریاست نے  مقبوضہ فلسطین کے  جنوبی علاقے  صحرائے  نقب میں گیارہ صہیونی کالونیاں بنانے  کا اعلان کیا ہے ۔ صہیونی ریاست یہ صہیونی کالونیاں بئر السبع اور عراد کے  علاقوں میں بنانا چاہتی ہے  تا کہ اس طرح نقب میں صہیونی کالونیاں متصل ہوسکیں ۔ صحرائے  نقب سے  حالیہ برسوں میں یہودی دوسرے  علاقوں کی طرف نقل مکانی کررہے ہیں جس کی بناپر صہیونی ریاست اس علاقے  میں صہیونیوں کی تعداد بڑھانے  کی کوشش کررہی ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

/110


اسلام کے سپہ سالار الحاج قاسم سلیمانی اور ابومہدی المہندس کی مظلومانہ شہادت
سینچری ڈیل، نہیں
حضـرت ابــوطالب (ع) حامی پیغمبر اعظـم (ص) بین الاقوامی کانفرنس میں
ہم سب زکزاکی ہیں / نائیجیریا کے‌مظلوم‌شیعوں کے‌ساتھ اظہار ہمدردی