توہین کا سلسلہ جاری؛

سعودی روزنامے میں آیت اللہ العظمی سیستانی کے توہین آمیز کارٹون کی اشاعت

ان کی رائے کے مطابق الوطن میں توہین آمیز تصاویر کی اشاعت اسی ایجنڈے کا تسلسل ہے جس کی منصوبہ بندی سمندر پار قوتوں نے کر رکھی ہے اور سعودی حکمرانوں کو ہدایت دی گئی ہے اس پر عملدرآمد کریں۔

ہل البیت (ع) نیوز ایجنسی ـ ابنا ـ کی رپورٹ کے مطابق سعودی عرب کے شہزادوں سے وابستہ روزنامے "الوطن" نے ایک ایسا کارٹون شائع کیا ہے جس میں آیت اللہ سیستانی کو عراق کی قدرتی دولت ہڑپ کرتے ہوئے اور اپنے عمامے پر ایران کا پرچم سجائے ہوئے دکھایا گیا ہے۔

اس کارٹون کے دوسرے حصے میں ـ شیعہ مرجعیت کے خلاف سعودی حکمرانوں کے بغض و عداوت اور اہل تشیع کے مذہبی راہنماؤں کے خلاف منظم نفسیاتی جنگ کا ثبوت دیتے ہوئے ـ آیت اللہ سیستانی کو ایسے حال میں دکھایا گیا ہے کہ ان کے ہاتھ میں ایک لاؤڈ اسپیکر ہے اور سعودی عرب کی طرف منہ کرکے بول رہے ہیں!

اسی اثناء میں سعودی علاقے الشرقیہ کے سعودی ماہرین نے "نہرین نیٹ" کو بتایا کہ العریفی نے سعودی جاسوسی ایجنسیوں کے سربراہ "مقرن بن عبدالعزیز" کی ہدایت پر اہل تشیع کو "مجوس" اور آیت اللہ سیستانی کو "زندیق" اور "فاجر" کہا ہے۔

آیت اللہ العظمی سیستانی کے خلاف العریفی کے توہین آمیز بیانات پر دنیا کی شیعہ اور سنی شخصیات ـ حتی بعض وہابی مفتیوں ـ کی مذمت و تنقید کے باوجود ایک سعودی روزنامے نے اس مرجع تقلید کے توہین آمیز کارٹون شائع کردیئے ہیں۔


پیام رهبر انقلاب به مسلمانان جهان به مناسبت حج 1441 / 2020
ہم سب زکزاکی ہیں / نائیجیریا کے‌مظلوم‌شیعوں کے‌ساتھ اظہار ہمدردی
حضـرت ابــوطالب (ع) حامی پیغمبر اعظـم (ص) بین الاقوامی کانفرنس میں
سینچری ڈیل، نہیں