مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کا طاقت کا استعمال کشمیریوں کے حق خودارادیت کو چھیننے کے لیے ہے

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کا طاقت کا استعمال کشمیریوں کے حق خودارادیت کو چھیننے کے لیے ہے

انہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج طاقت کاوحشیانہ استعمال کر رہی ہے جن کا مقصد کشمیریوں کو ان کے حق خود ارادیت سے باز رکھنا ہے

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی فائرنگ کے نتیجے میں بیس سے زائد بے گناہ شہریوں کی شہادت پر غم و غصے کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ معصوم شہریوں پر بھارت کے وحشیانہ مظالم بدترین ریاستی دہشت گردی ہے۔اس طرح کے ظالمانہ ہتھکنڈوں سے کشمیریوں کے عزم و حوصلے کو دبایا نہیں جا سکتا ۔انہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج طاقت کاوحشیانہ استعمال کر رہی ہے جن کا مقصد کشمیریوں کو ان کے حق خود ارادیت سے باز رکھنا ہے۔انہوں نے کہا کہ کشمیریوں کے دل پاکستان سے کے ساتھ دھڑکتے ہیں ۔طاقت و اختیارات کا بے جا استعمال بھارت کے لیے کسی بھی لحاظ سے فائدہ مند ثابت نہیں ہو سکتا۔ بھارتی حکومت نے اپنی مذموم کاروائیاں اقوام عالم سے پوشیدہ رکھنے کے لیے میڈیا سمیت دیگر ذرائع ابلاغ پر پابندیاں عائد کر دی ہیں۔ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کے انسانیت سوز مظالم اور بنیادی انسانی حقوق کی پامالی کے خلاف عالمی برادری کو اپنا کردار ادا کرنا چاہیے۔دنیا کے مختلف ممالک میں انسانی حقوق کی پامالی کے معمولی واقعات پر سر آسمان پر اٹھانے والی عالمی طاقتوں کی مقبوضہ کشمیر میں بے گناہ نوجوانوں کے قتل عام پر خاموشی کو سوائے تعصب کے کوئی اور نام نہیں دیا جا سکتا۔انہوں نے کہا عالمی امن کے لیے مسئلہ کشمیر کا پائیدار حل ناگزیر ہے۔اس مسئلہ پر تماشائی کا کردار ادا کرنے والی عالمی طاقتوں کو یہ حقیقت ذہن نشین کر لینی چاہیے کہ خطے میں سلگنے والی آگ اگر بھڑک اٹھی تو یہ اور بھی بہت سارے دامنوں کو اپنی لپٹ میں لے لے گی۔انہوں نے عالم اسلام پر زور دیا کہ اس وقت کشمیر،غزہ اور یمن سمیت ساری دنیا میں مسلمانوں کو بے گناہ موت کی وادی میں دھکیلا جا رہا ہے۔امت مسلمہ کے اس زوال کی بنیادی وجہ وحدت و اخوت کی کمی ہے۔ ہمیں مشترکات پر باہم نہیں ہونے دیا جارہا اور معمولی اختلافات پر ایک دوسرے کے خلاف صف آرا رہنے کی ترغیب دی جارہی ہے۔ یہود و نصاری کی ان سازشوں کی اگر بروقت درک نہ کیا گیا تو پھر سوائے ناکامی و خجالت کے ہمارے ہاتھ باقی کچھ نہیں بچے گا۔علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے شہدا کی بلندی درجات اور زخمیوں کی جلد شفایابی کے لیے دعابھی کی ۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۲۴۲


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

haj 2018
We are All Zakzaky
telegram