کابل واشنگٹن سیکورٹی معاہدے پر نظر ثانی کئے جانے کا مطالبہ

  • News Code : 818751
  • Source : sahartv
Brief

افغانستان کی سینیٹ کے اراکین نےکابل - واشنگٹن سیکورٹی معاہدے پر نظر ثانی کئے جانے کی ضرورت پر زور دیا ہے۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی ۔ ابنا ۔ کی رپورٹ کے مطابق افغانستان کی قومی اسمبلی میں صوبے ارزگان کے سینیٹر عبیداللہ بارک زئی نے ہفتے کے روز ایک بیان میں کہا ہے کہ افغانستان میں امریکی فوجی، بدامنی پھیلنے کا باعث بنے ہیں۔

انھوں نے کہا کہ افغانستان میں امریکی فوجیوں کی موجودگی کی بنا پر عام شہری مارے جا رہے ہیں۔

عبیداللہ بارک زئی نے کہا کہ افغانستان میں امریکی فوجیوں کے وجود سے طالبان اور تمام دہشت گرد گروہوں کو افغانستان میں بد امنی پھیلانے کی ترغیب ملی ہے۔

انھوں نے کہا کہ ضرورت اس بات کی ہےکہ کابل - واشنگٹن سیکورٹی معاہدے پر نظرثانی کی جائے۔

امریکی فوجیوں نے جنوبی افغانستان کے صوبے قندھار میں شادی کی ایک تقریب پر حملہ کرکے سات افراد کو ہلاک کر دیا۔

افغان ذرائع کے مطابق امریکی فوج نے یہ خود سرانہ کاروائی جمعے کی رات صوبہ قندھار کے ضلع میوند کے علاقے، کلان کلاچہ میں کی۔ شادی کی اس تقریب پر امریکی فوج کے حملے میں سات افراد ہلاک اور دس دیگر زخمی ہوگئے۔

امریکی فوجیوں نے گزشتہ ہفتے صوبہ پکتیکا کے ضلع ارگون میں بھی ایک شخص کی آخری رسومات میں شریک لوگوں پر بمباری کردی تھی جس میں تیرہ عام شہری مارے گئے تھے۔

ادھر افغانستان کے صوبے بغلان کے شہر پل خمری میں ہونے والے ایک بم دھماکے میں کم از کم تین پولیس اہلکار ہلاک ہو گئے۔

افغانستان کے صوبے بغلان کے نائب پولیس سربراہ امیر گل حسین خیل نے کہا ہے کہ شہر پل خمری میں یہ بم دھماکہ، سڑک کے کنارے ہوا جس میں تین پولیس اہلکار ہلاک اور دو دیگر زخمی ہو گئے۔انھوں نے کہا کہ اس بم دھماکے کی ذمہ داری طالبان گروہ نے قبول کی ہے۔ادھر صوبے کنڑ کے علاقے، چپہ درہ میں ہونے والے بم دھماکے میں دو سپاہی مارے گئے ہیں۔واضح رہے کہ افغانستان میں حکومت مخالف مسلح گروہوں نے اس ملک کے بعض صوبوں منجملہ کنڑ اور بغلان میں اپنی دہشت گردانہ سرگرمیاں تیز کر دی ہیں۔

........

/169


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

لگو گیری فاطمی
پیام امام خامنه ای به مسلمانان جهان به مناسبت حج 2016
We are All Zakzaky
telegram