وزیر خارجہ محمد جواد ظریف:

ایران دھونس و دھمکی کا مخالف / ایران ہر مرتبہ امریکہ کے ساتھ از سر نو گفتگو شروع نہیں کر سکتا

ایران دھونس و دھمکی کا مخالف / ایران ہر مرتبہ امریکہ کے ساتھ از سر نو گفتگو شروع نہیں کر سکتا

اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ نے نیویارک میں جوہری معاہدے سے متعلق اجلاس میں کہا کہ ایران کسی بھی طور دھونس و دھمکی کو نہیں مانتا۔

اہل بیت (ع) نیوز ایجنسی ۔ ابنا ۔ کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے ایران میں اسلامی انقلاب کی کامیابی کے وقت سے ہی ایران پر اقتصادی اور سیاسی دباؤ کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ ایران نے شروع سے دباؤ ڈالنے والے ہتھکنڈوں کا مقابلہ کیا اور کسی بھی طور دھونس و دھمکی کو برداشت نہیں کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ ایران کی غیور قوم نے ہمیشہ ہی دھمکی کا بھر پور جواب دیا ہے۔

ایران کے وزیر خارجہ نے واشنگٹن کے ساتھ ہر قسم کے مذاکرات کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ مذاکرات کے لئے قابل اعتماد ملک نہیں ہے۔

محمد جواد ظریف نے جوہری معاہدے سے امریکی انخلا پر کہا کہ ایران ہر مرتبہ امریکہ کے ساتھ از سر نو گفتگو شروع نہیں کر سکتا۔

اس سے قبل اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نےبی بی سی کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ ایران کے صبر و تحمل کی بھی ایک حد ہے مشترکہ ایٹمی معاہدے سے بہتر امریکہ کو کچھ نہیں مل سکتا۔

۔۔۔۔۔۔۔

/169


اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

Arba'een
Mourining of Imam Hossein
haj 2018
We are All Zakzaky
telegram