• انہدام جنت البقیع سے یمن کی تاراجی تک شیطان کی ڈگڈی پر تکفیریت کا ننگا ناچ

    بقیع محض ایک قبرستان نہیں تھا جو ویران ہوا بلکہ ایک تاریخی دستاویز کو صفحہ ہستی سے مٹانے کی کوشش کر کے کچھ لوگوں نے اپنی نابودی کی سطریں رقم کی تھیں اور آج مذہبی و تکفیریت کے جنون میں بے گناہوں کو مار کر بہشت میں جانے کی آرزو اس کا جیتا جاگتا ثبوت ہے وہابیت و تکفیریت نے یہ چند مزارات مقدسہ کو مسمار نہیں کیا تھا انسانیت و شرافت کے تاج کو اپنے پیروں تلے روند کر دنیا کو بتلایا تھا کہ پہچانو ہم کون ہیں؟

    مزید ...
  • جنت البقیع ویران کیوں؟

    مسلمانوں کا دوسرا اہم ترین اور قدیمی قبرستان جنت المعلّٰیٰ ہے، جو کہ مکہ شریف میں واقع ہے۔ جہاں رسول خدا کی پہلی اور چہیتی بیوی جس نے صنف نسواں میں سب سے پہلے نہ فقط ایمان لے آئی بلکہ عرب کی مالدار خاتون ہونے کی وجہ سے اپنا تمام تر مال و دولت رسول خدا کے سپرد کیا، تاکہ اس سے ضعیف اور نادار مسلمانوں کی مدد کرسکیں

    مزید ...
  • بسلسلۂ شہادت حضرت امیر(ع)؛

    خوارج کی پانچ خصوصیات، آج کے لئے

    خوارج کی ایک کلیدی خصوصیت یہ تھی کہ وہ مقصر جاہل تھے اور قاصر نہیں تھے۔ بالفاظ دیگر، امیرالمؤمنین (علیہ السلام) نے انہیں بارہا خبردار کیا تھا اور ان کی غلط روش کے سلسلے میں انہیں نصیحت کی تھی، لیکن انھوں نے کبھی بھی توجہ نہیں دی اور دوسروں کی ہتک حرمت اور تکفیر کا سلسلہ جاری رکھا۔

    مزید ...
  • شب ہائے قدر اور امام علی علیہ السلام کی وصیتیں

    کیا علیؑ ہوتے تو شبہایے قدر میں اپنے لئے دعائیں کر کے سبکدوش ہو جاتے؟ یا پھر دعائوں کے ساتھ ظالم و غاصب اسرائیل کی نابودی کے لئے عملی طور منصوبہ بندی بھی کرتے اور پروردگار سے بھی گڑگڑا کر دعاء کرتے کہ مالک مسلمانوں میں اتحاد و بصیرت پیدا کر کہ اپنے حق کے لئے لڑ سکیں اور حق پر مر سکیں ۔

    مزید ...
  • بسلسلۂ شہادت امیر(ع)؛

    عمار نے امیرالمؤمنین (علیہ السلام) سے کیا سنا تھا؟!

    مالک اشتر سے منقول ہے کہ انھوں نے جنگ صفین کے دوران گھمسان لڑائی کے دوران حسرت کے ساتھ کہا تھا: "کاش ہم علی (علیہ السلام) کو اس دور میں لے جاسکتے جہاں ان کی قدر و عظمت کا ادراک کریں اور ان کی سیرت و تعلیمات کو سر فہرست رکھیں۔

    مزید ...
  • علی (ع) اور قرآن۔1

    علی اور قرآن کتنی یکسانیت ہے دونوں میں ؟ سچ کتنی اپنائیت ہے دونوں میں ؟ جیسے دونوں کا وجود ایک دوسرے ہی کے لئے ہو دونوں ایک دوسرے کے درد کو سمجھتے ہوں … ایک دوسرے کے درد آشنا ہو مونس و ہم دم ہوں ہم راز و ساتھی ہوں ۔

    مزید ...
  • ایام علی (ع) اور مدافعین حرم!!!!

