جوہری معاہدے سے امریکہ علحیدگی ایران کاکچھ نہیں بگاڑ سکتی:آغا حسن

جوہری معاہدے سے امریکہ علحیدگی ایران کاکچھ نہیں بگاڑ سکتی:آغا حسن

آغا حسن نے کہا کہ امریکہ کا یہ فیصلہ غیر متوقع نہیں تھا اور رہبر معظم نے روزاول سے ہی اس معاہدے سے متعلق امریکہ کی نیت پر خدشات کا اظہار کیا تھا۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ سرینگر/انجمن شرعی شیعیان جموں و کشمیر کے سربراہ اور سینئر حریت رہنما آغاسید حسن الموسوی الصفوی نے ایران اور عالمی طاقتوں کے درمیان طے پائے جوہری معاہدے سے امریکی علحیدگی کو ٹرمپ کی اسلام و مسلم دشمن عزائم کی کڑی سے تعبیر کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ کا یہ خود ساختہ فیصلہ اسلامی جمہوری ایران کا کچھ نہیں بگاڑ سکتا۔ آغا حسن نے کہا کہ امریکہ کا یہ فیصلہ غیر متوقع نہیں تھا اور رہبر معظم نے روزاول سے ہی اس معاہدے سے متعلق امریکہ کی نیت پر خدشات کا اظہار کیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ جس قدر امریکہ ایران کے ساتھ مخاصمت کی راہ اختیار کرے گا، ایران اور انقلاب اسلامی اس قدر مستحکم اور ناقابل تسخیر بن جائے گا۔ بھارتی فوجی سربراہ کے کشمیر سے متعلق تازہ بیان کو بھارت کے خونین سامراجی عزائم کی عکاسی قرار دیتے ہوئے آغا حسن نے کہا کہ ہندوستان کی تحریک آزادی کے دوران برطانوی سامراج بھی اسی طرح کی باتیں کہہ کر ہندوستانی عوام کے جذبۂ آزادی کو توڑنے کی کوشش کر رہے تھے۔ آغا حسن نے کہا کہ جنرل راوت کے بیان سے صاف ظاہر ہورہا ہے کہ بھارت کشمیری عوام بالخصوص نوجوان طبقے کے جذبۂ مزاحمت کو توڑنے کیلئے ظلم کی ہر حد پار کرنے کیلئے آمادہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ جس قدر بھارت کا جبرو قہر بڑھ جائے گا کشمیریوں کا جذبۂ مزاحمت اس قدر شدت اختیار کرتا جائے گا۔دریں اثناء جنرل راوت کے اشتعال انگیز بیان اور ایران کے خلاف امریکہ کی نئی محاذ آرائی کے خلاف بڈگام میں نماز جمعہ کے بعد احتجاجی مظاہرے کئے گئے۔ مظاہرین بھارت کے خلاف اور آزادی کے حق میں نعرہ بازی کر رہے تھے۔ مظاہرین امریکہ اور اسرائیل کے خلاف نعرہ بازی کرتے ہوئے۔ مین چوک تک آپہنچے جہاں حجۃ الاسلام آغا سید یوسف الموسوی نے امریکہ اسرائیل اور بھارت کے جابرانہ عزائم پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ کا اصل نشانہ ایران کا اسلامی انقلاب ہے جبکہ جوہری پروگرام صرف ایک بہانہ ہے۔ آغا سید حسن خانہ نظربندی کے باعث نماز جمعہ کی پیشوائی سے قاصر رہے۔ انجمن شرعی شیعیان کے ترجمان نے تنظیم کے سربراہ اور سینئر حریت رہنما آغا سید حسن الموسوی الصفوی کے ساتھ ساتھ کی دیگرمزاحمتی قائدین جن میں چیئر میں حریت کانفرنس جموں و کشمیر سید علی شاہ گیلانی، میر واعظ کشمیرڈاکٹر مولوی محمد عمرفاروق وغیرہ کی خانہ ظربندی کی پُر زور الفاظ میں مذمت کی۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۲۴۲


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

Arba'een
Mourining of Imam Hossein
haj 2018
We are All Zakzaky
telegram