• شام سے امریکی افواج کا انخلاء کہیں ایران کو گھیرنے کی سازش تو نہیں؟ 2

    بہرحال آہستہ آہستہ وقت سب کچھ بتا دے گا کہ کون کسے گھیرتا ہے، امریکہ اپنی ٹکنالوجی کے بل پر ایران کو زیر کرتا ہے یا ایران اپنی آئیڈیالوجی کے بل پر ہمیشہ کی طرح امریکن ٹکنالوجی کے پرخچے اڑا دیتا ہے، ایسے میں اہم یہ نہیں ہے کہ کل کیا ہوگا اہم یہ ہے کہ ہم کہاں کھڑے ہیں ، ہمارے دل و دماغ پر ٹکنا لوجی کا غلبہ ہے یا ہم اپنی آئیڈیالوجی کو روز بروز مستحکم کر رہے ہیں ؟

    مزید ...
  • شام سے امریکی افواج کا انخلاء کہیں ایران کو گھیرنے کی سازش تو نہیں؟ 1

    امریکہ کو معلوم ہے کہ اس نے پہلے کتنی فنڈنگ کی ہے اور داعش کو پیروں پر کھڑا کرنے میں اسرائیل نے کیا کردار ادا کیا ہے اب جو بات ظاہری دکھاوے کی ہے اور نظریاتی طور پر جو لڑائی خطے میں ہو رہی ہے اسکے پیش نظر خود اسکی خطے میں موجودگی اور اس موجودگی کا دم خم اب دنیا کو نظر آ رہا ہے، داعش کے اسلحے ہوں یا انکے پاس جدید ٹکنالوجی ہر جگہ امریکہ کا ہاتھ نظر آ رہا ہے.

    مزید ...
  • سعودی عرب کی دعوت اور شام کی مصلحت

    آج ہم تاریخ کے اس موڑ پر پہنچے ہوئے ہیں کہ دنیا ۷۴ سال کے بعد ایک بار پھر پر جھاڑنے اور کھال بدلنے کے مرحلے میں داخل ہوچکی ہے اور ایک نئے عالمی نظام کی آمد آمد ہے۔ ہم آج کے اس مرحلے میں ـ جبکہ مغرب کا سورج غروب اور مشرق کا سورج طلوع ہورہا ہے ـ سرد جنگ کے دو قطبی (Bipolar) نظام اور عبوری مرحلے یا عہد تغیّر (Transition period) کے طریقہ کار کو نہیں اپنا سکتے۔

    مزید ...
  • ’بی ڈی ایس‘ کی مسلسل کامیابیاں اور صہیونی حکومت کی اس تحریک کو روکنے کی ناکام کوشش

    اس تحریک کو ناکام بنانے اور اسے کمزور کرنے کے لئے صہیونی حکومت کی شکست نے اس حکومت کو ناامیدی کے ساتھ نفسیاتی جنگ کی طرف ڈھکیل دیا ہے اور اب قانونی اور اطلاعاتی جنگ کے ساتھ صہیونی حکومت نفسیاتی جنگ کے محاذ پر بھی اس سے مقابلہ کر رہی ہے۔

    مزید ...
  • سازشیوں کی عبرتناک شکست؛

    فتنۂ شام کے بعد مغرب کی ذلت و رسوائی

    مبصرین کہتے ہیں کہ زيادہ تر عرب حکمران صدر بشار الاسد کے برسر اقتدار رہنے کے آگے سر تسلیم خم کرچکے ہیں اور ان تمام دہشتگرد مسلح ٹولوں کی تاریخ اختتام گذر چکی ہے جنہوں نے سات سال تک امریکہ، پورے یورپ، یہودی ریاست، ترکی، اور خلیج فارس کی ساحلی عرب ریاستوں کی حمایت سے صدر بشار الاسد کا تختہ الٹنے کی غرض سے شام کی شاد و آباد سرزمین کو ویرانی سے دوچار کیا اور لاکھوں انسانوں کا خون کیا۔

