بیجنگ میں ایرانی وزیر خارجہ کی چینی ہم منصب سے ملاقات

بیجنگ میں ایرانی وزیر خارجہ کی چینی ہم منصب سے ملاقات

ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے کہا ہے کہ ایران اور چین ایک دوسرے کے اسٹریٹیجک پارٹنر ہیں اور ہمیشہ ساتھ ساتھ رہیں گے۔

اہل بیت (ع) نیوز ایجنسی ۔ ابنا: اعلی سیاسی اور اقتصادی وفد کے ہمراہ چین کا دورہ کرنے والے ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے اتوار کے روز بیجنگ میں اپنے چینی ہم منصب وانگ یی سے ملاقات اور گفتگو کی۔

محمد جواد ظریف اور وانگ یی کے درمیان ملاقات میں باہمی دلچسپی کے سب ہی معاملات خاص طور سے ایٹمی معاہدے کے بارے میں تفصیل سے تبادلہ خیال کیا گیا۔
ایران کے وزیر خارجہ نے اس موقع پر کہا کہ تہران اور بیجنگ سب ہی میدانوں میں ایک دوسرے کے ساتھ بھرپور تعاون کر رہے ہیں اور چین، ایران کا اہم ترین تجارتی شریک ہے۔
انہوں نے ایٹمی معاہدے سے امریکہ کی علیحدگی سے پہلے اور بعد کی صورت حال کی وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ نے ایٹمی معاہدے سے یک طرفہ علیحدگی اختیار کر کے، سلامتی کونسل کی قرار داد بائیس اکتیس کی خلاف ورزی کی ہے۔
وزیر خارجہ محمد جواد ظریف کا کہنا تھا کہ ایران اس بات پر اطمینان حاصل کرنا چاہتا ہے کہ ایٹمی معاہدے میں باقی رہنے کی صورت میں اس کے فوائد بھی حاصل ہوں گے۔
چین کے وزیر خارجہ وانگ یی نے اس موقع پر کہا کہ ایران، خطے کا ایک اہم ملک ہے اور بیجنگ تہران اسٹریٹجک تعلقات کو مزید فروغ دیئے جانے کی ضرورت ہے۔
وانگ یی نے ایٹمی معاہدے کو چند جانبہ عالمی معاہدہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ معاہدے کے تمام فریق اس پر عملدرآمد کے پابند ہیں۔
انہوں نے یہ بات زور دے کر کہی کہ دنیا بھر کے ممالک اور عالمی برادری، ایٹمی معاہدے سے امریکہ کی خودسرانہ علیحدگی سے خوش نہیں اور وہ ٹرمپ کے اس فیصلے کے مخالف ہیں۔
قابل ذکر ہے کہ ایران کے وزیر خارجہ، اپنا دورہ چین مکمل کر کے بیجنگ سے روس کے دارالحکومت ماسکو کے لیے روانہ ہو گئے ہیں۔
وزیر خارجہ محمد جواد ظریف دورہ ماسکو کے بعد یورپی یونین کے ہیڈکوارٹر بریسلز کا بھی دورہ کریں گے جہاں وہ برطانیہ، فرانس اور جرمنی کے وزرائے خارجہ کے علاوہ یورپی یونین کے عہدیداروں سے بھی ملاقات کریں گے۔

.......

/169


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

پیام امام خامنه ای به مسلمانان جهان به مناسبت حج 2016
We are All Zakzaky
telegram