    اب سوال یہ ہے کہ اگر ولایت کا دفاع اس قدر اہم چیز ہے تو آج ہم اس سے غافل کیوں ہیں۔؟ آج مدافعین حرم کے نام پر قاٸم اس حساسیت کے حصار کو ختم کرنے میں اپنا کردار ادا کیوں نہیں کرتے۔؟ جناب سیدہ زہرا سلام علیہا نے جس شجاعت، بصیرت، استقامت اور عزم و حوصلہ سے ولایت کا دفاع کیا، آج ہم میدانِ عمل میں نظر کیوں نہیں آتے۔؟

    مزید ...
  • امام حسن مجتبیٰ ؑکی سخاوت و بردباری : ایک تعارف

    اسلامی منابع میں امام حسن ؑ کو بخشنے والا اور کشادہ دل کے عنوان سے یاد کیا گیا ہے اسی لئے آپ ’’کریم‘‘ ، ’’سخیّ‘‘ اور’’جواد‘‘ کے نام سے مشہور تھے۔منابع میں آبا ہے کہ آپ نے دو دفعہ اپنی پوری جمع پونجی خدا کی راہ میں بخش دی اور تین دفعہ اپنی جائداد کا نصف حصہ غریبوں میں تقسیم فرمایا۔

    مزید ...
  • بچے اور ماہ رمضان المبارک

    جس طرح ماہ مبارک جوانوں، بزرگوں اور خواتین کے لیے ایک غنیمت ہے، اسی طرح بچوں کے لیے بھی غنیمت ہے۔ بچوں کو اس ماہ سے بھرپور مسفید کرنا والدین کی ذمہ داری ہے۔ انہیں آداب اسلامی اور احکام سکھانے کا بہترین موقع ہے۔

    مزید ...
  • ولایت فقیہ کی پیروی؛ بے چینوں کی چھاؤنی میں ظہور کی مشق

    ہم نے اسلامی انقلاب کے نشیب و فراز میں دیکھا، بہت سے بَرومند جوانوں کو اور حیرت زدہ ہوئے کہ وہ کس طرح اپنے زمانے کے امام زمانہ (عَجَّلَ اللہُ تَعَالیٰ فَرَجَہُ الشَّرِیفَ) کے نائب کی اطاعت اور ان کے لئے جانفشانی کر رہے ہیں!

    مزید ...
  • انتظار دوسرے زاویئے سے؛

    امام زمانہ(عج) منتظر ہیں کہ ہم پلٹ آئیں

    "ہم اس وقت بہت حساس مرحلے سے گذر رہے ہیں، جو میرے خیال میں تاریخ کا حساس ترین نقطہ ہے ۔۔۔ گویا دنیا مکہ معظمہ اور محرومین کی امیدوں کے کعبے سے آفتاب ولایت کے طلوع اور مستضعفین کی حکمرانی کے لئے تیار ہو رہی ہے"۔

    مزید ...
  • وہ آدمی بڑے عزم و یقین والا تھا

    18 شعبان کی تاریخ ہم کیسے بھول سکتے ہیں جب ہم سے وہ محسن ملت بچھڑ گیا جس نے لادینیت کی چلتی سیاہ آندھیوں کے درمیان تحریک دینداری کا لازوال چراغ روشن کیا پیش نظر تحریر اسی عظیم شخصیت کی خدمت میں ایک خراج عقیدت ہے جسے آپ کے ساتھ ایک بار پھر شئیر کر رہا ہوں ۔ تمام احباب و قارئین سے خطیب اعظم طاب ثراہ کے لئے ایک سورہ فاتحہ کی گزارش ہے ۔

    مزید ...
  • حقیقتِ انتظار اور اسکے تقاضے

    تم میں سے ہر ایک ہمارے قائم کے خروج کے لئےآمادہ رہے چاہے وہ ایک تیر کو مہیا کرنے کی حد تک ہی کیوں نہ ہو چونکہ جب خدا یہ دیکھے گا کہ انسان نے مہدی عجل اللہ تعالی فرجہ الشریف کی نصرت کی نیت سے اسلحہ مہیا کیا ہے تو امید ہے کہ خدا اسکی عمر کو طولانی کر دے کہ وہ ظہور کو درک کر لے اور امام مہدی علیہ السلام کے یاور و مددگاروں میں قرار پائے۔

    مزید ...
  • بنی امیہ کی طرح بنی عباس نے بھی آل رسول (ص) پر ظلم و ستم روا رکھنے میں کوئی کسر باقی نہیں چھوڑی

    ہارون رشید کا نام و نشاں مٹ گیا لیکن بغداد کے قریب کاظمین میں حضرت امام موسی کاظم علیہ السلام کا روضہ مبارک آج بھی عاشقان رسول اکرم اور اہلبیت (ع) کے چاہنے والوں کے لئے ہدایت اور معرفت کا سرچشمہ ہے۔

