ممبئی میں فسادات کی لہر، حالات کافی کشیدہ

ممبئی میں فسادات کی لہر، حالات کافی کشیدہ

پیر کو ہندوستان کے شہر پونہ میں دو گروہوں کے درمیان ہونے والے فسادات کی آگ نے منگل کو پوری ممبئی کو اپنی لپیٹ میں لے لیا۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ پونہ میں دلتوں اور دوسری ذات کے لوگوں کے درمیان ہونے والی جھڑپ میں ایک دلت کی موت کے بعد ریاست مہاراشٹر کے مختلف شہروں منجملہ ممبئی اور تھانے میں منگل کو زبردست پرتشدد مظاہرے ہوئے-

پونہ میں فساد اس وقت شروع ہوا جب برٹش پیشوا لڑائی کی دو سو ویں سالگرہ منائی جارہی تھی- پونہ میں دوگروہوں کے درمیان ہونے والے فسادات کا دائرہ ممبئی تھانے، اورنگ آباد اور عثمان آباد سمیت مہاراشٹر کے مختلف شہروں میں پھیل گیا-

مہاراشٹر کی پولیس کا کہنا ہے کہ دلتوں کی جماعت ریپبلکن پارٹی آف انڈیا، آر پی آئی کے مشتعل کارکنوں نے ممبئی کے گھاٹ کوپر، پوئی، چیمبور، گونڈی، ملنڈ اور تھانے سمیت متعدد مقامات پر توڑ پھوڑ کی اور کئی بسوں کو آگ لگا دی-

صورتحال کو کشیدہ دیکھ کر دوکانداروں نے اپنی دوکانیں بند کر دیں جبکہ مظاہرین نے کئی مقامات پر سڑکوں کو بند کر دیا۔ ممبئی کی لوکل ٹرینوں کو بھی کافی دیر تک مظاہرین نے بند رکھا-

پرتشدد مظاہروں اور ہر طرح کے ناخوشگوار واقعے کے خوف سے ممبئی کے اسکولوں اور کالجوں میں چھٹیاں کردی گئیں جبکہ دلتوں کی جماعت آر پی آئی نے بدھ کو پورے مہاراشٹر کو بند کرنے کا اعلان کیا ہے - پرتشدد مظاہروں میں جہاں دسیوں افراد زخمی ہوئے ہیں وہیں پولیس نے بڑی تعداد میں لوگوں کو گرفتار کر لیا-

دلتوں نے مخالف گروہ پر، بھیم راؤ امبیڈکر کی مورتی توڑنے کا بھی الزام عائد کیا ہے - حزب اختلاف کی جماعت کانگریس پارٹی کے صدر راہل گاندھی نے مہاراشٹر میں ذاتی بنیادوں پر ہوئے فسادات کا ذمہ دار بی جے پی اور آر ایس ایس کو قرار دیا ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۲۴۲


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

پیام امام خامنه ای به مسلمانان جهان به مناسبت حج 2016
We are All Zakzaky
telegram