اقوام متحدہ کی ایران جوہری معاہدے پر پابند رہنے کی تاکید

اقوام متحدہ کی ایران جوہری معاہدے پر پابند رہنے کی تاکید

سیکریٹری جنرل اقوام متحدہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ ایران جوہری معاہدے پر سربراہ اقوام متحدہ کا مؤقف واضح ہے لہذا تمام فریقین اس معاہدے کی مکمل کامیابی تک اپنی حمایت جاری رکھیں.

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ سیکریٹری جنرل اقوام متحدہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ ایران جوہری معاہدے پر سربراہ اقوام متحدہ کا مؤقف واضح ہے لہذا تمام فریقین اس معاہدے کی مکمل کامیابی تک اپنی حمایت جاری رکھیں.

ان خیالات کا اظہار 'استیفان ڈوجیریک' نے گزشتہ روز پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا جس میں انہوں نے ایران کی جانب سے امریکہ کی ممکنہ علیحدگی کے جوابی ردعمل میں عالمی ایٹمی ایجنسی کے ساتھ تعاون میں کمی یا منقطع کرنے کی دھمکی دینے پر اپنے ردعمل کا اظہار کیا.

انہوں نے مزید کہا کہ ایران جوہری معاہدے کے حوالے سے سربراہ اقوام متحدہ پبلک اور خصوصی فورم پر اپنے موقف کا اظہار کرچکے ہیں.

استیفان ڈوجیریک نے بتایا کہ سیکریٹری جنرل 'انٹونیو گوٹیریش' کی نظر میں جوہری معاہدہ تاریخ کی سب سے اہم سفارتی فتح ہے جس کی حمایت اور مکمل نفاذ کے لئے تمام فریقین کو کردار ادا کرنا ہوگا.

یہ بات قابل ذکر ہے کہ ایران کے قومی جوہری ادارے کے سربراہ 'علی اکبر صالحی' نے گزشتہ روز بین الاقوامی جوہری توانائی ایجنسی کے ڈائریکٹر جنرل 'یوکیا امانو' کے ساتھ ایک ٹیلی فونک رابطے میں امریکی حکومت کی جانب سے جوہری معاہدے کی خلاف ورزی اور ممکنہ علیحدگی کے خطرات پر انتباہ کیا.

صالحی نے واضح طور پر کہہ دیا کہ جوہری معاہدے پر امریکی خلاف ورزی جاری رہنے کی صورت میں اسلامی جمہوریہ ایران مخصوص فیصلے کرنے پر تیار رہے گا جس سے ایران اور عالمی جوہری ایجنسی کے درمیان موجود تعاون متاثر ہوگا.

یاد رہے کہ جوہری معاہدے کے نفاذ کے بعد امریکی صدر کو اس معاہدے کے تحت ایران کے حوالے سے جوہری پابندیوں کو 90 روز بعد معطل کرنے کے کاغذات پر دستخط کرنے ہوں گے تاہم ڈونلڈ ٹرمپ نے 12 اکتوبر 2017 کو جوہری معاہدے کی توثیق نہ کرتے ہوئے یہ فیصلہ کانگریس پر چھوڑ دیا.

اب 90 دن کا اختتام قریب ہے اور امریکی صدر کو جنوری کے اوسط تک ایک بار پھر ایران جوہری معاہدے کی توثیق کرنا ہوگی.

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۲۴۲


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

Arba'een
Mourining of Imam Hossein
haj 2018
We are All Zakzaky
telegram