    مزید ...
  • ایک مختصر جائزہ

    امیر المومنین حضرت علی ابن ابیطالب(ع) کا فلسفہ زندگی

    مولا علی ؑ کا فلسفہ زندگی وہی ہے جو رسول اللہ (ص) کا فلسفہ زندگی تھا۔ اللہ تعالیٰ کے قوانین کا نفاذ، اسلام کا دفاع، عدل ا نصاف کا نفاذ، مظلومین اور بے سہاروں کی امدا د کرنا، حسن اخلاق، اتحاد کے حامل، کافروں پہ بھاری، اور قرآن کی عملی تعلیمات کا پرچار ہی ان کی فلسفہ زندگی کا نچوڑ ہے۔ آخر میں مولا علی ؑ کے اس حدیث مبارک سے اختتام کرتے ہیں۔ مولا فرماتے ہیں کہ ’’خدا کی رحمت ہو اس بندے پر جو یہ جانتا کہ کہاں سے آیا ہے؟ کس مقصد سے آیا ہے؟ اور کہاں جانا ہے؟ اللہ تعالی ٰ ہمیں اس پر عمل کرنے کی توفیق عنایت فرمائیں۔

    مزید ...
  • 13 رجب کی مناسبت سے

    مولا علی (ع) کی ولادت کے لیے کعبہ کا شگاف، جاویدانی معجزہ+ تصاویر

    اس واقعہ کو 1440 سے سال سے زیادہ عرصہ ہو چکا ہے۔ اس طولانی عرصہ میں بارہا اور بارہا خانہ کعبہ کی تعمیر نو ہوئی ہے لیکن ہر بار تعمیر کے بعد دوبارہ اس مقام پر دراڑیں پڑ جاتی ہیں جبکہ وہاں کے پتھر بھی متعدد بار تبدیل کیے جا چکے ہیں۔

    مزید ...
  • امام جواد علیہ السلام کی ایک حدیث اور حالیہ انتخابات کے پیش نظر ہماری ذمہ داری

    ملک کے بدلتے ہوئے ان حالات میں ہمیں اپنا تجزیہ کرنے کی ضرورت ہے کہ موجودہ حالات میں ہم کس قدر ملک کے حالات کے تئیں حساس ہیں اپنی قوم کی تعمیر کو لیکر ہمارے وجود کے اندر ایک امنگ پائی جاتی ہے ۔ اگر ہم ملک و قوم کے تئیں ہمدردی رکھتے ہیں تو یقینا ملک کے سیاسی منظر نامے پر جو کچھ چل رہا ہے اس سے غافل نہیں ہونگے ۔

    مزید ...
  • جناب فاطمہ زہرا سلام اللہ علیہا اور معاشرتی ذمہ داریاں (دوسرا حصہ)

    جناب فاطمہ زہرا سلام اللہ علیہا کی زندگی محض ایک رونے والی ایسی خاتون کی زندگی نہیں ہے جو صبح و شام گریہ کرتی ہے بلکہ ایسی زندگی ہے جس نے اپنے طرز عمل سے اپنے دشمنوں کو رلا دیا ہے ایک ایسی مجاہدانہ زندگی ہے جس میں ایک تموج ہے ایک انقلابی آہنگ ہے ، معاشرے کے تئیں اپنی ذمہ داریوں کی ادایگی ہے معاشرے کو اوپر لانے کی کوشش ہے ، امید کہ ہماری خواتین بھی آپ کی زندگی کو نمونے عمل قرار دیتے ہوئے اسی راہ پر جسکی نشاندہی حضرت زہراسلام اللہ علیہا نے اس طرح کی کہ چودہ سال گزر جانے کے بعد آج بھی ہم اس اٹھارہ سال کی زندگی کے تابندہ نقوش کے محتاج ہیں جسکی زندگی کا پل پل کامیابی و سر افرازی کا استعارہ ہے۔

    مزید ...
  • جناب فاطمہ زہرا سلام اللہ علیہا اور معاشرتی ذمہ داریاں (پہلا حصہ)

    جناب فاطمہ زہراسلام اللہ علیہا اس مکتب کی پروردہ ہیں جس نے صنف نسواں کو اعتبار بخشا آپ نہ محض اس مکتب کی پروردہ ہیں بلکہ علم و آگاہی و معرفت کی منزلوں میں بھی آپ اعلی منزلوں پر بھی فائز ہیں۔

