امریکی سفارت خانہ اگلے ہفتہ تل ابیب سے مقبوضہ بیت المقدس منتقل ہوجائے گا

امریکی سفارت خانہ اگلے ہفتہ تل ابیب سے مقبوضہ بیت المقدس منتقل ہوجائے گا

غیر ملکی ذرائع کے مطابق امریکہ کا سفارتخانہ اگلے ہفتہ تل ابیب سے بیت المقدس منتقل ہوجائےگا۔

اہل بیت (ع) نیوز ایجنسی ۔ ابنا ۔ کی رپورٹ کے مطابق امریکہ کا سفارتخانہ اگلے ہفتہ تل ابیب سے بیت المقدس منتقل ہوجائےگا۔ اسرائیل میں امریکی سفارت خانے کی تل ابیب سے بیت المقدس منتقلی کے موقع پر امریکہ نے سفارت خانے کا ٹویٹر ہینڈلر تبدیل کرلیا جب کہ اسرائیلی ادارے نے ٹرمپ کی تصویر والا یادگاری سکہ بھی جاری کرنے کا اعلان کیا ہے۔

ذرائع کے مطابق ممکنہ طور پر اگلے ہفتے امریکی سفارت خانہ تل ابیب سے مقبوضہ بیت المقدس منتقل ہوجائے گا۔ اس موقع پر امریکی سفارت خانے نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ کا ہینڈلر تل ابیب سے تبدیل کر کے یو ایس ایمبیسی بیت المقدس(USEmbassyJerusalem@) رکھ دیا ہے۔ جس کا ہینڈلر اب (USEmbassyjlm@) ہوگا ۔ امریکی سفارت خانہ برائے تل ابیب نے اس تبدیلی کا اعلان کرتے ہوئے بتایا کہ اس ٹویٹر ہینڈل سے امریکی سفارت خانے کی تل ابیب سے مقبوضہ بیت المقدس منتقلی سے متعلق ہر اہم خبر سے آگاہ کیا جائے گا۔ جب کہ ایک ’فین ٹویٹر اکاؤنٹ‘ پر دعویٰ کیا گیا ہے کہ ایک اسرائیلی تنظیم نے ٹرمپ کے عکس والے سکے کے اجراء کا فیصلہ کیا ہے جس کی تصویر جاری کردی گئی ہے۔واضح رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنی انتخابی مہم کے دوران کیے گئے وعدے کو پورا کرتے ہوئے گزشتہ برس مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے کا اعلان کیا تھا اور ساتھ ہی امریکی سفارت خانے کی تل ابیب سے مقبوضہ بیت المقدس منتقلی کا عندیہ دیا تھا جس کی عالمی قوتوں سمیت اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی نے بھی مخالفت کی تھی۔ لیکن اس کے باوجود امریکہ اگل ہفتہ اپنا سفارتخانہ تل ابیب سے بیت المقدس منتقل کردےگا۔

.......

/169


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

Quds cartoon 2018
We are All Zakzaky
telegram