مولانا سید علی تقوی کے انتقال پرملال پر اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کا تعزیتی پیغام

مولانا سید علی تقوی کے انتقال پرملال پر اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کا تعزیتی پیغام

مرحوم حجۃ الاسلام و المسلمین سید علی تقوی نے اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کی مجلس اعلی میں بھی رکنیت اختیار کر کے دنیا کے شیعوں کے فکری ارتقاء کی راہ میں اسمبلی کے وسیع اقدامات میں حصہ لیا۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ ہندوستان کے نامور عالم دین اور اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کی مجلس اعلیٰ کے رکن حجت الاسلام و المسلمین مولانا سید علی تقوی کی رحلت پر اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی نے ایک تعزیتی پیغام جاری کیا ہے۔
اس پیغام کا مکمل ترجمہ حسب ذیل ہے:
بسم اللہ الرحمن الرحیم
اذا مات المؤمن الفقیه ثلم فی الاسلام ثلمة لا یسدها شیء
انتہائی افسوس کے ساتھ خبر ملی کہ اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کی مجلس اعلیٰ کے رکن حجت الاسلام و المسلمین الحاج سید علی تقوی عرصہ دراز تک اسلامی احکامات اور قرآن و اہل بیت(ع) کی تعلیمات کی نشر و اشاعت میں زندگی بسر کرنے کے بعد دار فانی کو خیرآباد کہہ گئے ہیں۔
یہ نامور عالم دین جنہوں نے لکھنو اور نجف اشرف کے حوزہ ہائے علمیہ میں مکتب اہل بیت(ع) کے جاری چشموں سے خود کو سیراب کیا، ہندوستان میں بے شمار دینی، فکری، ثقافتی اور سماجی خدمات کا باعث بنے۔
نیز ہندوستان کے حوزہ ہائے علمیہ، الہ آباد فقہی کمیٹی اور لکھنو یونیورسٹی میں خدمات پیش کرنے کے علاوہ تالیف و تصنیف کے میدان میں بھی آپ کی بے بہا علمی سرگرمیوں نے دینی طلاب اور علم کے پیاسوں کو سیراب کیا۔
مرحوم حجۃ الاسلام و المسلمین سید علی تقوی نے اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کی مجلس اعلی میں بھی رکنیت اختیار کر کے دنیا کے شیعوں کے فکری ارتقاء کی راہ میں اسمبلی کے وسیع اقدامات میں حصہ لیا۔
مرحوم مغفور اپنی زندگی کے آخری لمحوں تک امام راحل ( امام خمینی رہ) کے اہداف و مقاصد کی تکمیل کے لئے کوشاں رہے اور اپنی مبارک زندگی کو اجتہاد اور مجاہدت کے تفکر کی ترویج میں صرف کر دیا۔
یقینا ان کے بے شمار باقیات و صالحات روز جزاء ان کی دستگیری کریں گے  وَسِيقَ الَّذِينَ اتَّقَوا رَبَّهُم إلَى الجَنَّةِ زُمَرًا حَتَّى إِذَا جَاؤُوهَا وَفُتِحَت أبوَابُهَا وَقَالَ لَهُم خَزَنَتُهَا سَلامٌ عَلَيكُم طِبتُم فَادخُلُوهَا خالِدِين. (زمر، 73)
( اور جو لوگ اپنے رب سے ڈرتے رہے ہیں انہیں گروہ در گروہ جنت کی طرف چلایا جائے گا یہاں تک کہ جب وہ اس کے پاس پہنچ جائیں گے اور اس کے دروازے کھول دیے جائیں گے اور جنت کے منتظمین ان سے کہیں گے: تم پر سلام ہو تم بہت خوب رہے، اب ہمیشہ کے لیے اس میں داخل ہو جاؤ )
اس ناقابل تلافی نقصان کے موقع پر امام زمانہ (عجل اللہ تعالیٰ فرجہ الشریف)، رہبر انقلاب اسلامی، مراجع عظام، ہندوستان کے حوزہ ہائے علمیہ اور علما، بر صغیر کے شیعوں اور مرحوم کے قرابتداروں کی خدمت میں تسلیت اور تعزیت عرض کرتے ہیں۔
نیز خداوند متعال سے مرحوم کے پسماندگان مخصوصا ان کے فرزند ارجمند حجۃ الاسلام و المسلمین محمد محسن تقوی کے لئے صبر جمیل اور اجر جزیل کی دعا کرتے ہیں۔
                                          رحمة الله و رضوانه علیه؛ وانا لله و انا الیه راجعون.
                                                       اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی
                                                           ۱۳ دسمبر ۲۰۱۷

...................

242


متعلقہ مضامین

اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

پیام امام خامنه ای به مسلمانان جهان به مناسبت حج 2016
We are All Zakzaky
telegram