    مزید ...
  • ثاقب اکبر: شام سے فوجیں نکالنے کا فیصلہ امریکہ کیجانب سے خطے میں اپنی شکست کا اعلان ہے

    اسلام ٹائمز کیساتھ اپنے خصوصی انٹرویو میں ملی یکجہتی کونسل کے رہنما کا کہنا تھا کہ پہلی دفعہ عالمی سطح پر ہونیوالے معاہدے میں جس گروہ کو باغی کہا جاتا تھا، ان کی صنعاء کے اوپر حکمرانی تسلیم کرلی گئی ہے، صنعا کے اوپر تو انکی ہی حکومت ہے نا، جن سے معاہدہ ہوا ہے۔ ایک طرح سے عالمی برادری نے صنعا کے اوپر انصار اللہ کی حکومت قبول کرلی ہے، کیونکہ یہ تو کہتے تھے کہ ہم نے ان سے بات ہی نہیں کرنی، وہ باغی ہیں، وہ بیشر علاقوں میں اب بھی موجود ہیں۔

    مزید ...
  • نیا عیسوی سال اور ہم

    نئے عیسوی سال کی حقیقت کیا ہے یہ جنوری سے شروع بھی ہوتا ہے یا نہیں، شروع ہوتا ہے تو کیوں ہوتا ہے یہ سب باتیں اپنی جگہ تفصیل طلب ہیں لیکن اگر ہم رائج نظریہ اور رسم کو دیکھتے ہوئے اس کو ایک مثبت رخ دینا چاہیں تو یقینا اس طرح دے سکتے ہیں کہ جناب عیسی ع کے ماننے والوں کے درمیان یہ سوال پیدا کریں کہ اس نئے سال کی خوشی میں کیا جناب عیسی علیہ السلام جب یمن کی ویران بستیوں کو دیکھتے ہوں گے تو خوش ہوتے ہوں گے ؟

    مزید ...
  • مسٹر ٹرمپ کا فیصلہ اور امریکیوں کا تجزیہ

    امریکہ شام سے کیوں نکلا اور اس کے بعد کیا ہوگا؟

    بروکنگز اور کارنیگی نے ایران کو کامیاب کھلاڑی اور کردوں کو شام سے امریکی پسپائی کا اصل ہارا ہوا فریق قرار دیا لیکن کیتو کے تجزیہ نگار نے ٹرمپ کے اقدام کو درست قرار دیا۔

    مزید ...
  • امریکی زوال پر ایک نظر 2

    امریکی سپنا؛ قرضوں میں غرق ہونے سے لے کر معاشرتی عدم مساوات کی انتہاؤں تک

    امریکہ کے اندرونی حالات پر ایک نگاہ سے ظاہر ہوتا ہے کہ قومی قرضوں کا بوجھ، معاشرتی عدم مساوات اور مالیاتی نظام میں کمزوری اہم ترین خطرہ ہے جس کے بموجب امریکہ عالمی سطح پر اپنی بالادستی قائم رکھنے کی قوت رفتہ رفتہ کھور رہا ہے۔

    مزید ...
  • امریکی زوال پر ایک نظر 1

    امریکی سپنا یا بالادستی کا سنگ بنیاد ٹوٹ پھوٹ کا شکار

    رفتہ رفتہ، وقت گذرنے کے ساتھ ساتھ، امریکی فوجی بغاوتوں اور مختلف قسم کی مداخلتوں سے واضح ہوا کہ جس چیز کو امریکی سپنے [American Dream] کے طور پر پہچانا جاتا تھا وہ دوسری قوموں کے لئے درندگی اور مصیبت کے سوا کچھ بھی نہیں تھا۔

