کابل کے شیعہ مرکز پر دھشتگردانہ حملے کی مذمت میں اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کا پیغام

کابل کے شیعہ مرکز پر دھشتگردانہ حملے کی مذمت میں اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کا پیغام

حجۃ الاسلام و المسلمین محمد حسن اختری نے ثقافتی مرکز تبیان کے سربراہ حجۃ الاسلام و المسلمین سید عیسی حسینی مزاری کو مخاطب قرار دیتے ہوئے دسیوں پیروان اہل بیت(ع) کی شہادت پر تسلیت دی ہے۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ افغانستان کے شہر کابل میں شیعہ ثقافتی مرکز تبیان اور خبر رساں ایجنسی صدائے افغان پر کئے گئے دھشتگردانہ حملے کہ جس میں ۱۲۰ افراد شہید اور زخمی ہو گئے کی مذمت کرتے ہوئے اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی نے شہیدوں کے لواحقین کو تسلی بخشنے کے لئے ایک تعزیتی پیغام جاری کیا ہے۔
حجۃ الاسلام و المسلمین محمد حسن اختری نے ثقافتی مرکز تبیان کے سربراہ حجۃ الاسلام و المسلمین سید عیسی حسینی مزاری کو مخاطب قرار دیتے ہوئے دسیوں پیروان اہل بیت(ع) کی شہادت پر تسلیت دی ہے۔
اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے اس تعزیتی پیغام میں آیا ہے کہ دھشتگردوں کا یہ اقدام نہ صرف تبیان مرکز اور خبر رساں ایجنسی صدائے افغان پر ایک یلغار ہے بلکہ یہ حملہ دین، ثقافت، انسانیت، آزادی اور افغانستان کے لوگوں کے شہری حقوق پر حملہ ہے۔
اس بیان میں آیا ہے کہ حالیہ سالوں میں افغانستان کے مختلف علاقوں میں بے گناہ شیعیان اہل بیت(ع) کا قتل عام اس بات کی علامت ہے کہ دشمن پوری جرئت کے ساتھ اس ملک میں مذہبی جنگ چھیڑنے پر تلا ہوا ہے۔
بیان میں کہا گیا ہے کہ افغانستان کے شجاع عوام نے اس سے قبل بھی ظالم و ستمگر حکومت کی ناک زمین پر رگڑی ہے اور اس کے بعد بھی داعش اور دیگر انتہا پسند دھشتگرد ٹولوں کو اس ملک میں پنپنے کی جرئت نہیں دیں گے۔
بیان کے آخر میں اس دردناک سانحہ میں دسیوں قابل شخصیتوں اور طالبموں کی شہادتوں پر امام زمانہ (عج)، افغانستان کے پیروان اہلبیت اور ان کے اہل خانہ کو تسلیت پیش کی ہے۔ جبکہ شہیدوں کی بلندی درجات کی دعا بھی کی گئی ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۲۴۲


متعلقہ مضامین

اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

Mourining of Imam Hossein
haj 2018
We are All Zakzaky
telegram