سعودی عرب کی سلامتی کو لاحق مبینہ خطرے کی بنا پر یہودی ریاست کو لاحق تشویش!

سعودی عرب کی سلامتی کو لاحق مبینہ خطرے کی بنا پر یہودی ریاست کو لاحق تشویش!

یہودی ریاست [اسرائیل] کے وزیر جنگ نے امریکی کانگریس کے وفد سے بات چیت کرتے ہوئے ایران کو علاقے کے عدم استحکام کا سبب قرار دیا اور دعوی کیا کہ ایران اپنے میزائل یمن بھجوا کر سعودی امن و سلامتی کو خطرے میں ڈال رہا ہے۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ سعودی وزیر جنگ ایویگدور لیبرمین نے منگل کے روز نینسی پیلوسی کی سربراہی میں مقبوضہ فلسطین کے دورے پر آنے والے امریکی کانگریس کے اقلیتی ڈیموکریٹ اراکین ایک وفد سے بات چیت کرتے ہوئے امریکیوں کی طرف سے یہودی ریاست کی حمایت اور کانگریس میں اس کے میزائل دفاعی نظام کی تقویت کے لئے 705 میلین ڈالر کی امداد کی منظوری کا شکریہ ادا کیا۔
موصولہ رپورٹ کے مطابق علاقائی صورت حال اور "ایران کا خطرہ" پر بحث امریکی کانگریس کے وفد کے ساتھ یہودی ریاست کے حکام کی مشترکہ نشست کے ایجنڈے میں شامل تھی۔ لیبرمین نے اس نشست میں دعوی کیا کہ ایران مشرق وسطی کے استحکام کے لئے خطرہ نمبر ایک ہے۔
جعلی ریاست کے وزیر جنگ نے ایران فوبیا کی پالیسی پر کاربند رہتے ہوئے کہا: ایران خلیج فارس کی جنوبی عرب ریاستوں کو خطرے میں ڈال رہا ہے اور ان پر میزائل داغتا ہے؛ جیسا کہ دو روز قبل ہم نے دیکھا۔۔۔ ایران نے حوثیوں کی فوجی حمایت کرکے یمن کو غیر مستحکم بنایا ہے، بحرین کی حکومت کا تختہ الٹنا چاہتا ہے، شام کے اجتماعی قتل کے حامیوں کے پیچھے بھی ایران کا ہاتھ ہے؛ حزب اللہ ایک دہشت گرد تنظيم ہے اور ایران اس کی حمایت کررہا ہے اور اب عراقی انتخابی عمل کو کمزور کرنے کے درپے ہے!

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۱۱۰


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

پیام امام خامنه ای به مسلمانان جهان به مناسبت حج 2016
We are All Zakzaky
telegram