مصر؛ صحرائے سینا کی مسجد پر دھشتگردانہ حملہ، ۳۲۴ نمازی جانبحق اور زخمی+ تصویریں

مصر کے صوبے شمالی سینا میں ایک مسجد پر دہشت گردانہ حملے میں کم سے کم تین سو سے زائد افراد جاں بحق اور زخمی ہو گئے ہیں۔

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ مصر کے صوبے شمالی سینا میں ایک مسجد پر دہشت گردانہ حملے میں کم سے کم ۱۸۴ افراد جاں بحق اوردسیوں دیگر زخمی ہو گئے ہیں۔

مصر میں سیکورٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ مصر کے صوبے شمالی سینا کے شہر العریش کے مضافات میں واقع علاقے الروضہ کی مسجد میں نماز جمعہ میں شریک نمازیوں پر دہشت گردوں نے بم سے حملہ کرنے کے ساتھ ساتھ اندھا دھند فائرنگ بھی کردی جس میں اب تک کی اطلاعات کے مطابق ۱۸۴ نمازی جاں بحق اور تقریبا ۱۴۰ زخمی ہوگئے۔ بعض خبروں میں مرنے والوں کی تعداد ۲۰۰طبھی بتائی گئی ہے۔
تاحال کسی گروہ نے اس دہشت گردانہ حملے کی ذمہ داری قبول نہیں کی ہے تاہم اس علاقے میں انصاربیت المقدس نامی دہشت گرد گروہ سرگرم ہے جس نے دوہزار چودہ میں داعش کی بیعت کی تھی۔
اس گروہ نے اب اپنا نام تبدیل کرکے ولایت سینا رکھ لیا ہے اور یہ دہشت گرد گروہ شمالی سینا میں اب تک بہت سے دہشت گردانہ حملے کرچکا ہے۔
مصرکے صدر عبدالفتاح السیسی نے صوبہ شمالی سینا میں ہنگامی حالت کے نفاذ کا اعلان کرتے ہوئے پورے ملک میں تین روز کے عام سوگ کا اعلان کیا ہے۔
العریش کے اسپتالوں میں بھی ہنگامی حالت نافذ کردی گئی ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
۲۴۲

اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

Arba'een
Mourining of Imam Hossein
haj 2018
We are All Zakzaky
telegram