    مزید ...
  • ایک عجیب دورہ اور چند نکتے؛

    ٹرمپ: سات ٹریلین خرچ کرنے کے باوجود چھپ چھپ کر عراق جانا پڑا

    نامہ نگار نے جب پوچھا کہ "کیا عراق جاتے ہوئے انہیں اپنی اور اپنی اہلیہ ملانیا کی جان کے سلسلے میں تشویش لاحق تھی اور کیا وہ خوفزدہ تھے؟" تو ٹرمپ نے کہا: "یقینا ایسا ہی تھا، میں نہ صرف اپنے لئے بلکہ اپنی اہلیہ ملانیہ کے لئے بھی فکرمند تھا۔ میں امریکی صدر کے عہدے کے لئے بھی فکرمند تھا"۔

    مزید ...
  • بھارت اسرائیل باہمی تعلقات کے اہم اسباب

    یہ تمام وہ عوامل اور اسباب ہیں جن کی بنا پر اسرائیل ہندوستان سے روز بروز قریب سے قریب تر ہوتا گیا ہے یہاں تک کہ اب اسرائیل ہندوستان کے اندر کافی حد تک اپنا اثر و رسوخ پیدا کر چکا ہے۔

    مزید ...
  • امریکہ شدید اندرونی خلفشار کی طرف گامزن

    بعض تجزیہ کار امریکی صدر کے اس فیصلے کو ترکی کے صدر رجب طیب اردگان سے ان کی ڈیل کا نتیجہ قرار دیتے ہیں۔ مقابلے میں ترکی کے صدر سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ وہ سعودی صحافی جمال خاشقجی کے قتل کے ایشو اور اس بارے میں سعودی ولیعہد محمد بن سلمان کے قصوروار ہونے پر زیادہ زور نہ دیں۔

    مزید ...
  • مسئلہ کشمیر اور بھارتی فوجی افسران کے متضاد بیانات

    یہ بھی ایک حقیقت ہے کہ بھارتی فوجی قیادت کے امن کے خیالات کا مقبوضہ کشمیر میں زمینی سطح پر کوئی اثر ہے اور نہ مطابقت۔ اگر یہی بات دیکھیں کہ مقبوضہ کشمیر میں معرکہ آرائیوں میں نو آموز اور نو عمر لڑکے مارے جاتے ہیں، پھر خواہ مخواہ انتقامی کارروائی کے طور پر رہائشی مکانات اور جائیداد تباہ کی جاتی ہے۔

    مزید ...
  • شیطان انگشت بدندان؛

    جیسن ہیکل: برطانیہ نے ہندوستان کے 45 ٹریلین ڈالر چُرا لئے

    برطانیہ نے ہندوستان کی دولت لوٹنے کی غرض سے اس ملک پر قبضہ کیا اور برطانیہ کی صنعتی ترقی بھاپ انجن کی وجہ سے یا طاقتور مالیاتی اداروں کی بنیاد پر حاصل نہیں ہوئی، بلکہ یہ ترقی دوسری سرزمینوں اور اقوام کی دولت چوری کرکے حاصل ہوئی ہے۔

    مزید ...
  • اسلامی جمہوریہ ایران کو کنٹرول کرنے کے لئے تل ابیب و ریاض کی مشترکہ حکمت عملی کے آٹھ اہم نکات

    سعودی سیاسی مفکرین نے اپنی ساری توجہ کو ان اداروں اور تنظیموں سے مقابلہ میں صرف کر رکھا ہے جو اسرائیل کے مخالف ہیں ، جیسے حزب اللہ ، حماس، اور انصار اللہ ، اور وہ تنظیمیں جو ایران کے شام و لبنان اور عراق میں کردار ادا کرنے کا سبب ہیں۔

