وہابی مفتی کا عجیب فتوی:

فائربریگیڈ والے آدھا روزہ رکھا کریں !!

ایک وہابی مفتی نے فتوی دیا ہے کہ فائر بریگیڈ والے اپنا روزہ ظہر کے وقت توڑ سکتے ہیں!

اہل البیت ن(ع) نیوز ایجنسی ـ ابنا ـ کی رپورٹ کے مطابق سعودی عدلیہ کے بلندپایہ مفتی «عبدالمحسن العبيكان» نے قبل فتوی دیا ہے کہ فائربریگیڈ کے ملازمین ـ جو اپنے کام میں مشقت کرتے ہیں اور سخت حالات میں آگ بجھانے پر مجبور ہوتے ہیں ـ ظہر کے وقت افطار کرسکتے ہیں.

سعودی بادشاہت کی عدلیہ کے نائب سربراہ نے اپنے فتوے میں کہا ہے: وہ افراد جو فائر بریگیڈ میں مصروف کار ہیں یا دیگر مشکل فرائض کی انجام دہی پر مجبور ہیں ظہر کے وقت افطار کرسکتے ہیں.

انہوں  نے اپنے اس فتوے کے لئے قرآن کریم کی آیت (وما جعل عليكم في الدين من حرج = اﷲ نے تمہارے اوپر کسی قسم کی سختی قرار نہیں دی ہے) اور فقہی اصول (عند الضرورة تباح المحرمات = ضرورت کے وقت افعال حرام حلال ہوجاتے ہیں) کا سہارا لے کر ظہر کے وقت افطار کو جائز قرار دیا ہے.

قابل ذکر ہے کہ اسی وہابی مفتی نے حالیہ ماہ رمضان کی ابتداء میں فتوی دیا تھا کہ عوام کے لئے جائز ہے کہ وہ لوڈ شیڈنگ کے دوران روزہ افطار کردیں.


پیام رهبر انقلاب به مسلمانان جهان به مناسبت حج 1441 / 2020
ہم سب زکزاکی ہیں / نائیجیریا کے‌مظلوم‌شیعوں کے‌ساتھ اظہار ہمدردی
حضـرت ابــوطالب (ع) حامی پیغمبر اعظـم (ص) بین الاقوامی کانفرنس میں
سینچری ڈیل، نہیں