عالمی یوم القدس ،لاہور سمیت ملک بھر میںآئی ایس او کے تحت 200مقامات پر ریلیاں نکالی گئی

عالمی یوم القدس ،لاہور سمیت ملک بھر میںآئی ایس او کے تحت 200مقامات پر ریلیاں نکالی گئی

لاہور میں بھی امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کے زیراہتمام اسلام پورہ تا اسمبلی ہال القدس ریلی کا انعقاد کیا گیا۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ لاہور ( پ ر )دنیا بھر کی طرح پاکستان میں عالمی یوم القدس منایا گیا لاہور میں بھی امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کے زیراہتمام اسلام پورہ تا اسمبلی ہال القدس ریلی کا انعقاد کیا گیا۔ ریلی کی قیادت آئی ایس او کے مرکزی نائب صدر جمیل عباس طوری ،مجلس وحدت مسلمین پنجاب کے رہنماءعلامہ مبارک موسوی ،علامہ حسن ہمدانی،علی رضا ڈویژنل صدر آئی ایس او لاہور نے کی ۔ ریلی میں جماعت اسلامی جے یو پی نیازی گروپ، تحریک منہاج القرآن،امامیہ آرگنائزیشن،جامعتہ المنتظر،جمعیت اہلحدیث پنجاب ،ادارہ تنزیل،پاکستان تحریک انصاف،عوامی تحریک اور علما مدارس جعفریہ کے رہنماﺅں نے بھی شرکت کی ریلی کے شرکا نے فلسطین کے پرچم، بینرز، پلے کارڈ، امریکی صدر ٹرمپ اور اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو کے پتلے بھی اٹھا رکھے تھے جبکہ جگہ جگہ اسرائیلی اور امریکی پرچم سٹرک پر بچھائے گئے تھے، جن کو شرکا ریلی اپنے پیروں تلے روند کر امریکہ و اسرائیل کے ساتھ اظہار برات کرتے رہے۔ ریلی کے شرکا امریکہ اور اسرائیل کے خلاف جبکہ حماس، حزب اللہ اور فلسطینیوں کے حق میں نعرے بازی کرتے رہے۔ فضا مسلسل ساڑھے پانچ گھنٹے مردہ باد امریکہ، مردہ باد اسرائیل کے فلک شگاف نعروں سے گونجتی رہی۔امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کے مرکزی نائب صدر جمیل طوری نے کہا کہ اسرائیلی ناسور کا واحد علاج اس کا خاتمہ ہے۔فلسطین کے مسئلہ پر امت مسلمہ بالخصوص عرب ممالک نے گذشتہ 70برسوں میں متحد ہو کر کوئی آواز بلند نہیں کی، جب بھی فلسطین کی غیور مسلمانوں کو ضرورت پڑی مسلمان ممالک نے بجائے ان کی مدد کے اپنے بارڈر بند کرکے اسرائیل کی درندگی میں اس کا بھرپور ساتھ دیا۔۔مقررین نے کہا کہ امریکہ کی جانب سے فلسطین کو غاضب صیہونی ریاست اسرائیل کا دارلخلافہ تسلیم کرکے امریکی سفارتخانہ یروشلم منتقل کردیا گیا ہے جو مسلمانوں کے جذبات کو نہ صرف مجروح کرنے کے مترادف ہے بلکہ دنیا بھر کے مسلم حکمرانوں کے لیے باعث ِ شرم بھی ہے، کہ جو قبلہ اول کے تقدس اور ناموس کی پامالی پر بھی خاموشی اختیار کیے ہوئے ہیں ، نہ صرف خاموشی اختیار کیے ہوئے ہیں بلکہ دوستانہ تعلقات قائم کرنے کی ناپاک کوششیں کی جارہی ہیں۔ اسلامی ممالک آزادی فلسطین کے لئے عملی اقدامات کریں گے۔انہوں نے کہا کہ آج پاکستانی حکمران سیاسی سطح پر حکمران پسِ پردہ اسرائیل کے ساتھ سفارتی تعلقات کو ہموار کرنے کی کوشش کررہے ہیں ، جس کی واضح دلیل اقوام ِ ،متحدہ میں پاکستان کی مستقل مندوب ملیحہ لودھی کا اقوام متحدہ کے اجلاس میں دیا گیا بیان ہے کہ پاکستان فلسطین کے مسئلے کا حل دو ریاستی نظریے کو سمجھتے ہیں، ان کا یہ بیان کسی صورت قابلِ قبول نہیں ہے، اسرائیل کے ساتھ کسی بھی قسم کے تعلقات قابلِ قبول نہیں اسرائیل کے ساتھ صرف جنگ ہوگی۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۲۴۲


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

Arba'een
Mourining of Imam Hossein
haj 2018
We are All Zakzaky
telegram