روس میں مختلف مقامات پر بم کی افواہ

روس میں مختلف مقامات پر بم کی افواہ

روس میں ٹیلی فون پر دھکمیوں کی سزا کے قانون کو سخت کئے جانے کے چند گھنٹے بعد ہی ماسکو کے بارہ ریسٹورینٹس، تین شاپنگ سینٹرز اور خود مختار جمہوریہ تاتاریہ کے دارالحکومت قازان ہوائی اڈے میں بم رکھے ہونے کی دھمکیاں موصول ہوئیں۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی ۔ ابنا ۔ کی رپورٹ کے مطابق روس میں ٹیلی فون پر دھکمیوں کی سزا کے قانون کو سخت کئے جانے کے چند گھنٹے بعد ہی ماسکو کے بارہ ریسٹورینٹس، تین شاپنگ سینٹرز اور خود مختار جمہوریہ تاتاریہ کے دارالحکومت قازان ہوائی اڈے میں بم رکھے ہونے کی دھمکیاں موصول ہوئیں۔

اتوار کی رات ایک نامعلوم شخص نے ٹیلی فون کر کے دھمکی دی کہ ماسکو میں انٹر ریسٹورینٹ سینٹر کے بارہ ریسٹورینٹ میں بم رکھے گئے ہیں-

اس دھمکی آمیز ٹیلی فونی کال کے بعد سبھی ریسٹورینٹس کو خالی کرا لیا گیا لیکن کہیں کوئی بم نہیں ملا- ایک اور نامعلوم شخص نے ٹیلی فون پر دھمکی دی کہ ماسکو میں تین شاپنگ مال میں بم رکھے گئے ہیں لیکن ان تجارتی مراکزمیں بھی کوئی مشتبہ شئی نہیں ملی جبکہ قازان ہوائی اڈے پر بم رکھنے کی دھمکی بھی جھوٹی ثابت ہوئی-

روسی صدر ولادیمیر پوتن نے اتوار کی شام سال دو ہزار سترہ کے ختم ہونے کے کچھ ہی دیر بعد ٹیلی فون پر دھمکی کی سزا کو سخت کئے جانے کے قانون پر دستخط کئے تھے اس قانون کے مطابق ایسا کرنے والے شخص کو پانچ سے دس سال قید کی سزا دی جا سکتی ہے-

۔۔۔۔۔۔۔

/169


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

haj 2018
We are All Zakzaky
telegram