نائیجیریا میں شیعہ مسلمانوں پر پھر فوجی جارحیت، ایک شہید دسیوں زخمی+ تصاویر

نائیجیریا میں اسلامی تحریک کے رہنما آیت اللہ شیخ زکزکی کی رہائی کا مطالبہ کرنے والوں کے خلاف سیکورٹی فورس کی کارروائی میں ایک شہید اور کئی افراد شدید زخمی ہو گئے۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ نائیجیریا کے دارالحکومت ابوجا میں سیکورٹی اہلکاروں نے آیت اللہ شیخ زکزکی کی حمایت میں اجتماع کرنے والوں کے خلاف وسیع پیمانے پر آنسو گیس کا استعمال کیا اور فائرنگ کی۔

نائیجیریا کی اسلامی تحریک کے پریس امور کے انچارج ابراہیم موسی کے حوالے سے موصولہ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ نائیجیریا کے سیکورٹی اہلکاروں کی جانب سے ہمیشہ اسلامی تحریک کے اراکین کو پریشان کیا جاتا ہے اور وہ پرامن مظاہرین کو بھی جارحیت کا نشانہ بناتے ہیں اور انھیں منتشر کرنے کے لئے آنسو گیس کے علاوہ فائرنگ بھی کرتے ہیں جبکہ آیت اللہ شیخ زکزکی کے بہت سے ۲۳۰ حامیوں کو بلاسبب گرفتار بھی کر لیا گیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق پولیس کے حملے میں زخمی ہونے والوں میں سے ایک شخص زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسا۔

نائیجیریا کی فوج نے دسمبر دو ہزار پندرہ میں آیت اللہ شیخ زکزکی کی رہائشگاہ پر حملہ کر کے زخمی حالت میں انھیں اور ان کی اہلیہ کو گرفتار کر کے جیل میں قید کر دیا جہاں اس وقت آیت اللہ شیخ زکزکی کی جسمانی حالت تشویشناک بنی ہوئی ہے۔ یہ ایسی حالت میں ہے کہ نائیجیریا کی سپریم کورٹ نے آیت اللہ شیخ زکزکی کی رہائی کا حکم سنایا ہے مگر نائیجیریا کی فوج اور حکومت نے ابھی تک انھیں رہا نہیں کیا ہے۔



     ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

۲۴۲


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

Mourining of Imam Hossein
haj 2018
We are All Zakzaky
telegram