    مزید ...
  • پیلی جیکٹوں کا سیلاب، آگے کیا ہوگا؟

    انقلابات شرافت کو نقصان پہنچنے سے شروع ہوجاتے ہیں۔ آج کی دنیا محنت کش غرباء کے لئے ناامیدیوں اور مایوسیوں سے بھری ہوئی ہے۔ پیلی واسکٹوں کی تحریک کا سبب یہ ہے کہ عالمی سرمایہ دارانہ نظام محنت کش طبقے کو ترقی دینے اور محرومیوں نجات دلانے میں ناکام ہوچکا ہے یہی نہیں بلکہ اس نے محنت کش طبقے کی گردن پر پاؤں رکھے ہوئے ہے۔

    مزید ...
  • خاشقجی کا سفاکانہ قتل اور انصاف کی الٹی ترازو

    امریکہ کی جانب سے مسلسل بن سلمان کی حمایت ایسی حالت میں ہے کہ سی آئی اے نے واضح طور پر عیاں کر دیا کہ خاشقجی کے قتل میں بن سلمان کا ہاتھ تھا، نیز خود امریکہ میں اب جگہ جگہ آوازیں بلند ہونے لگی ہیں حتی امریکی سینٹ میں دو قرار دادیں بھی سعودی عرب کی مذمت میں منظور ہو چکی جن میں سے ایک یمن میں جنگ بندی کے سلسلہ سے تو دوسری باب کوکر کی جانب سے محمد بن سلمان کی مذمت کے بارے میں ۔

    مزید ...
  • کیا یہ فسطائیت پر جمہوریت کی جیت ہے؟

    یہ تو وقت ہی بتائے گا کہ فسطائیت نے کس قدر اپنی جڑیں جمہوری نظام میں مضبوط کی ہیں آئندہ سال آنے والے پارلیمانی انتخابات سے واضح ہو سکے گا کہ بظاہر جمہوریت کی فسطائیت پر جیت واقعی تھی یا یہ بھی فسطائی طاقتوں کی جانب سے کوئی منصوبہ بند سازش کا حصہ تھا کہ ایک الیکشن ہار کر ہم کم سے کم یہ تو کہہ سکتے ہیں کہ اے وی ایم مشنیوں نے صحیح کام کیا، اگلے سال بھی یہی مشینیں ہونگی اور ہمارے ہی اہلکار ہوں گے پھر دیکھا جائے گا کون جیت درج کرتا ہے

    مزید ...
  • پیتر کوئینگ:

    فرانس اندر سے پھٹ رہا ہے؛ کیا یہ صورت حال یورپ کو آ لے گی؟

    کیا یہ ممکن ہے کہ فوجی صنعت کے مقتدر بھنیئے مکرون کو چلتا کرنا چاہتے ہوں؟ کیا ممکن ہے کہ پیلی واسکٹوں والے اسی لئے احتجاج کررہے ہوں، گوکہ ان احتجاجوں کا آغاز حقیقی اور "ہر چیز کی کوئی حد ہوتی ہے" کی بنیاد پر ہوا تھا؛ جسے ایک ہمآہنگ کوشش اور منصوبے کے تحت مکرون کے خلاف نفرت پھیلانے کی تحریک میں بدل دیا گیا، تا کہ انہیں ایسے نقطے پر پہنچایا جائے کہ حتی کہ فرانسیسی پارلیمان میں بھی اس کی حمایت نہ کی جاسکے جہاں ان کی جماعت یا ان کی تحریک "En March" کو مطلق اکثریت حاصل ہے؟

    مزید ...
  • ہندوستان کے حالیہ ریاستی انتخابات، بس دو دن ہی کی تو بات ہے

    شاید یہی وجہ ہے کہ ان انتخابات کو سیمی فائنل انتخابات سے تعبیر کیا جا رہا ہے جس سے واضح ہوگا کہ فائنل میں کون پہنچ رہا ہے اور کون دوڑ سے ہی باہر ہے۔ ان انتخابات میں اگر حکمراں جماعت کو شکست ہوتی ہے تو کانگریس کو ملکی سیاست کا رخ موڑ نے کا ایک موقع فراہم ہوجائے گا

