بھارت کے قومی تہوار کشمیری محکوم قوم کیلئے عذاب و عتاب کے پیامی

سرحدوں کی پُر تناو صورتحال مسائل کے حل کیلئے سنجیدہ کوششوں کی متقاضی:آغا حسن

بھارت کے قومی تہوار کشمیری محکوم قوم کیلئے عذاب و عتاب کے پیامی

آغا حسن نے کہا کہ بھارت کو اپنی جمہوریت کا جشن مناتے ہوئے ریاست جموں و کشمیر کے عوام کے جمہوری حقوق کی بدترین پامالیوں کی دیرینہ پالیسی ترک کرکے اپنی جمہوریت نوازی کی لاج رکھنی چاہئے۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ سرینگر/بھارت کے یوم جمہوریہ کی آمد آمد پر وادی کشمیر کے اطراف و اکناف میں سرکاری فورسز کی طرف سے تلاشی کاروائیوں، ناکہ بندیوں اور گرفتاریوں کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے انجمن شرعی شیعیان کے سربراہ اور سیئر حریت رہنما آغا سید حسن الموسوی الصفوی نے کہا کہ بھارت کے قومی تہوار کشمیری محکوم عوام کیلئے ہمیشہ عذاب و عتاب اور مصاب کا پیغام لیکر آتے ہیں۔ آغا حسن نے کہا کہ بھارت کو اپنی جمہوریت کا جشن مناتے ہوئے ریاست جموں و کشمیر کے عوام کے جمہوری حقوق کی بدترین پامالیوں کی دیرینہ پالیسی ترک کرکے اپنی جمہوریت نوازی کی لاج رکھنی چاہئے اور تنازعہ کشمیر کے پُر امن حل کے حوالے سے کشمیریوں کے جمہوری فیصلے تسلیم کرنے پر آمادہ ہونا چاہئے جو اقوام متحدہ کی تنازعہ کشمیر کے حوالے سے پاس کی گئی قراردادوں میں مضمر ہے۔ آغا حسن نے LOC پر جاری کشیدگی اور روز افزون ابتر صورتحال پر گہری تشویش ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ دونوں اطراف کا جانی نقصان کسی بھی فریق کے مفاد میں نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ سرحدی تناو کسی بھی وقت شدیدرُخ اختیار کرکے باضابطہ جنگ کا باعث بن سکتا ہے۔ دو جوہری ہمسائیوں کے درمیان جنگ جنوب ایشائی خطے کیلئے ناقابل تصور تباہی کا موجب بن سکتا ہے۔ آغا حسن نے کہا کہ LOCکی موجودہ صورتحال انتہائی پریشان کن ہے۔ جو دو ممالک کے درمیان التوا میں پڑے مسائل کے حل کی طرف متوجہ ہونے کا تقاضا کر رہی ہے۔دریں اثناء آغا سید حسن نے تنظیم کے زون نوگام سوناواری کا تفصیلی دورہ کیا اور علاقے میں تنظیم کی دینی، تلبیغی اور علمی سرگرمیوں کا جائزہ لیا۔ دورے کے دوان نوجوانوں کی ایک خاصی تعداد آغا صاحب سے ملاقی ہوا۔ جنہوں نے آغا صاحب کے اپنے دینی تعلیمی مسائل سے آگاہ کیا۔آغا صاحب نے نوجوانوں کو یقین دلایا کہ انجمن شرعی شیعیان حصول علم دین کے خواہشمند نوجوانوں کی ہر ممکن حوصلہ افزائی کرے گی۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۲۴۲


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

Quds cartoon 2018
We are All Zakzaky
telegram