مولانا سمیع الحق کی نماز جنازہ ادا، ہزاروں افراد کی شرکت

مولانا سمیع الحق کی نماز جنازہ ادا، ہزاروں افراد کی شرکت

مولانا سمیع الحق کی نماز جنازہ ان کے بھائی مولانا انور الحق نے پڑھائی، اس موقع پر سکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے تھے۔ جے یو آئی (س)کے سربراہ مولانا سمیع الحق کے نماز جنازہ میں سیاسی و مذہبی جماعتوں کے رہنماﺅں اور دیگر شخصیات نے شرکت کی۔ انہیں مدرسہ حقانیہ اکوڑہ خٹک میں ان کے والد مولانا عبدالحق کے پہلو میں سپرد خاک کیا جائے گا۔

اہل بیت (ع) نیوز ایجنسی ۔ ابنا ۔ کی رپورٹ کے مطابق جمعیت علما اسلام (س ) کے سربراہ مولانا سمیع الحق کی نماز جنازہ اکوڑہ خٹک کے خوشحال ڈگری کالج میں اداکردی گئی ہے، نماز جنازہ میں سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر، وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان، گورنر شاہ فرمان، نواز لیگ کے راجہ ظفر الحق، اقبال ظفر جھگڑا، جماعت اسلامی کے سربراہ سینٹر سراج الحق، سیکرٹری جنرل لیاقت بلوچ سمیت دیگر سیاسی جماعتوں کے رہنماﺅں اور ہزاروں افراد نے شرکت کی۔ مولانا سمیع الحق کی نماز جنازہ ان کے بھائی مولانا انور الحق نے پڑھائی، اس موقع پر سکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے تھے۔ جے یو آئی (س)کے سربراہ مولانا سمیع الحق کے نماز جنازہ میں سیاسی و مذہبی جماعتوں کے رہنماﺅں اور دیگر شخصیات نے شرکت کی۔ انہیں مدرسہ حقانیہ اکوڑہ خٹک میں ان کے والد مولانا عبدالحق کے پہلو میں سپرد خاک کیا جائے گا۔ مولانا سمیع الحق کے بیٹے اسامہ حقانی عمرے کی ادائیگی کے بعد واپس وطن پہنچے۔ اسامہ حقانہ اپنی والدہ کے ہمراہ سعودی عرب گئے تھے اور انہیں واقعہ کی خبر مدینہ منورہ میں ملی۔ نماز جنازہ سے قبل مولانا یوسف شاہ اور مولانا حامد الحق نےخوشحال ڈگری کالج کا دورہ بھی کیا ہے۔ مولانا سمیع الحق کی تعزیت کے لیے لوگوں کی آمد کا سلسلہ جاری ہے۔ مردان سے مدارس اور مذیبی جماعتوں کے کارکنوں کی بڑی تعداد مولانا سمیع الحق کے جنازے میں شرکت کے لیے اکوڑہ خٹک پہچے دارلعلوم حقانیہ میں بھی ہزاروں کی تعداد میں کارکنان جمع ہو چکے ہیں۔ تعزیت اور جنازے کے لئے ملک بھر اور افغانستان سے بھی مدرسے کے طلبہ کی بڑی تعداد پہنچی۔ پولیس کے ساتھ مدرسہ کے طلباء نے بھی سکیورٹی فرائض سرانجام دیئے۔ لوگوں کی کثیر تعداد کی وجہ سے جنازے کے دوران شدید بدنظمی بھی پیدا ہوئی، جس پہ قابو پانے کیلئے مدرسے کے طلباء نے ڈنڈوں سے کام لیا۔

.......

/169


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

haj 2018
We are All Zakzaky
telegram