فوری خبر / مصری پارلیمان نے اسرائیل کو مایوس کردیا، عمرسلیمان اور احمدشفیق نا اہل

مصر کی انقلابی پارلیمان نے قانون منظور کرکے حسنی مبارک کے دو اسرائیل نواز ساتھیوں کو صدارتی انتخابات کے لئے نا اہل قرار دیا۔

اہل البیت (ع) نیوز ایجنسی ـ ابنا ـ کی رپورٹ کے مطابق مصر کی انقلابی پارلیمان نے مصر کے دو اسرائیل نواز صدارتی امیدواروں کو نااہل قرار دے کر اسرائیل اور امریکہ کو مایوس کردیا ہے۔عمر سلیمان مصری خفیہ ایجنسی کے سابق سربراہ اور سابق مصری آمر حسنی مبارک کے نائب کی حیثیت سے اسرائیل کے لئے ناقابل فراموش خدمات کے حوالے سے مشہور تھے جنہوں نے صدارتی انتخابات کے لئے کاغذات نامزدگی داخل کرائے تھے۔عمر سلیمان مبارک آمریت کے آخری لمحوں تک نائب صدر کے عنوان سے آمریت اور اسرائیل و امریکہ کے لئے خدمات کی انجام دہی میں تندہی سے مصروف تھے جبکہ احمد شفیق کسی زمانے میں مبارک کے دور کے ائیرفورس کمانڈر اور آمریت کے آخری ایام میں وزیر اعظم تھے۔یہ افراد آج شام کو مصر کی پارلیمان میں منظور ہونے والے نئے قانون کے تحت نااہل قرار پائے جس میں قید کیا گیا ہے کہ حسنی مبارک حکومت کے اعلی اہلکار 10 سال کے عرصے تک کسی سیاسی عہدے پر فائز ہونے کا حق نہیں رکھتے اور ان کے نائب عمر سلیمان اور حسنی مبارک کے دوسرے نائبین عمر بھر تک کسی بھی سرکاری عہدے کے لئے نااہل ہونگے۔ اس قانون کے مطابق صدارتی انتخابات کے نامزد امیدوار ، سابق وزیر خارجہ عمرو موسی بھی نا اہل قرار پائے ہیں اور یہ افراد صدارتی انتخابات میں شرکت نہیں کرسکیں گے۔یاد رہے کہ مصری پارلیمان کا یہ قانون ملٹری کونسل کی منظوری کے بعد نافذ العمل ہوگا گوکہ یہ حیرت کی بات ہے کہ مصری آمر کے اسرائیل نواز ساتھیوں کی نااہلی کے قانون کے نافذالعمل ہونے کے لئے مصر کے اسرائیل نواز جرنیلوں کی منظوری کی ضرورت ہے۔واض کی وجہ سے مصر میں غم و غصے کی لہر دوڑی تھی اور انقلابی جماعتوں نے کل (روز جمعہ) کے لئے ان افراد کی نامزدگی کے خلاف ملین مارچ کا اعلان کیا تھا اور اگر ملٹری کونسل پارلیمان کے منظور کردہ قانون کو مسترد کرے تو مصر میں ایک بار پھر مظاہروں اور ریلیوں کا امکان پایا جاتا ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔/110


دنیا بھر میں میلاد پیغمبر رحمت(ص) کی محفلوں کی خبریں
سینچری ڈیل، نہیں
حضـرت ابــوطالب (ع) حامی پیغمبر اعظـم (ص) بین الاقوامی کانفرنس میں
ہم سب زکزاکی ہیں / نائیجیریا کے‌مظلوم‌شیعوں کے‌ساتھ اظہار ہمدردی