جڈی بل سرینگر میں آغا حسن کی قیادت میں عظیم الشان جلوس میلاد النبیؐ

  • News Code : 870755
  • Source : ابنا خصوصی
Brief

جلوس میلاد میں تنظیم کے زیر انتظام سینکڑوں شاخہائے مکاتب کے ہزاروں طلباء و طالبات کے علاوہ فرزندان توحید کی بھاری تعداد نے شرکت کی۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ سرینگر/ انجمن شرعی شیعیان جموں کشمیر کے اہتمام سے ہفتہ وحدت بمناسبت عید میلاد النبیؐ کی تقریبات کے سلسلے کے تحت حسب عمل قدیم خانقاہِ میر شمس الدین اراکیؒ جڈی بل سرینگر سے تنظیم کے سربراہ اور سیئر حریت رہنما حجۃ الاسلام والمسلمین آغا سید حسن الموسوی الصفوی کی قیادت میں عظیم الشان جلوس میلاد النبیؐ برآمد کیا گیا۔
جلوس میلاد میں تنظیم کے زیر انتظام سینکڑوں شاخہائے مکاتب کے ہزاروں طلباء و طالبات کے علاوہ فرزندان توحید کی بھاری تعداد نے شرکت کی۔جلوس میلاد کے دوران فرزندان توحید نے امہات المؤمنینؓ اور خاتون جنت سید ہ فاطمہؑ کی شان میں بھارتی ٹی وی چینل کے اینکر روہت سردانہ کی گستاخی کے خلاف شدید نعرہ بازی کی۔
جلوس میلاد امام باڑہ گلشن باغ بوٹہ کدل میں اختتام پذیر ہوا جہاں دن بھر محفل میلاد منعقد ہوئی۔ خانقاہ میر شمس الدین اراکیؒ جڈی بل میں جلوس میلاد کی روانگی سے قبل آغا حسن نے حضور سرور کائنات ؐ کی ولادت باسعادت اور سیرت طیبہ کے مختلف پہلؤں کی وضاحت کی۔ آغا حسن نے پیغمبر اکرمؐ کی ولادت باسعادت سے پہلے دنیا بالخصوص عالم عرب کے انسانیت سوز حالات و واقعات بیان کرتے ہوئے کہا کہ ایسے ابتر حالات میں اللہ تعالیٰ کی جانب سے ایک منجی اور ہادی کا معبوث ہونا دنیائے بشریت پر خالق کائنات کا عظیم ترین احسان تھا۔آپؐ کی تعلیمات اور اسوۂ حسنہ عالم انسانیت کیلئے رہتی دنیا تک سرمایہ نجات اور مشعل راہ ہے۔
آغا حسن نے کہا کہ نوع بشریت کا امن و سکون، احترام و خدمت انسانیت، خود و خدا شناسی اور صالح معاشرہ کی تعمیر نبی پاکؐ کی سیرت کے نمایاں پہلؤ ہیں۔ موجودہ دور میں جب دنیائے بشریت طرح طرح کے مصائب و آلام میں مبتلا ہے اور مادی ترقی کی دوڑ میں انسان اخلاقی و روحانی قدروں سے محروم ہوتا جارہا ہے سیرت نبویؐ کی پیروی کی طرف مراجعیت حالات کا ناگزیر تقاضا ہے۔
آغا حسن نے دنیا کے مختلف خطوں میں مسلط قوتوں کی طرف سے مسلمانوں کے خلاف خون ریز مہم جوئی ایک انسانی المیہ ہے جس کا سد باب صرف اور صرف امت مسلمہ کے باہمی اتحاد و اخوت میں مضمر ہے۔ نبی کریمؐ کی ذات مقدسہ تمام طبقہ ہائے فکر کے مسلمانوں کے لئے دعوت و مرکزِ اتحاد ہے۔
آغا حسن نے خانوادہ رسالتؐ کی شان میں گستاخیوں کو بھارتی میڈیا کی اسلام دشمنی کا واضح ثبوت قرار دیتے ہوئے واضح کیا کہ آزادی اظہا رکے نام پر کسی مذہب اور عقیدے کی توہین و تذلیل اور برگزیدہ شخصیات کی شان میں گستاخی موجودہ بھارتی سرکار اور ہندو فرقہ پرست قوتوں کے اصل عزائم اور ذہنیت کی عکاسی کرتی ہے ۔ دریں اثنا روہت سردانہ کے توہین آمیز اور گستاخانہ تاثرات کے خلاف امام باڑہ بڈگام میں نماز جمعہ کی ادائیگی کے بعدشدید احتجاج کیا گیا۔
فرزندان توحید نے خانوادہ نبوتؐ کے خلاف روہت سردانہ کے گستاخانہ الفاظ کو ناقابل برداشت قرار دیتے ہوئے واضح کیا گیا کہ اگر بھارتی میڈیا نے اپنی اسلام اور مسلم دشمن روش ترک نہیں کی تو شدید ردعمل سامنے آئے گا۔اس موقعہ پر بھارتی میڈیا اور روہت سردانہ کے خلاف نعرہ بازی کرتے ہوئے مطالبہ کیا گیا کہ مذکورہ کو قرار واقعی سزا دی جائے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۲۴۲


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

پیام امام خامنه ای به مسلمانان جهان به مناسبت حج 2016
We are All Zakzaky
telegram