کراچی یونیورسٹی میں امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن کے زیر اہتمام عظیم الشان یوم حسینؑ کا انعقاد

کراچی یونیورسٹی میں امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن کے زیر اہتمام عظیم الشان یوم حسینؑ کا انعقاد

یوم حسینؑ سے خطاب کرتے ہوئے مختلف مکاتب فکر کے علمائے کرام و مقررین نے کہا کہ امام حسینؑ کی زندگی امت مسلمہ کیلئے مشعل راہ ہے، نواسہ رسولؐ اور اہلبیتؑ کی قربانیاں ظلم و جبر کیخلاف آواز بلند کرنیکا درس دیتی ہے، اسلام امن و سلامتی کا دین ہے اور محرم الحرام کا مہینہ ہمیں صبر، ایثار اور قربانی کا درس دیتا ہے، نواسہ رسول حضرت امام حسینؑ نے پورے خاندان کو اپنے ناناؐ کے دین کے تحفظ کیلئے قربان کر دیا، عظیم قربانی خاندان، رشتے، جان و مال دین کیلئے قربان کرنے کا درس دیتی ہے۔

اہل بیت (ع) نیوز ایجنسی ۔ ابنا ۔ کی رپورٹ کے مطابق حضرت امام حسینؑ کی زندگی امت مسلمہ کیلئے مشعل راہ ہے، نواسہ رسولؐ اور اہلبیتؑ کی قربانیاں ظلم و جبر کے خلاف آواز بلند کرنے کا درس دیتی ہے، اسلام امن و سلامتی کا دین ہے اور محرم الحرام کا مہینہ ہمیں صبر، ایثار اور قربانی کا درس دیتا ہے، نواسہ رسول حضرت امام حسینؑ نے پورے خاندان کو اپنے ناناؐ کے دین کے تحفظ کیلئے قربان کر دیا، عظیم قربانی خاندان، رشتے، جان و مال دین کیلئے قربان کرنے کا درس دیتی ہے، ان خیالات کا اظہار مختلف مکاتب فکر کے علمائے کرام و دیگر مقررین نے جامعہ کراچی میں منعقدہ سالانہ عظیم الشان یوم حسینؑ بعنوان "کربلا کے پس منظر میں قیام امن اور ہماری ذمہ داری" سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ یوم حسینؑ کا اہتمام دفتر مشیر امور طلبہ اور امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن جامعہ کراچی یونٹ کے زیر اہتمام پارکنگ گراﺅنڈ ایڈمن بلاک جامعہ کراچی میں کیا گیا۔ یوم حسینؑ کی تقریب سے علامہ کاظم عباس نقوی، علامہ رضوان نقشبندی، علامہ نصرت عباس بخاری، ڈاکٹر معراج الہدیٰ صدیقی، ڈاکٹر سارہ نوازش رضا، ڈاکٹر عاصم حسین، ڈاکٹر ماجد ممتاز و دیگر نے خطاب کیا۔

یوم حسینؑ کی تقریب میں طلباء و طالبات نے نوحہ، سلام و مرثیے کے ذریعے امام عالی مقام حضرت امام حسینؑ و شہدائے کربلاؑ کی بارگاہ میں نذرانہ عقیدت پیش کیا، اس موقع پروفیسر ڈاکٹر جمیل کاظمی، پروفیسر ڈاکٹر انور زیدی، ڈاکٹر زاہد علی زاہدی، آئی ایس او کراچی ڈویژن کے صدر محمد یاسین سمیت اساتذہ و طلباء و طالبات کی کثیر تعداد موجود تھی، جبکہ طلباء تنظیموں کی جانب سے شرکاء کیلئے سبیل کا اہتمام بھی کیا گیا، مختلف این جی اوز کی جانب سے کیمپس بھی لگائے گئے، آئی ایس او کے تحت بک بینک کے اسٹالز بھی لگائے گئے۔ یوم حسینؑ کی تقریب کے دوران علامہ نصرت بخاری کی زیر اقتدا باجماعت نماز ظہرین بھی ادا کی گئی۔ یوم حسینؑ سے خظاب کرتے ہوئے علامہ کاظم عباس نقوی نے کہا کہ واقعہ کربلا وقوع پذیر ہوئے صدیاں گزر گئیں، مگر ذہنوں اور دلوں میں امامؑ کے ایثار اور صبر کے جذبے کو لازوال دوام حاصل ہے، کربلا آکر حسینؑ زندہ جاوید ہوگئے، جس کی زمانے نے بھی قدر و منزلت کی اور یزیدیت کا نام و نشان مٹ گیا۔

علامہ نصرت عباس بخاری نے کہا کہ امام حسینؑ اور کربلا امن کا پیغام ہے، امام حسینؑ خدا سے نزدیک ہونے کا ایک راستہ ہے، کربلا میں 72 قربانیوں کے بعد بھی نماز ادا کی اور صبر و شکر کا درس دیا۔ ڈاکٹر معراج الہدیٰ صدیقی نے کہا کہ حضرت امام حسینؑ کی قربانی کا مقصد دین محمدؐ کی سربلندی تھا، جامعات میں یوم حسینؑ کے انعقاد کا مقصد اس بات کا ثبوت ہے کہ حسینیت فرقہ واریت نہیں بلکہ اتحاد بین المسلمین کا ذریعہ ہے، یزید ایک شخص کا نام نہیں، بلکہ ایک طرز کا نام ہے، ہمیں حسینیت عام کرنے کیلئے اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔ جامعہ کراچی کے رجسٹرار ڈاکٹر ماجد ممتاز نے کہا کہ کربلا اتحاد کا واضح پیغام ہے۔ آخر میں جامعہ کراچی کے مشیر امور طلبہ پروفیسر عاصم نے اظہار تشکر کرتے ہوئے کہا کہ آئی ایس او پاکستان فقہ جعفریہ کی نمایاں اور واحد طلباء تنظیم ہے، پاکستان کی سب سے بڑی جامعہ میں ہر سال عظیم الشان یوم حسینؑ کرنا ہمارے لئے باعث فخر ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔

/169


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

Arba'een
Mourining of Imam Hossein
haj 2018
We are All Zakzaky
telegram