    مزید ...
  • فاطمہ زہرا(ع) امام خمینی(رہ) کی نگاہ میں

    امام خمینی رضوان اللہ تعالی علیہ نے جناب فاطمہ زہرا سلام اللہ علیہا کی ولادت کے دن کو روز خاتون کا نام دیا ہے آپ نے اس دن اپنے ایک پیغام میں فرمایا : تمام عورتوں کے لئے یہ افتخار کا سبب ہے کہ حضرت صدیقہ طاہرہ کی ولادت کے دن کو روز خاتون قراد دیا گیا ہے یہ ایک افتخار بھی ہے اور ایک ذمہ داری بھی۔

    مزید ...
  • وہ ایک ماں تھی

    کچھ ایسا ہی تو تھا کہ وہ ان بچوں ہی کی نہیں ہم سب کی ماں تھی ہماری خلقت اسی کے وجود کی رہین منت تھی بلکہ پوری کائنات اسی کے طفیل میں خلق کی گئی وہ محورِ کائنات تھی وہ نقطۂ پرکار حیات عالم تھی۔ وہ فاطمہ(سلام علیہا) تھی۔ حقیقی معنی میں وہ ایک ماں تھی۔

    مزید ...
  • شوہر داری اور کردار سیدہ(س)

    کیا یہ کوئی معمولی بات ہے کہ کوئی زوجہ گھر گرہستی کے امور بھی بحسن و خوبی انجام دے اور پوری مشترکہ زندگی میں شوہر کو ذرا سی شکایت کا موقع نہ دے ، شوہر کی مرضی کو سمجھنا اور اسکے مطابق عمل کرنا حیات فاطمی کا وہ رخ ہے جس پر اگر ہماری خواتین چلیں تو کبھی گھر میں نا اتفاقی نہیں پیدا ہو سکتی۔

    مزید ...
  • سردار سرحدوں سے ماوراء کیوں؟

    جب امریکہ ظلم اور زیادتی میں اپنے آپ کو کسی سرحد کا پابند نہیں جانتا تو اس کے خلاف ردعمل کیسے سرحدوں میں مقید کیا جا سکتا ہے۔ کیا انسانیت کو سرحدوں کا پابند بنایا جاسکتا ہے؟

    مزید ...
  • مکتبِ حاج قاسم سلیمانی (رہ)

    شہید قاسم سلیمانی (رہ) کے فکری مکتب کو تفصیل سے جاننے اور سمجھنے کے لیے شہید کی عملی زندگی کے مطالعہ کے ساتھ ساتھ ان کی ولایت، انقلاب، دفاع، شہادت، مدافعینِ حرم، ثقافت اور ہنر کے حوالے سے تقاریر کے مختصر مگر مفید کتابی مجموعے “برادر قاسم” کے مطالعہ کی بھی تاکید کروں گا۔

    مزید ...
  • شہید قاسم سلیمانیؒ عہد ساز شخصیت

    حاج قاسم سلیمانی کو شہید کرنے کا اصل مقصد خطے میں مزاحمتی بلاک کو کمزور کرنا تھا لیکن قاسم سلیمانی کے شہادت کے بعد امریکہ اور اس کے حواریوں کو واضع پیغام ملا کہ زندہ سلیمانی سے بڑھ کر شہیدسلیمانی ؒ ہر دل عزیز شخصیت بن گئے۔شہید سلیمانی ایک مکتب اور ایک نظریہ بن گیا جو دشمن کی آنکھوں میںتادیر کانٹے کی طرح کھٹکتا رہے گا۔

    مزید ...
  • ادیان و مذاہب کے درمیان مثبت اور تعمیری تعامل کی ضرورت: آیت الله اعرافی؛ سربراہ حوزہ ہائے علمیہ ایران

    دینی شعبوں میں موجودہ ضروریات کو مدنظر رکھتے ہوئے حوزہ علمیہ عمومی پالیسی، اہداف، ترجیحات، حکمت عملی اور متعلقہ ضوابط اور قوانین کی طویل مدتی، درمیانی مدت اور قلیل مدتی حوزہ علمیہ کی مذہبی سرگرمیوں کو دستاویزات کی بالادستی کے فریم ورک کے اندر منظور کرنے کے لیے نیز حوزہ علمیہ سرکاری اور غیر سرکاری بین الاقوامی اداروں کے ساتھ تعامل کے طریقہ کار کا مختلف مذاہب کے درمیان جائزہ لینے کے لیے پرعزم ہے۔

    مزید ...