صدر حسن روحانی کا قومی ایٹمی ٹیکنالوجی کے دن کی مناسبت سے خطاب؛

ایران ایک ہفتہ سے کم عرصہ میں مشترکہ ایٹمی معاہدے سے پہلے والی صورتحال پر پلٹنے کی بھر پور صلاحیت رکھتا ہے

ایران ایک ہفتہ سے کم عرصہ میں مشترکہ ایٹمی معاہدے سے پہلے والی صورتحال پر پلٹنے کی بھر پور صلاحیت رکھتا ہے

صدر حسن روحانی نے قومی ایٹمی ٹیکنالوجی کی بارہویں سالگرہ کے موقع پر ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اگر گروپ 1+5 نے مشترکہ ایٹمی معاہدے کی خلاف ورزی اور اسے نقض کرنے کی کوشش کی تو اس صورت میں انھیں ایران کے منہ توڑ جواب کا سامنا کرنا پڑےگا۔

اہل بیت (ع) نیوز ایجنسی ۔ ابنا ۔ کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر حسن روحانی نے قومی ایٹمی ٹیکنالوجی کے دن کی مناسبت سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایران ایک ہفتہ سے کم عرصہ میں مشترکہ ایٹمی معاہدے سے پہلے والی صورتحال پر پلٹنے کی بھر پور صلاحیت رکھتا ہےاور اس صورت میں مشترکہ ایٹمی معاہدے پر عمل نہ کرنے والوں کو پشیمان ہونا پڑے گا۔

صدر حسن روحانی نے قومی ایٹمی ٹیکنالوجی کی بارہویں سالگرہ کے موقع پر ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اگر گروپ 1+5 نے مشترکہ ایٹمی معاہدے کی خلاف ورزی اور اسے نقض کرنے کی کوشش کی تو اس صورت میں انھیں ایران کے منہ توڑ جواب کا سامنا کرنا پڑےگا۔

صدر حسن روحانی نے کہا کہ ایرانی سائنسداں کل کی نسبت آج ایٹمی صنعت میں کہیں زیادہ مہارت رکھتے ہیں اور ہم معاہدے کی روشنی ميں متوقف شدہ امور کو ایک ہفتہ سے بھی کمتر عرصہ میں دوبارہ اور بہتر شکل میں شروع کرسکتے ہیں۔

صدر حسن روحانی نے مشترکہ ایٹمی معاہدے کو قوی اور مضـوط معاہدہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ مشترکہ ایٹمی معاہدہ کی عمارت تمام خطرات اور زلزلوں کے باوجود اپنی جگہ کھڑی ہے لیکن اگر اس سے ایرانی قوم کو کوئی فائدہ نہ ہوا اور فریق مقابل نے مشترکہ ایٹمی معاہدے پر عمل درآمد نہ کیا تو اس صورت ميں انھیں ایران کے سخت اور منہ توڑ جواب کا سامنا کرنا پڑےگا۔

.......

/169


متعلقہ مضامین

اپنی رائے بھیجیں

آپ کا ای میل شائع نہیں ہو گا۔ * والی خالی جگہوں کو مکمل کیجیے

*

Quds cartoon 2018
پیام امام خامنه ای به مسلمانان جهان به مناسبت حج 2016
We are All Zakzaky
telegram