کشمیر میں بدستور حالات کشیدہ، پرتشدد احتجاجی مظاہرے جاری

کشمیر میں بدستور حالات کشیدہ، پرتشدد احتجاجی مظاہرے جاری

کشمیر میں سیکورٹی فورس کے ہاتھوں مبینہ طور پر عام شہریوں کی ہلاکتوں کے خلاف پرتشدد احتجاجی مظاہروں کا سلسلہ جاری ہے۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ ہندوستان کے زیرانتظام کشمیر میں سیکورٹی فورس کے ہاتھوں مبینہ طور پر عام شہریوں کی ہلاکتوں کے خلاف پرتشدد احتجاجی مظاہروں کا سلسلہ جاری ہے جس کے نتیجے معمولات زندگی مفلوج ہو کر رہ گئے۔

ریاستی دارالحکومت سری نگر سمیت وادی کے مختلف شہروں اور قصبہ جات میں احتجاجی مظاہروں اور ہڑتال کا اثر پوری طرح دیکھا جا سکتا ہے-

دریں اثنا جنوبی کشمیر کے علاقے شوپیاں میں مظاہرین پر سیکورٹی فورس کے اہلکاروں کے حملے میں زخمی ہونے والے درجنوں افراد میں سے ایک سولہ سالہ نوجوان زخموں کی تاب نہ لا کر چل بسا جس کے بعد لوگوں کا غم و غصہ اور زیادہ بھڑ ک اٹھا اور انہوں نے سڑکوں پر نکل کر زبردست احتجاجی مظاہرے کئے-

شوپیاں میں ہوئے اس مظاہرے کے دوران بھی سیکورٹی فورس کے اہلکاروں اور مظاہرین کے درمیان جھڑپ ہوئی جس میں مزید لوگ زخمی ہوئے- ریاستی دارالحکومت سری نگر اور شمالی کشمیر کے بھی علاقوں سے احتجاجی مظاہروں کی اطلاعات ہیں-

سری نگر کے وسطی علاقے مائسما میں بھی لوگوں نے احتجاجی مظاہرہ کرنے کی کوشش لیکن پولیس نے اسے ناکام بنا دیا- ریاستی حکومت نے حریت رہنماؤں اور کارکنوں کے خلاف جو کریک ڈاؤن شروع کر رکھا ہے، اس کے تحت درجنوں حریت رہنماؤں اور کارکنوں کو گرفتار کر لیا گیا-

دریں اثنا حکومتی ترجمان کا کہنا ہے کہ حالات کشیدہ ضرور ہیں تاہم ان کے کنٹرول میں ہے- حکومت نے حالات پر قابو پانے کے لئے وادی کشمیر میں انٹرنیٹ سروس بند کر دی ہے جبکہ ریل سروس بھی گذشتہ دو روز سے بند ہے-

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۲۴۲


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

Arba'een
Mourining of Imam Hossein
haj 2018
We are All Zakzaky
telegram