بے گناہ شیعہ جوان لاپتہ اورسفاک دہشت گرد آزاد

بے گناہ شیعہ جوان لاپتہ اورسفاک دہشت گرد آزاد

بلوچستان میں شیعہ سنی مسلمانوں اور فوجی جوانوں کے قتل عام میں ملوث کالعدم سپاہ صحابہ ،لشکر جھنگوی اور داعش کا سرگرم رہنما عبدالکبیر شاکر 3 سال بعد جیل سے آزاد کر دیا گیا ہے.

اہل بیت (ع) نیوز ایجنسی ۔ ابنا ۔ کی رپورٹ کے مطابق بلوچستان میں شیعہ سنی مسلمانوں اور فوجی جوانوں کے قتل عام میں ملوث کالعدم سپاہ صحابہ ،لشکر جھنگوی اور داعش کا سرگرم رہنما عبدالکبیر شاکر 3 سال بعد جیل سے آزاد کر دیا گیا ہے ،تفصیلات کے مطابق کوئٹہ،مستونگ اور بلوچستان کے دیگر شہروں میں ہزارہ شیعہ بزرگوں ، جوانوں ، تاجروں اور ڈرائیوروں سمیت کوئٹہ تفتان روٹ پر سینکڑوں زائرین کو بسوں سے اتار کر گولیوں سے بھوننے کے سنگین جرم میں ملوث خطرناک دہشت گرد عبدالکبیرشاکرکو سرکاری وکیل کی ناقص پیروی اور ثبوتوں کی عدم فراہمی کے باعث 3سال بعد رہاکردیا گیا ۔

واضح رہے کہ عبدالکبیرشاکر امیر لشکر جھنگوی بلوچستان اور دہشت گردحملوں کے ماسٹر مائنڈ رمضان مینگل کا دست راست ہے،عبدالکبیر شاہ کی رہائی کوئٹہ بالخصوص بلوچستان کے امن و امان ، استحکام وسلامتی کے خلاف سنگین خطرہ ہے، گذشتہ روزاسپنی روڈ کوئٹہ میں ایک شیعہ ٹیکسی ڈرائیور کے سر عام قتل کی واردات بھی ریاستی اداروں کی جانب سے عبدالکبیر شاکرجیسے سفاک دہشت گردوں کو ریلیف فراہم کرنے کا شاخسانہ معلوم ہوتاہے۔

.......

/169


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

haj 2018
We are All Zakzaky
telegram