محبت اہل بیت(ع) امت مسلمہ کے اتحاد کا اہم سبب

اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کی مجلس اعلیٰ کے اجلاس کا اختتامی بیان

  • News Code : 866037
  • Source : ابنا خصوصی
Brief

اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کی مجلس اعلیٰ نے مورخہ ۳ تا ۶ نومبر ۲۰۱۷ کو ’’محبت اہل بیت(ع) وحدت بشریت اور اتحاد بین المسلمین کا عامل ‘‘ کے زیر عنوان اپنا ایک سو چھترواں اجلاس منعقد کیا اور اس میں عالم اسلام سے متعلق اہم مسائل کو زیر بحث لایا گیا۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کی مجلس اعلیٰ کا ۱۷۶ واں اجلاس لبنان کے دار الحکومت بیروت میں منعقد ہوا جس کے اختتام پر ایک اہم بیان جاری کیا گیا۔
اختتامی بیان کا مکمل ترجمہ:
بسم اللہ الرحمن الرحیم
اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کی مجلس اعلیٰ کے ایک سو چھتر ویں اجلاس کا اختتامی بیان
اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کی مجلس اعلیٰ نے مورخہ ۳ تا ۶ نومبر ۲۰۱۷ کو ’’محبت اہل بیت(ع) وحدت بشریت اور اتحاد بین المسلمین کا عامل ‘‘ کے زیر عنوان اپنا ایک سو چھترواں اجلاس منعقد کیا اور اس میں عالم اسلام سے متعلق اہم مسائل کو زیر بحث لایا گیا۔
مجلس اعلیٰ نے ۱۴ شقوں پر مشتمل ایک بیان کے ساتھ اس اجلاس کو اختتام تک پہنچایا:
اسلامی امت بہت سارے ممالک میں سخت حالات سے گزر رہی ہے اور اسلام کے دشمن، امت مسلمہ کو پاش پاش کر کے اسے جنگ و جدال میں گرفتار رکھنے کی پوری کوشش کر رہے ہیں تاکہ اس طریقے سے وہ مسلمانوں پر اپنا تسلط باقی رکھ سکیں، ان کے اموال کو غارت کر سکیں اور مسلمانوں کو اقتصادی سماجی، علمی اور ثقافتی پسماندگی کا شکار بنا سکیں۔
دشمن مشرق وسطیٰ سے حاصل کردہ اپنے گزشتہ تجربوں سے بھرپور فائدہ اٹھاتے ہوئے کوشاں ہیں کہ اس خطے پر انحرافی افکار مخصوصا وہابی انتہا پسندی پر مبنی سوچ کو رائج کر کے اس خالص اور اعتدال پسند دین محمدی(ص) کے چہرے کو مسخ کریں جو محبت، ہمدردی، اتحاد اور ترقی کے اصول پیش کرتا ہے اور اسلام اور مسلمانوں کو دنیا میں فتنہ و فساد، قتل و غارت، جرم و جارحیت اور دھشتگردی کے عوامل کے عنوان سے پہچنوائیں۔
دشمنوں کی سازشیں اور پروپیگنڈے اس قدر قوی ہیں کہ انہوں نے دین اسلام کہ جو اللہ کا سب سے زیادہ خوبصورت، کامل اور مکمل دین ہے کے چہرے کو بگاڑ کر رکھ دیا ہے حتی کہ بہت سارے لوگوں کو دین سے دور کرنے میں کامیاب ہو گئے ہیں۔ حالانکہ انسان الہی فطرت کی بنا پر دین کا تابع ہوتا ہے۔ وہ بھی ایسا دین کہ جس کے بانی رسول خدا(ص)، ان کے اہل بیت(ع) اور باوفا اصحاب نے اپنی جانثاری، فداکاری اور محبت آمیز طرز زندگی کے ذریعے انسانی معاشرے کے لیے عزت و سربلندی کی قدروں کو پہچنوایا۔
لہذا ان چیلنجوں کا مقابلہ کرنے کے لیے جو امت مسلمہ اور عالم بشریت کو دھمکا رہے ہیں ضروری ہے کہ درج ذیل نکات پر اپنی توجہ مرکوز کریں:
۱؛ عالم بشریت اور پوری امت مسلمہ کو تمام فرقوں سمیت اس بات کی دعوت دیتے ہیں کہ زیادہ سے زیادہ رسول خدا(ص) اور ان کے اہل بیت اطہار(ع) کی تعلیمات کو سیاسی، سماجی اور عملی تناظر سے پہچاننے کی کوشش کریں۔
۲؛ تمام مسلمانوں سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہابی دھشتگردانہ افکار کی مذمت کریں اور ان بدبختیوں کو جنہیں آل سعود اور انکے مغربی امریکی حامیوں نے عالم اسلام میں جنم دیا، جڑ سے اکھاڑ کر پھینک دیں۔
۳؛ عالم اسلام کے علماء، مصنفین اور محققین کو دعوت دیتے ہیں کہ وہ مناسب ثقافتی آثار وجود میں لا کر حقیقی اسلام کو دوسروں تک منتقل کرنے کی کوشش کریں، حقیقی اسلام وہی اہل بیت(ع) کا دین ہے جسے دنیا کے تمام ممالک تک پھیلنا چاہئے۔
۴؛ ان مسلمان جوانوں جو دشمن کی انحرافی تبلیغات کی وجہ سے گمراہ ہو چکے ہیں سے مطالبہ کرتے ہیں کہ ماضی کے تلخ اور شکست خوردہ تجربوں سے عبرت حاصل کرتے ہوئے حقیقی اور اصلی اسلام کی آغوش میں واپس پلٹ آئیں۔