    مزید ...
  • فرانس میں زرد آندھی اور میکرون کا متزلزل محل

    جہاں بھی مزدور طبقہ اپنے حقوق کی بازیابی کی بات کرتا ہے یہ لوگ اسکا ایک سرا شدت پسندانہ نظریات رکھنے والے افراد سے جوڑ دیتے ہیں جبکہ اس بات پر غور نہیں کرتے کہ جو گڑھا انہوں نے کھودا ہے ایک نہ ایک دن تو اس میں انہیں گرنا ہی ہے چاہے خود گریں یا مزدور انہیں انکے سرمایہ دارانہ نظام کی اس اندھی خندق میں دھکیل دیں۔

    مزید ...
  • ہم کسی کے "کرائے کے قاتل" نہیں

    وزیراعظم عمران خان نے واشنگٹن پوسٹ سے امریکہ کے ساتھ تعلقات کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کیا خوب کہا کہ وہ کبھی بھی کسی ایسے ملک کے ساتھ تعلق قائم رکھنا نہیں چاہیں گے، جو پاکستان کو "کرائے کے قاتل" کے طور پر استعمال کرے۔

    مزید ...
  • ہندوستان کے بلند شہر میں ہجومی تشدد

    کیا زعفرانی رنگ لہو کے رنگ پر بھاری پڑے گا؟

    اگر یہ ساری باتیں عام لوگوں کی جانب سے ہوتیں تو شاید اتنی قابل غور نہ ہوتیں لیکن عجیب بات یہ ہے کہ ہلاک ہوئے پولیس انسپکٹر کے گھر والے بھی یہی کہہ رہے ہیں چنانچہ سبودھ سنگھ کی بیوی نے کہا ہے کہ ان کے شوہر انتہائی خلوص سے کام کرتے اور ساری ذمہ داری لے لیتے تھے

    مزید ...
  • امریکی ماہرین کی قیاس آرائیاں:

    بے لگام سعودی شہزادے کا زوال، الٹی گنتی شروع / ایم بی ایس کا انجام کیا ہوگا؟

    سعودی عرب اور ولیعہد محمد بن سلمان کو پیچیدہ بحران کا سامنا ہے؛ اس بحران سے نجات کیونکر ممکن ہے؟ اگر ولیعہد کو نجات دلانے میں بنی سعود کو کامیابی حاصل بھی ہوجائے تو اس کے قلیل المدتی اور طویل المدتی اثرات کیا ہونگے؟

    مزید ...
  • سعودی خاندان میں اقتدار کی خونی جنگ/ خاشقجی کا قتل ایک نتیجہ

    واشنگٹن پوسٹ کے صحافی ڈیوڈ اگنیٹیس نے لکھا: جمال خاشقجی کے وحشیانہ قتل کے پیچھے شاہی خاندان کے درمیان کی طاقت کی جنگ واقع ہوئی ہے جس سے محمد بن سلمان کے نفسیاتی خلل اور لا پرواہی کو تقویت ملی ہے۔ نتیجے کے طور پر واشنگٹن پوسٹ کے صحافی کو قتل کیا گیا اور ان کے بدن کے ٹکڑے ٹکڑے کردیئے گئے۔

    مزید ...
  • بے شرم ریاست کا “شرمناک” تصور

    کس قدر ڈھٹائی کی بات ہے کہ ایک طرف جہاں بین الاقوامی قوانین کی دھجیاں اڑاتے ہوئے ایسی بسیتاں بسائی جاتی ہیں جن کے بارے میں خود امریکہ جیسے حلیف ممالک کی کمپنیاں خود کو مطمئن نہیں کر پاتیں اور جب وہ عدم اطمینان کا اظہار کرتی ہیں اور تو انہیں قانونی چارہ جوئی کی دھمکی دی جاتی ہے ۔

    مزید ...
conference-abu-talib
haj 2018
We are All Zakzaky
telegram