دفعہ 35A اور 370 کی منسوخی کا منصوبہ بھارت کے گھناونے عزائم کا عکاس

شہید عزیمت شیخ عبدالعزیز کو اپن کی برسی پر آغا حسن کا شاندار خراج عقیدت

  • News Code : 847567
  • Source : ابنا خصوصی
Brief

جموں کشمیر انجمن شرعی شیعیان کے اہتمام سے چوندہ پورہ بڈگام میں سالانہ مجلس حسینیؑ کا انعقاد کیا گیا جس میں ہزاروں کی تعداد میں عقیدت مندوں نے شرکت کی۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ سرینگر/جموں کشمیر انجمن شرعی شیعیان کے اہتمام سے چوندہ پورہ بڈگام میں سالانہ مجلس حسینیؑ کا انعقاد کیا گیا جس میں ہزاروں کی تعداد میں عقیدت مندوں نے شرکت کی ۔ عقیدت مندوں کے جم غفیر سے خطاب کرتے ہوئے انجمن شرعی شیعیان کے سربراہ اور سینئر حریت رہنما آغا سید حسن الموسوی الصفوی نے فلسفہ امامت و شہادت کے کئی گوشوں کی وضاحت کی، معرکہ کربلا کو حق و باطل کی جنگِ مسلسل کا تاریخ و تحریک ساز مرحلہ قرار دیتے ہوئے آغا حسن نے کہا کہ حضرت امام حسین علیہ السلام نے یزید کی لشکر کے خلاف اپنے مٹھی بھر بے سر و سامان ساتھیوں کے ساتھ مزاحمت اور استقامت کا شاندار مظاہرہ پیش کرکے امت مسلمہ کو یہ پیغام دیا کہ ظلم و باطل کے خلاف جدوجہد اسلام اور ایمان کا اہم ترین رکن ہے۔ دفعہ 35A کی منسوخی کے منصوبے کو کشمیر اور کشمیریوں کے مستقبل پر کاری ضرب سے تعبیر کرتے ہوئے آغا حسن نے واضح کیا کہ تنازعہ کشمیر کے منصفانہ حل سے پہلے ریاست جموں کشمیر کو منفرد حیثیت عطا کرنے والے دفعات کو آئین ہند سے منسوخ کرنے کا کوئی جواز نہیں۔ آغا حسن نے کہا کہ جب تک تنازعہ کشمیر کا کوئی قابل قبول حل نہیں نکل آتا تب تک ان دفعات کا آئین ہند میں موجود رہنا انتہائی ضروری ہے۔ انہوں نے کہا کہ دفعہ35A کے خاتمے کے بعد دفعہ 370 کی منسوخی میں بھارت کو کسی بھی پریشانی کا سامنا نہیں کرنا پڑے گا۔ نتیجہ کے طور پر ریاست کا مسلم اکثریتی کردار ہمیشہ کیلئے ختم ہوکر رہ جائے گا۔ لہٰذا حکومت ہند کے اس گھناونے منصوبے کے سدباب کیلئے کشمیر کی ہر سیاسی قوت کو متحدہ آواز بلند کرنا چاہئے۔

چوندہ پورہ بڈگام میں تنظیم کے اہتمام سے سالانہ مجلس حسینی علیہ السلام سے خطاب کرتے ہوئے آغا حسن نے کہا کہ بھارت کے تمام جابرانہ حربوں اور منصوبہ بندیوں کے باوجود کشمیری حریت پسند قوم اپنے برحق مطالبہ آزادی سے دست بردار نہیں ہونگے، بلکہ دلی کی ہر جابرانہ منصوبہ بندی سے کشمیری عوام پر اپنی تحریک کی افادیت اور بھی واضح ہوتی جائے گی۔ شہید عزیمت شیخ عبدالعزیز کو اُن کی برسی پر شاندار خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے آغا حسن نے کہا کہ شہید موصوف کی عسکری اور سیاسی خدمات جذبہ حق و حریت کی ایک درخشان مثال ہے، جنہوں نے بھارتی جبرو بربریت اور بھارت کی طرف سے کشمیریوں کی معاشی ناقہ بندی کے خلاف مظفر آباد چلو ریلی کی قیادت کی اور بھارتی فورسز نے انہیں نشانہ بنایا۔ آغا حسن نے ترال پلوامہ میں سرکاری فورسز اور حریت پسند عساکر کے درمیان حالیہ تصادم آرائی کے دوران نہتے نوجوان کی ہلاکت اور احتجاجیوں پر سرکاری فورسز کی بربریت کی شدید الفاظ میں مزمت کی۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۲۴۲


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

لگو گیری فاطمی
پیام امام خامنه ای به مسلمانان جهان به مناسبت حج 2016
We are All Zakzaky
telegram