۵؛ امت مسلمہ کے درمیان اتحاد اور تعاون کی ثقافت کے رواج اور اختلافی مسائل سے اجتناب پر تاکید کرتے ہیں اور مسلمانوں کی توجہ کو استکباری پروپیگنڈوں کے مقابلے میں یکجہتی، اپنے ممالک کے استقلال اور امنیت کے تحفظ نیز مقبوضہ اسلامی ملکوں (فلسطین اور بیت مقدس) کی آزادی کی طرف مرکوز کرتے ہیں۔
۶؛ لبنان اور فلسطین میں ان مزاحمتی تحریکوں کی حمایت کرتے ہیں جو صہیونیت کے مقابلے میں ڈٹی ہوئی ہیں، اور اس نقلی، جارح اور ستمگر ریاست کی ہر احتمالی جارحیت کے سامنے سینہ سپر ہیں۔ نیز ہم شرم آور بیلفور بیان کی پہلی صدی کی سالگرہ پر اس کی شدید مذمت کرتے ہیں۔
۷؛ امریکی صہیونی سازشوں کو ناکام بنانے کی راہ میں عراق اور شام کو حاصل ہوئی کامیابیوں پر انہیں مبارک باد پیش کرتے ہوئے امید ظاہر کرتے ہیں کہ داعش اور دیگر وہابی دھشتگرد ٹولوں پر مکمل کامیابی، مزاحمت کے مراکز کو زیادہ سے زیادہ مستحکم بنانے پر منحصر ہے۔
۸؛ ہم آل سعود اور اس کے اتحادیوں کی جارحیت جو وہ یمن کے مظلوم اور بحرین کے غیور عوام کی نسبت روا رکھے ہوئے ہیں کی سختی سے مذمت کرتے ہیں اور اس ظالم اور ستمگر رژیم کے مقابلے میں سخت موقف اپنانے کا مطالبہ کرتے ہیں۔
۹؛ ہم تکفیری اور دھشتگرد ٹولوں کا تختہ الٹنے میں افغانستان اور پاکستان کی کوششوں کی حمایت کرتے ہیں اور ان کے عوام کے تعاون کی قدردانی کرتے ہیں جو ان دو ملکوں کی عزت و سربلندی کے لیے جد و جہد کر رہے ہیں۔
۱۰؛ ہم ہمیشہ دنیا کی مظلوم قوموں، مخصوصا کشمیراور نائیجیریا سے لے کر برما تک کے مسلمانوں کے ساتھ ہیں اور ان کی حمایت کا اعلان کرتے ہیں اور برما میں روہنگیا مسلمانوں کے بہیمانہ قتل عام کے خاتمہ کا فوری مطالبہ کرتے ہیں۔
۱۱؛ علماء، بزرگوں اور سنجیدہ ملتوں کی حقیقی اسلام کے تئیں سیاسی بصیرت جو اس وقت پوری دنیا میں نظر آ رہی ہے عالم اسلام کے روشن، پرامید اور تابناک مستقبل کی نوید ہے۔
۱۲؛ ہم ولی امر مسلمین امام خامنہ ای( مدظلہ) اسلامی جمہوریہ ایران اور ملت ایران کا شکریہ ادا کرتے ہیں جو دنیا کی مسلمان اور مستضعف ملتوں کی ہمیشہ حمایت کرتے ہیں اور اسلام و مسلمین کے دفاع کی راہ میں اپنے جگر کے ٹکڑوں کو قربان کرتے ہیں۔ ہم تہہ دل سے ان کی قدردانی کرتے ہوئے یہ اعلان کرتے ہیں کہ اسلامی جمہوریہ ایران کے خلاف دشمنی پر مبنی تمام پالیسیاں قابل نفرت ہیں لہذا حریت پسند ممالک کو چاہیے کہ ایران کی طرف دست تعاون و دوستی بڑھا کر دشمنوں کی خطرناک سازشوں کو ناکام بنائیں۔
رہبر کبیر انقلاب اور اسلامی بیداری کے بانی امام خمینی (قدس سره الشریف) کہ جو انبیاء اور اہل بیت(ع) کے راستے کے واقعی پیروکار تھے کی پاک روح پر درود و سلام بھیجتے ہیں اور تمام مسلمانوں کو اس بات کی طرف عملی دعوت دیتے ہیں کہ وہ امام راحل کے آفاقی افکار کو معاشرے کی اصلاح اور موجودہ صورتحال کی بہتری کے لیے بروئےکار لائیں۔ نیز شہداء و مجاہدین فی سبیل اللہ کی پاک روحوں پر درود بھیجتے ہیں۔
۱۴؛ آخر میں حزب اللہ لبنان کے سیکرٹری جنرل مجاہد علامہ سید حسن نصر اللہ (دام عزہ) کی میزبانی اور مہمانوازی کا انتہائی شکریہ ادا کرتے ہیں اور اس ملک کے عوام، فوج، مزاحمتی فورس اور صدر جمہوریہ کا بھی شکریہ ادا کرتے ہیں۔ اور صہیونی رژیم کے استکباری منصوبوں کہ جن میں سرفہرست وہابی فکر کے رائج کرنے کا منصوبہ ہے کے مقابلے کے لئے اس ملک کے تعاون کی قدردانی کرتے ہیں۔
مجلس اعلیٰ اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی
بیروت، ۶ نومبر ۲۰۱۷

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۲۴۲


متعلقہ مضامین

اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

پیام امام خامنه ای به مسلمانان جهان به مناسبت حج 2016
We are All Zakzaky
telegram