سزائے موت کے خلاف داعشی دہشتگردوں کی اپیل مسترد؛

داعش کے 8 دہشتگردوں کو انقلاب اسلامی عدالت نے سزائے موت سنا دی

داعش کے 8 دہشتگردوں کو انقلاب اسلامی عدالت نے سزائے موت سنا دی

انقلاب اسلامی عدالت کے چیف نے اخباری نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ داعش کے 8 دہشت گرد کہ جن پر ایران کی مجلس شوری اسلامی اور امام خمینی رہ کے مزار پر حملوں کا الزام تھا جرم ثابت ہونے پر ان کو سزائے موت سنا دی گئی ہے۔ حجت الاسلام موسی غضنفرآبادی نے کہا کہ سزائے موت کے خلاف انکی اپیل مسترد ہو چکی ہے۔

اہل بیت (ع) نیوز ایجنسی ۔ ابنا ۔ کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کی انقلاب اسلامی عدالت کے چیف جسٹس حجت الاسلام و المسلمین غضنفرآبادی نے کہا ہے کہ ایرانی پارلیمنٹ اور حرم امام خمینی رہ پر دہشت گردی کے جرم میں 8 دہشت گردوں کو سزائے موت سنا دی گئی ہے۔ یاد رہے گذشتہ سال تہران میں واقع پارلیمنٹ اور حرم امام خمینی رہ پر دہشت گردوں نے حملہ کر دیا تھا جس میں متعدد نہتے شہری شہید ہو گئے تھے۔ دہشت گردی کے اس واقعہ میں تمام دہشت گرد مارے گئے تھے۔ انقلاب اسلامی عدالت کے چیف نے اخباری نمائندوں سے بات کرتے ہوئے کہا کہ یہ افراد دہشت گردوں کے سہولت کار تھے جن کو "بغاوت میں مدد" کرنے کے جرم میں سزائے موت سنائی گئی ہے۔ یہ کیس تہران کی انقلاب عدالت نمبر 15 میں سنا گیا۔ قاضی صلواتی نے فساد فی الارض میں سہولت کار ہونے کے جرم میں انہیں سزائے موت سنائی ہے۔ اس کیس میں کل 26 ملزم تھے جن میں سے 8 ملزموں کا کیس نمٹا دیا گیا جبکہ 18 ملزموں کے خلاف کیس ابھی چل رہا ہے۔

.....

/169


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

Quds cartoon 2018
We are All Zakzaky
telegram