روزے کے احکام۔۱

روزے کی تعریف اور اس کی قسمیں

روزے کی تعریف اور اس کی قسمیں

اذان صبح سے مغرب تک حکم خدا کو بجالانے کے لئے کچھ کام انجام دینے سے پرہیز کرنے کو روزہ کہتے ہیں

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔

روزہ کی تعریف
اسلام کے واجبات اور انسان کی خود سازی کے سالانہ پروگرام میں سے ایک، روزہ ہے، اذان صبح سے مغرب تک حکم خدا کو بجالانے کے لئے کچھ کام انجام دینے (جن کی وضاحت بعدمیں آئے گی)سے پرہیز کرنے کو روزہ کہتے ہیں، احکام روزہ سے آگاہ ہونے کے لئے پہلے اس کی اقسام کو جاننا ضروری ہے۔


واجب روزے
درج ذیل روزے واجب ہیں:۔ ماہ مبارک رمضان کے روزے۔۔قضا روزے۔ کفار ے کے روزے۔ نذرکی بنا پر واجب ہونے والے روزے۔۔ باپ کے قضا روزے جو بڑے بیٹے پر واجب ہوتے ہیں۔


بعض حرام روزے
۔ عید فطر( اول شوال) کا روزہ ، عید قربان ( ۱۰؍ذی الحجہ) کا روزہ ۔ اولاد کا مستجی روزہ والدین کے لئے اذیت کا سبب بنے (احتیاط واجب کی بناپر)۔ اولاد کا مستجی روزہ رکھنا جب کہ اس کے والدین نے منع کیا ہو۔

مستحب روزے
حرام اور مکروہ روزہ کے علاوہ سال کے تمام ایام، میں روزہ رکھنا مستحب ہے، البتہ بعض مستحب روزوں کی زیادہ تاکید اور سفارش کی گئی ہے۔جن میں سے چند حسب ذیل ہیں:۔ ہر جمعرات اور جمعہ کو روزہ رکھنا۔
۔عید مبعث کے دن (۲۷؍ ماہ رجب) کو روزہ رکھنا۔
عید غدیر(۱۸؍ذی الحجہ) کو روزہ رکھنا۔۔
عید میلاد النبی (۱۷؍ ربیع الاول) کو روزہ رکھنا۔
۔عرفہ کے دن (۹؍ذی الحجہ) اس شرط پر کہ روزہ رکھنااس دن کی دعاؤں سے محرومیت کا سبب نہ بنے۔۔
 پورے ماہ رجب اور ماہ شعبان میں روزہ رکھنا۔۔
ہرماہ کی ۱۳، ۱۴ اور ۵ ۱ تاریخ کو رورہ رکھنا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۲۴۲


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

دنیا بھر میں میلاد پیغمبر رحمت(ص) کی محفلوں کی خبریں
سینچری ڈیل، نہیں
حضـرت ابــوطالب (ع) حامی پیغمبر اعظـم (ص) بین الاقوامی کانفرنس میں
ہم سب زکزاکی ہیں / نائیجیریا کے‌مظلوم‌شیعوں کے‌ساتھ اظہار ہمدردی