پیغمبر اسلام(ص) کی شان میں گستاخی پر مبنی فلم کے ڈائریکٹر نے اسلام قبول کر لیا

پیغمبر اسلام(ص) کی شان میں گستاخی پر مبنی فلم کے ڈائریکٹر نے اسلام قبول کر لیا

پولینڈ میں سرکار ختمی مرتبت(ص) کی شان میں گستاخی پر مبنی فلم بنانے والوں میں شامل رہے ایک شخص نے حرمین شریفین کی زیارت کرکے اسلام قبول کر لیا۔

ابنا: پولینڈ میں سرکار ختمی مرتبت(ص) کی شان میں گستاخی پر مبنی فلم بنانے والوں میں شامل رہے ایک شخص نے حرمین شریفین کی زیارت کرکے اسلام قبول کر لیا۔ عالمی اردو خبررساں ادارے نیوز نور کی رپورٹ کے مطابق ہولینڈ کی دائیں بازو کی انتہا پسند جماعت فریڈم پارٹی کے رکن اور قرآن اور پیغمبر اسلام(ص) کی اہانت پر مبنی فلم بنانے والوں میں شامل رہ چکے آرنود فاندور نے اپنے مسلمان ہونے کے اعلان کے ساتھ حرمین شریفین کی زیارت کا شرف حاصل کیا ہے۔ انہوں نے سرکار ختمی مرتبت(ص) کی قبر مطہر کی زیارت کے موقع پر اشکبار آنکھوں کے ساتھ کہا: ’’میں اسلام مخالف جماعتوں میں سب سے زیادہ انتہا پسند پارٹی کا رکن تھا۔ لیکن فتنہ فلم پر مسلمانوں کا حماسی رد عمل دیکھ کر میں نے اس سوال کا جواب ڈھونڈھنے کی ٹھان لی کہ کیوں مسلمان اس قدر اپنے نبی اور اپنے دین سے محبت رکھتے ہیں؟‘‘۔ انہوں نے مزید کہا: ’’اسلام سے متعلق میری تحقیقات کا سلسلہ آگے بڑھا تو مجھے احساس ہوا کہ میری پارٹی کے اقدامات غلط ہیں۔ اس کے بعد میں آہستہ آہستہ اسلام کی طرف راغب ہونے لگا۔ اس سلسلہ میں ، میں نے بہت زیادہ مطالعہ کیا اور ہولینڈ کے مسلمانوں سے اور قریب ہوگیا۔ آخرکار میں نے دین اسلام قبول کر لیا‘‘۔ واضح رہے کہ فتنہ نامی توہین آمیز فلم مغرب میں چل رہی اسلامو فوبیا کی لہر کی ایک زندہ مثال ہے۔یہ فلم کچھ برس قبل ہولینڈ میں بنائی گئی تھی اور اس کے خلاف مسلمانوں نے احتجاجی مظاہرے کئے تھے۔ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۲۴۲


دنیا بھر میں میلاد پیغمبر رحمت(ص) کی محفلوں کی خبریں
سینچری ڈیل، نہیں
حضـرت ابــوطالب (ع) حامی پیغمبر اعظـم (ص) بین الاقوامی کانفرنس میں
ہم سب زکزاکی ہیں / نائیجیریا کے‌مظلوم‌شیعوں کے‌ساتھ اظہار ہمدردی